تازہ ترین

Marquee xml rss feed

یہ تاثر قائم کر دیا گیا ہے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرو یا پھر جیل جاؤ، بلاول بھٹو کا بابر اعوان کی بریت پر ردِ عمل حکومت کا صوبوں کے ساتھ رویہ ٹھیک نہیں ہے، یہ صوبائی ... مزید-اگر سیلز ٹیکس واپس ہی کرنا ہے تو پھر لیتے کیوں ہیں؟ عبدالرزاق داؤد ایک دم صفر سے 17فیصد ٹیکس لگانے سے مسائل پیدا ہوں گے،ہم ہمیشہ ریونیو کے پیچھے گئے صنعتی ترقی کے پیچھے ... مزید-نیب نے بابر اعوان کو معاف نہیں کیا، ہمایوں اختر خان بابر اعوان کی بریت کا فیصلہ احتساب عدالت کا ہے، رہنما پاکستان تحریکِ انصاف-حضرو میں ماں اپنی بیٹی کی عزت بچانے کی کوشش میں جان کی بازی ہار گئی حملہ آور نے بیٹی کی جان بچانے کی کوشش کرنے والی خاتون کو چاقو کے وار کرکے شدید زخمی کیا، بعد ازاں خاتون ... مزید-چند سالوں میں پیٹرول ناقابل یقین حد تک سستا جبکہ اس کا استعمال بھی نہ ہونے کے برابر ہو جائے گا دنیا کی بڑی بڑی کمپنیاں اب بجلی سے چلنے والی ہائبرڈ گاڑیاں تیار کر رہی ہیں، ... مزید-وزیراعلی سندھ سے برٹس ٹریڈ کمشنر فار پاکستان، مڈل ایسٹ کی وزیراعلی ہائوس میں ملاقات-گراں فروشی، ملاوٹ اور غیر معیاری اشیاکی فروخت کے خلاف کاروائی جاری رکھی جائے، وزیراعلی-لیبر تنظیموں کا اپوزیشن کی متوقع احتجاجی تحریک سے مکمل لاتعلقی کا اعلان ملک کو معاشی طور پر مضبوط بنانے کیلئے حکومت اور قومی اداروں کے ساتھ کھڑے ہیں ‘لیبرتنظیمیں اپوزیشن ... مزید-ناقص معاشی پالیسیوں کے ذمہ دار ہم سے 10 ماہ کا حساب مانگ رہے ہیں، جب تک معیشت بہتر نہیں ہو جاتی ہم ان سے ان کے 40 سالوں کا حساب مانگتے رہیں گے‘ ماضی میں ذاتی مفادات کے لئے ... مزید-نیب لاہور نے ہسپتالوں کے مضر صحت فضلہ سے گھریلو اشیاء کی تیاری کے حوالے سے میڈیا رپوٹس کا نوٹس لے لیا متعلقہ اداروں کے حکام بریفنگ کیلئے طلب ‘ ملوث عناصر کے خلاف ٹھوس ... مزید

GB News

چیف سیکرٹریز کو ماہانہ چار لاکھ روپے اور آئی جی پولیس کو3لاکھ 75 ہزارار روپے کی اضافی مراعات دینے کا مطالبہ

Share Button

اسلام آباد( غلام عباس سے ) وزارت امور کشمیر نے وفاقی وزارت خزانہ کو ایک سمری بھیجی ہے جس میں گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کے چیف سیکرٹریز کو ماہانہ اضافی چار لاکھ روپے جبکہ دونوں خطوں کے آئی جی پولیس کو3لاکھ 75 ہزارار روپے کی اضافی مراعات دینے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ ذمہ دار ذرائع کے مطابق کشمیر افیئرز کی یہ سمری فنانس ڈویژن کو موصول ہو گئی ہے جس میں چیف سیکرٹریز اور آئی جیز کو ماہانہ چار لاکھ روپے تک اضافی مراعات دینے کی سفارش کی گئی ہے، وزارت امو ر کشمیر نے موقف اختیار کیا ہے کہ پنجاب ،کے پی اور دیگر صوبو ںمیں ان افسران کو مختلف مراعات حاصل ہیں لیکن گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں وفاق کے ماتحت افسران کو اس طرح کی مراعات میسر نہیں اس لیے یہ اضافہ ضروری ہے۔ دوسری جانب اس انوکھے مطالبے پر وزارت خزانہ کے حکام سکتے میں آگئے، ذرائع کے مطابق سمری موصول ہوتے ہی حکام ششدر رہ گئے ، کشمیر افیئرز کی اس سمری پر کافی بحث و مباحثہ چل رہا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ وفاقی سطح پر گریڈ ون کی تنخواہ جو کہ چند ہزار ہوتی ہے میں بمشکل دس یا پندرہ فیصد بڑھانے کے حوالے سے وفاقی حکومت کی چیخیں نکل رہی ہیں لیکن دوسری طرف دو خطوں کے چیف سیکرٹریز اور آئی جیز کی مراعات میں یکدم چار چار لاکھ روپے تک اضافے کا مطالبہ ایک مذاق سے کم نہیں، فنانس ڈویژن کے حکام کا کہنا تھا کہ دیگر صوبوں کی اپنی آمدن ہے جوکہ اربوں میں ہے لیکن گلگت بلتستان کی اپنی کوئی آمدنی نہیں ، یہ صوبہ گرانٹ پر چل رہا ہے اس لئے یہ مراعات دینا کیسے ممکن ہو گا ،وزارت خزانہ کے حکام کے مابین یہ گفتگو بھی کی جارہی ہے کہ گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر سونے کی چڑیا ہے، کیونکہ وہاں عیاشی لگی ہوئی ہے، پراجیکٹ کے نام پر مہنگی اور بڑی بڑی گاڑیاں لائی گئی ہیں ، وزیر اعظم کی کفایت شعاری مہم گلگت بلتستان میں دفن ہو کر رہ گئی ہے۔

Facebook Comments
Share Button