تازہ ترین

Marquee xml rss feed

یہ تاثر قائم کر دیا گیا ہے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرو یا پھر جیل جاؤ، بلاول بھٹو کا بابر اعوان کی بریت پر ردِ عمل حکومت کا صوبوں کے ساتھ رویہ ٹھیک نہیں ہے، یہ صوبائی ... مزید-اگر سیلز ٹیکس واپس ہی کرنا ہے تو پھر لیتے کیوں ہیں؟ عبدالرزاق داؤد ایک دم صفر سے 17فیصد ٹیکس لگانے سے مسائل پیدا ہوں گے،ہم ہمیشہ ریونیو کے پیچھے گئے صنعتی ترقی کے پیچھے ... مزید-نیب نے بابر اعوان کو معاف نہیں کیا، ہمایوں اختر خان بابر اعوان کی بریت کا فیصلہ احتساب عدالت کا ہے، رہنما پاکستان تحریکِ انصاف-حضرو میں ماں اپنی بیٹی کی عزت بچانے کی کوشش میں جان کی بازی ہار گئی حملہ آور نے بیٹی کی جان بچانے کی کوشش کرنے والی خاتون کو چاقو کے وار کرکے شدید زخمی کیا، بعد ازاں خاتون ... مزید-چند سالوں میں پیٹرول ناقابل یقین حد تک سستا جبکہ اس کا استعمال بھی نہ ہونے کے برابر ہو جائے گا دنیا کی بڑی بڑی کمپنیاں اب بجلی سے چلنے والی ہائبرڈ گاڑیاں تیار کر رہی ہیں، ... مزید-وزیراعلی سندھ سے برٹس ٹریڈ کمشنر فار پاکستان، مڈل ایسٹ کی وزیراعلی ہائوس میں ملاقات-گراں فروشی، ملاوٹ اور غیر معیاری اشیاکی فروخت کے خلاف کاروائی جاری رکھی جائے، وزیراعلی-لیبر تنظیموں کا اپوزیشن کی متوقع احتجاجی تحریک سے مکمل لاتعلقی کا اعلان ملک کو معاشی طور پر مضبوط بنانے کیلئے حکومت اور قومی اداروں کے ساتھ کھڑے ہیں ‘لیبرتنظیمیں اپوزیشن ... مزید-ناقص معاشی پالیسیوں کے ذمہ دار ہم سے 10 ماہ کا حساب مانگ رہے ہیں، جب تک معیشت بہتر نہیں ہو جاتی ہم ان سے ان کے 40 سالوں کا حساب مانگتے رہیں گے‘ ماضی میں ذاتی مفادات کے لئے ... مزید-نیب لاہور نے ہسپتالوں کے مضر صحت فضلہ سے گھریلو اشیاء کی تیاری کے حوالے سے میڈیا رپوٹس کا نوٹس لے لیا متعلقہ اداروں کے حکام بریفنگ کیلئے طلب ‘ ملوث عناصر کے خلاف ٹھوس ... مزید

GB News

وفاقی بجٹ2019ـ20 میں گلگت بلتستان حکومت کے ترقیاتی منصوبوں کیلئے17ارب 43 کروڑ 50 لاکھ روپے مختص کرنے کی تجویز

Share Button

اسلام آباد(شبیر حسین سے)وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال2019ـ20 کے وفاقی بجٹ میں گلگت بلتستان حکومت کے ترقیاتی منصوبوں کیلئے17ارب 43 کروڑ 50 لاکھ روپے مختص کرنے کی تجویز دی ہے۔وفاق نے گلگت بلتستان کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں شامل منصوبوں کیلئے بلاک ایلوکیشن کی مد میں15 ارب روپے جبکہ وفاقی پی ایس ڈی پی میں شامل12 جاری و نئے منصوبوں کیلئے2 ارب 43 کروڑ 50لاکھ روپے مختص کرنے کی تجویز پیش کی ہے۔بجٹ دستاویز کے مطابق وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال 2019ـ20کے وفاقی پی ایس ڈی پی میں گلگت بلتستان کے شہرسکردو میں شغرتھنگ کے مقام پر 26 میگا واٹ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کیلئے5 کروڑروپے،تھگ چلاس کے مقام پر4میگاواٹ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کیلئے 12کروڑ 50 لاکھ روپے، گلگت میں امراض قلب ہسپتال کے قیام کیلئے 30 کروڑ روپے، کنو داس سے نلتر ایئرفورس بیس تک سڑک کی اپگریڈیشن کیلئے30کروڑ روپے، سکردو میں پولی ٹیکنیکل انسٹی ٹیوٹ فار بوائز کے قیام کیلئے 4 کروڑ روپے،نلتر کے مقام پر16 میگا واٹ ہائیڈور پاور پراجیکٹ کیلئے20کروڑ روپے، ہنزل گلگت کے مقام پر20 میگا واٹ ہائیڈرو پاور پراجکٹ کیلئے46کروڑ روپے، سکردو میں ہرپو کے مقام پر 34.5 میگا واٹ ہائیڈور پاور پراجیکٹ کیلئے 40کروڑ روپے ، عطاآباد کے مقام پر32.5 میگاواٹ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کیلئے11کروڑ روپے، غواڑی گانچھے کے مقام پر 30 میگا واٹ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کیلئے5کروڑ روپے، گلگت بلتستان میں ریجنل گرڈ سٹیشن کی فیز ون کیلئے 10کروڑ روپے جبکہ گلگت سٹی میں سیوریج و سینیٹیشن نظام کے فیز ٹو کیلئے 30کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویز پیش کی ہے۔ وفاقی بجٹ میں گلگت بلتستان میں جگلوٹ سے سکردو تک 167 کلو میٹر سڑک کی توسیعی منصوبہ کیلئے 3 ارب 50 کروڑ روپے،سکردو میں بلتستان یونیورسٹی کے قیام کیلئے25کروڑ روپے جبکہ سی پیک منصوبہ کیلئے قراقرم ہائی وے کے ساتھ تھری جی فورجی سروس کی توسیع کیلئے60کروڑروپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔ وفاق نے گلگت بلتستان میں سپیس اپلیکیشن ریسرچ سنٹر کیلئے 32 کروڑ 92لاکھ53 ہزار روپے،گلگت بلتستان میں فروٹ پروسیسنگ لیبارٹری کیلئے1کروڑ60 لاکھ روپے،گلگت میں کینسر ہسپتال کے قیام کیلئے 73کروڑ 74 لاکھ 56 ہزارروپے،نیشنل ٹی بی پروگرام گلگت بلتستان کیلئے31 لاکھ روپے، بہبود آبادی پروگرام گلگت بلتستان کیلئے 27 کروڑ28 لاکھ43 ہزار روپے،وزیر اعظم کے پروگرام برائے ہیپاٹائٹس کنٹرول گلگت بلتستان کیلئے 1 کروڑ 90 لاکھ روپے،قومی پروگرام برائے زچہ بچہ ونوزائیدہ بچوں کیلئے 15 کروڑ 49 لاکھ 60 ہزار روپے،گلگت بلتستان میں سیڈ سرٹیفیکیشن سروس کی بہتری کیلئے94 لاکھ 43 ہزار روپے،گلگت بلتستان کے بالائی علاقوں میں یاک کی ڈویلپمنٹ کیلئے 2 کروڑ روپے،سی پیک منصوبہ کیلئے قراقرم ہائی وے کے ساتھ تھری جی فورجی سروس کی توسیع کیلئے60کروڑروپے، گلگت بلتستان میں 15سالہ پرانے او ایس پی کی تبدیلی کیلئے 4 کروڑ5لاکھ50ہزار روپے،کے آئی یو میں ہاسٹل اور سپورٹس سہولیات کی فراہمی کیلئے8 کروڑ روپے،کے آئی یو سکرود کیمپس میں انجیئرنگ فیکلٹی منصوبہ کیلئے 15کروڑ روپے ، گلگت شندور چترال روڈ کی توسیع کیلئے 50کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویز دی ہے۔

Facebook Comments
Share Button