تازہ ترین

GB News

ڈیرہ اسماعیل خان :پولیس چیک پوسٹ پردہشتگردوں کی فائرنگ، ڈی ایچ کیو ہسپتال میں خودکش دھماکہ،6 اہلکاروں سمیت 9افراد شہید

Share Button

ڈیرہ اسماعیل خان(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) ڈیرہ اسماعیل خان کی ڈیرہ کوٹلہ سیدان پولیس چیک پوسٹ پردہشتگردوں کی فائرنگ اور ڈی ایچ کیو ہسپتال میں خودکش دھماکے کے نتیجے میں 6 اہلکاروں سمیت 9 افراد شہید جب کہ24زخمی ہوگئے زخمیوں میں سات پولیس اہلکار اور بچے بھی شامل ہیں متعدد زخمیوں کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے،پولیس کے مطابق صبح پونے آٹھ بجے درابن چیک پوسٹ پر دہشتگردوں نے فائرنگ کی اور دو پولیس اہلکاروں کو شہید کردیاواردات کے بعد دہشت گرد فرار ہوگئے،ایمبولینس لاشوں کو لے کر ڈی ایچ کیوہسپتال پہنچی تو اس دوران ٹراما سینٹر کے گیٹ پر خودکش دھماکہ ہوگیا ،ابتدائی تفتیش کے مطابق جب پولیس اہلکار اور مقامی افراد ایمبولینس کے قریب اکھٹے ہوئے تو برقعہ پوش حملہ آور نے اپنے آپ کو دھماکہ خیز مواد سے اڑا دیاواقعہ کے بعد شہر بھر کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی بڑی تعداد میں زخمیوں کے باعث کئی کو کمبائن ملٹری اسپتال منتقل کیا گیا۔ سی ایم ایچ ذرائع کا کہنا ہے کہ اسپتال میں 22 زخمی اور 5 لاشیں لائی گئی ہیں۔ڈسٹرکٹ پولیس افسر (ڈی پی او) سلیم ریاض کے مطابق دھماکہ کے نتیجے میں 2 مزید پولیس اہلکاروں سمیت 3 شہری شہید ہوئے جبکہ ہسپتال میںعلاج کے دوران زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے مزید 2 پولیس اہلکار جان کی بازی ہار گئے جس کے بعد مجموعی طور پر شہید افراد کی تعداد 9 ہوگئی۔سلیم ریاض کے مطابق خود کش حملے میں سات پولیس اہلکاروں سمیت 24 افراد زخمی ہیں،ڈی ایس پی افتخار شاہ کے مطابق دھماکہ خودکش تھا اور خودکش حملہ آور خاتون تھیں۔ڈی پی او سلیم ریاض کا کہنا تھا کہ خودکش حملہ آور کا خاتون ہونا غیر متوقع تھا،ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ابتدائی تفتیش کے مطابق دھماکے میں لگ بھگ سات کلو گرام بارودی مواد استعمال کیا گیا جبکہ دھماکے کی جگہ سے ایک خاتون کے بال اور پیر ملے ہیں۔عینی شاہدین کے مطابق خودکش حملہ آور لڑکی کی عمر کم و بیش 15 سال تھی۔پولیس کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور شہر بھر میں پولیس اور سیکورٹی فورسز کاگشت جاری تھاتحقیقات کے لیے شواہد اکٹھے کرلئے گئے تھے، فائرنگ اورخود کش دھماکے میں شہید 4 اہلکاروں کی نمازجنازہ پولیس لائن میں ادا کردی گئی جس میں کمشنر جاوید مروت سمیت اسٹیشن کمانڈر عمران سرتاج، پولیس افسران اور شہریوں نے شرکت کی،نمازجنازہ کے بعد پولیس شہدائکو سلامی پیش کی گئی جس کے بعد میتیں آبائی علاقوں کو روانہ کردی گئیں۔کالعدم تحریک طالبان نے دونوں واقعات کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔

Facebook Comments
Share Button