تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلی پنجاب نے تقرر و تبادلوں پر پابندی لگا دی-حکومت کا شرعی قوانین کے تحت احتجاجی مظاہروں کیخلاف مسودہ تیار حکومت نے احتجاجی مظاہرے ’’شریعت اور قانون کی نظرمیں“ کے عنوان سے مسودہ تیارکیا ہے، مسودے کو اگلے ایک ... مزید-دھماکے میں پاکستانی قونصل خانے کا تمام عملہ محفوظ رہا، ڈاکٹر فیصل دھماکا آئی ای ڈی نصب کرکے کیا گیا، قونصل خانے کی سکیورٹی بڑھانے کیلئےافغان حکام سے رابطے میں ہیں۔ ترجمان ... مزید-جلال آباد میں پاکستان سفارت خانے کے باہر دھماکا دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار سمیت 3 افراد زخمی ہوگئے، دھماکا پاکستانی سفارتخانے کی چیک پوسٹ کے 200 میٹر فاصلے پر ہوا۔ ... مزید-گلوکارہ ماہم سہیل کے گانے سجن یار کی پری سکریننگ کی تقریب کا انعقاد-پاک ہیروز ہاکی کلب کی 55 ویں سالگرہ پر ٹورنامنٹ کا انعقاد-صفائی مہم کے دوران 47 ہزار ٹن کچرا نالوں سے نکالا گیا ہے‘ وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی-مودی کے دورہ فرانس پر”انڈیا دہشتگرد“ کے نعرے لگ گئے جب کوئی دورہ فرانس پرتھا، ترجمان پاک فوج کا دلچسپ ٹویٹ، سینکڑوں کشمیری، پاکستانی اورسکھ کیمونٹی کے لوگوں کا ایفل ... مزید-حالیہ پولیو کیسز رپورٹ ہونے کے بعد بلوچستان میں خصوصی پولیو مہم شروع کی جا رہی ہے، راشد رزاق-آئی جی پولیس نے راولپنڈی میں شہری سے فراڈ کے واقعہ کا نو ٹس لے لیا

GB News

گلگت:ٹائر پھٹنے سے پی آئی اے کا طیارہ رن وے سے اتر گیا،مسافر اورعملہ محفوظ

Share Button

گلگت (سٹاف رپورٹر )پاکستان انٹر نیشنل ائیر لائن کا طیارہ حادثے کا شکار ہو گیا ۔ ٹائر پھٹنے سے طیارہ رن وے سے اتر گیا طیارے میں موجود 49مسافروں اور عملے کے 4 افراد محفوظ رہے ۔ہفتہ کے روز پی آئی اے کے طیارہ پی کے 605 نے صبح 7 بج کر 5 منٹ پر اسلام آباد ائیر پورٹ سیگلگت کے لئے اڑان بھری ۔ 8 بجے گلگت ائیر پورٹ پر اترا اورٹیکسی کرنے کے دوران طیارہ رن وے سے پھسل کر کچی زمین پر اتر گیا اور ایک طرف جھک کر کھڑا ہو گیا ۔طیارے کے حادثے کے دوران خوفناک آواز کی وجہ سے ائیر پورٹ کے اطراف میں خوف وہراس پھیل گیاسول ایوی ایشن نے طیارے کے رن وے سے اترتے ہی ایمرجنسی نافذکر کے ہنگامی طور پر ریسکیو کارروائی شروع کردی اور فوری طور پر متاثرہ مقام پر پہنچ کر تمام مسافروں جن میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے کو جہاز کے عملے سمیت بحفاظت نکال کر ائیر پورٹ پسنجر لاونج منتقل کردیا طیارے میں موجود تمام مسافر اور عملے کے تمام افراد محفوظ رہے۔ طیارہ حادثے کی اطلاع ملتے ہی سول ایوی ایشن کا نظام حرکت میں آنے کے ساتھ ساتھ مقامی فائر بریگیڈ اور ریسکو 1122 بھی موقع پر پہنچ گئے فوری طور پر طیارے کے حادثے کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی ہے مقامی انتظامیہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاکستان انٹر نیشنل ائیر لائن کی پرواز پی کے 605لینڈنگ کے دوران پھسلنے پر پی آئی اے کی پائلٹ کیپٹن مریم نے بڑ ی بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے جہاز کو کنٹرول کیا جہاز رن وے سے باہر آکر الٹ گیا۔جس پر ضلعی انتظامیہ نے بر وقت کاروائی کرتے ہوئے جہاز کے پسنجرز کو باہر نکالا۔ڈی سی گلگت فیاض احمد نے فوری طورپرایمبولینس اور کشروٹ سٹی ہسپتال کی ایمبولینس کو طلب کیا جہاز میں 49 پسنجروں کے ساتھ پی آئی اے عملے کے 4افراد بھی موجود تھے فوری طور پر چیف سیکریٹری گلگت بلتستان کیپٹن (ر)محمد خرم آغا نے حادثے کاشکار ہونے والے جہاز کا تفصیلی جائزہ لیا اور تمام مسافروں کی خیریت در یافت کی۔چیف سیکریٹری گلگت بلتستان نے جہاز کی پائلٹ کیپٹن مریم سے ملاقات کی اور جہاز کی پائلٹ نے چیف سیکریٹری گلگت بلتستان کو حادثے کے متعلق تفصیلات سے آگاہ کیا۔گلگت سول ایوی ایشن کے منیجر نے ضلعی انتظامیہ گلگت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے ریسکیو 1122 اور ہسپتالوں کی ایمبولینس اور جی بی ڈی ایم اے کے تعاون کو سراہا،قائم مقام ڈی سی گلگت فیا ض احمد او ر اسسٹنٹ کمشنر گلگت کیپٹن (ر) محمدشارخ چیمہ نے چیف سیکریٹری گلگت بلتستان کو پی آئی اے جہاز کے حادثے سے متعلق بریفنگ بھی دی۔اس کے ساتھ ساتھ جی بی ڈی ایم اے نے بھاری مشینری بھی موقع میں مہیا کر دی ہے حادثہ کا شکار ہونے والے جہاز کی سکیورٹی پر پویس کی نفری بھی تعینات کر دی گئی ہے اور قنات لگادی گئی۔ پی آئی اے کے طیارے میں اسلام آباد سے گلگت سفر کرنے والے ایک مسافر ممتاز کاروباری شخصیت حاجی قربان علی نے کے پی این کو بتایا کہ طیارے کی پائلٹ مریم کی حاضر دماغی کی وجہ سے ہم بال بال بچ گئے انہوں نے بتایا کہ میں سال میں کئی مرتبہ پی آئی اے سے اسلام آباد گلگت کا سفر کرتا رہتاہوں، چلاس سے گلگت پہنچنے تک دس سے پندرہ منٹ لگتے ہیں مگر ہفتہ کے روز معمول سے ہٹ کر طیارہ کی رفتار اچانک تیز ہو گئی اور تین سے چار منٹ میں ہم گلگت کے رن وے پر اتررہے تھے جہاز کی رفتار تیز ہونے کی وجہ سے جہاز کنٹرول نہ ہو سکا تو پائلٹ نے جہاز کو اچانک موڑ دیا جس کی وجہ سے بڑا حادثہ ہونے سے بال بال بچ گیا اورلوگوں کی جانیں محفوظ رہیں، انہوں نے بتایا کہ اصل وجہ تو ماہرین ہی بتا سکتے ہیں مگر ہم اتنا ضرور بتاسکتے ہیں کہ جہاز کی رفتار لینڈنگ کے وقت انتہائی کم ہوتی ہے مگر اس کے برعکس اس مرتبہ جہاز کی رفتار کم ہونے کی بجائے اچانک تیز ہو گئی تھی، جہاز کی پائلٹ مریم جو انتہائی تجربہ کار ہیں نے طیارے کو بڑے حادثے سے بچایا۔ دوسری جانب گلگت شہر کے کئی اور لوگوں نے بھی کے پی این کو بتایا کہ ہفتہ کے روز اسلام آباد سے گلگت آنے والے طیارے کی رفتار بہت تیز تھی اس سے قبل کسی اور طیارے نے اتنی تیز رفتاری سے لینڈنگ نہیں کی تھی۔حادثے کے بعد گلگت سے اسلام آبادجانے والے مسافروں کومتبادل طیارے سے روانہ کیاگیا،پی آئی اے کے سی ای او نے واقعہ کی تحقیقات کاحکم دے دیا ہے اوردونوں پائلٹس کوگرائونڈکردیاگیا ہے۔

Facebook Comments
Share Button