تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلی پنجاب نے تقرر و تبادلوں پر پابندی لگا دی-حکومت کا شرعی قوانین کے تحت احتجاجی مظاہروں کیخلاف مسودہ تیار حکومت نے احتجاجی مظاہرے ’’شریعت اور قانون کی نظرمیں“ کے عنوان سے مسودہ تیارکیا ہے، مسودے کو اگلے ایک ... مزید-دھماکے میں پاکستانی قونصل خانے کا تمام عملہ محفوظ رہا، ڈاکٹر فیصل دھماکا آئی ای ڈی نصب کرکے کیا گیا، قونصل خانے کی سکیورٹی بڑھانے کیلئےافغان حکام سے رابطے میں ہیں۔ ترجمان ... مزید-جلال آباد میں پاکستان سفارت خانے کے باہر دھماکا دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار سمیت 3 افراد زخمی ہوگئے، دھماکا پاکستانی سفارتخانے کی چیک پوسٹ کے 200 میٹر فاصلے پر ہوا۔ ... مزید-گلوکارہ ماہم سہیل کے گانے سجن یار کی پری سکریننگ کی تقریب کا انعقاد-پاک ہیروز ہاکی کلب کی 55 ویں سالگرہ پر ٹورنامنٹ کا انعقاد-صفائی مہم کے دوران 47 ہزار ٹن کچرا نالوں سے نکالا گیا ہے‘ وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی-مودی کے دورہ فرانس پر”انڈیا دہشتگرد“ کے نعرے لگ گئے جب کوئی دورہ فرانس پرتھا، ترجمان پاک فوج کا دلچسپ ٹویٹ، سینکڑوں کشمیری، پاکستانی اورسکھ کیمونٹی کے لوگوں کا ایفل ... مزید-حالیہ پولیو کیسز رپورٹ ہونے کے بعد بلوچستان میں خصوصی پولیو مہم شروع کی جا رہی ہے، راشد رزاق-آئی جی پولیس نے راولپنڈی میں شہری سے فراڈ کے واقعہ کا نو ٹس لے لیا

GB News

سنسنی خیز مقابلے کے بعد نیوزی لینڈ کو شکست دیکر انگلینڈ پہلی بار کرکٹ کا عالمی چیمپئن بن گیا

Share Button

کیوی ٹیم کے 242 رنز کے ہدف کے تعاقب میں انگلش ٹیم مقررہ 50 اوورز میں 241 رنز بناسکی۔

انگلش ٹیم کو آخری اوور میں 15 رنز درکار تھے تاہم کیوی بولر ٹرینٹ بولٹ نے ابتدائی دو گیندوں پر کوئی رن نہیں بننے دیا۔

جس کے بعد انگلش بلے باز اسٹوکس نے اگلی گیند پر شاندار چکھا لگا کر اپنی ٹیم کو میچ میں واپس لائے، چوتھی گیند پر 2 رنز لیتے ہوئے اوور تھرو کی وجہ سے انگلش ٹیم کو 6 رنز مل گئے اور نیوزی لینڈ شائقین کی امیدیں دم توڑتی دکھائی دیں تاہم پانچویں گیند پر 2 رنز لینے کی کوشش میں عادل رشید رن آؤٹ ہوئے۔

میچ کی آخری گیند پر انگلینڈ کا آخری کھلاڑی دوسرا رن بنانے کی کوشش میں رن آؤٹ ہوگیا اور یوں میچ برابر ہوگیا۔

سپر اوور

سپر اوور میں انگلینڈ کی جانب سے اسٹوکس اور بٹلر کھیلنے آئے جنہوں نے 16 رنز کا ہدف دیا تھا، نیوزی لینڈ کی ٹیم بھی سپر اوور کی آخری گیند پر رن آؤٹ ہوئے اور یوں میچ برابر ہوگیا تاہم میچ میں زیادہ باؤنڈریز کی بنیاد پر انگلش ٹیم کو فاتح قرار دیا گیا۔

نیوزی لینڈ کی اننگز

قبل ازیں لارڈز کے تاریخی گراؤنڈ میں نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے فائنل میچ کا ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔

مارٹن گپٹل اور ہنری نکولس نے انگلینڈ کے خلاف اننگز کا آغاز کیا لیکن گپٹل ایک بار پھر ناکام ثابت ہوئے اور 19 رنز بنا کر کرس ووکس کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

گپٹل کے آؤٹ ہونے کے بعد نکولس اور ولیمسن نے محتاط انداز میں بیٹنگ کرتے ہوئے ٹیم کا اسکور آگے بڑھایا تاہم 103 کے مجموعی اسکور پر ولیمسن  30 رنز بناکر پلنکٹ کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

اس کے بعد نکولس نے ذمہ درانہ بیٹنگ کرتے ہوئے نصف سنچری بنائی تاہم وہ بھی 118 کے مجموعی اسکور پر پلنکٹ کی گیند پر بولڈ ہوئے، انہوں نے 55 رنز کی اننگز کھیلی۔ روس ٹیلر بھی 14 رنز بنا کر ایل بی ڈبلیو ہو ئے۔

ٹوم لیتھم کی ذمہ دارانہ بیٹنگ کی بدولت کیوی ٹیم نے مقررہ 50 اوورز میں 8 وکٹوں کے نقصان پر 241 رنز بنائے۔ نیوزی لینڈ کی جانب سے نکولس 55 اور لیتھم 47 رنزبناکر نمایاں رہے۔

انگلش ٹیم کے لیام پلنکٹ اور ووکس نے 3، 3 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

نیوزی لینڈ کے 242 رنز کے ہدف میں انگلش ٹیم کا آغاز مایوس کن تھا اور 28 کے مجموعی اسکور پر جیسن روئے 17 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

جوئے روٹ 7 رنز بناکر گرینڈ ہوم کا شکار بنے جب کہ بیئراسٹو بھی 36 اور اوئن مورگن 9 رنز بناکر پویلین لوٹے۔

اسٹوکس اور بٹلر نے شاندار بیٹنگ کی اور نصف سنچریاں بنائی، دونوں کھلاڑیوں کے درمیان 110 رنز کی شراکت انگلش ٹیم کو میچ میں واپس لے آئی تاہم 196 کے مجموعی اسکور پر بٹلر 59 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

اس کے بعد ووکس 2 اور پلنکٹ 10 رنز بناکر آؤٹ ہوئے، اس دوران میچ ڈرامائی صورت اختیار کرگیا اور مقررہ 50 اوورز میں پوری انگلش ٹیم 241 رنز بناسکی اور یوں میچ برابر ہوگیا۔

بین اسٹوکس نے میچ میں آل راؤنڈر کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور 98 گیندوں پر 84 رنز بناکر ناقابل شکست رہے جب کہ بٹلر 59 اور بیئراسٹو 36 رنز بناکر نمایاں رہے۔

نیوزی لینڈ کے جیمز نیشم اور فیرگوسن نے 3، 3 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

بین اسٹوکس کو شاندار آل راؤنڈر کارکردگی پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار پائے جب کہ نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن کو پلیئر آف دی ٹورنامنٹ قرار دیا گیا

ورلڈکپ کی انعامی رقم

ورلڈ کپ کرکٹ ٹورنامنٹ کی فاتح ٹیم کو 40 لاکھ ڈالرز کی انعامی رقم ملے گی۔ لارڈز میں فائنل کے ساتھ ہی آئی سی سی ورلڈ کپ کا میلہ اپنے اختتام کو پہنچے گا۔ فائنل ہارنے والی ٹیم 20 لاکھ ڈالرز کی حقدار ہوگی۔ پاکستان ٹیم کو 3 لاکھ ڈالرز ملے ہیں۔ آئی سی سی نے ورلڈکپ کیلئے ایک کروڑ ڈالرز کی انعامی رقم کا اعلان کیا ہوا ہے۔

Facebook Comments
Share Button