تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلی پنجاب نے تقرر و تبادلوں پر پابندی لگا دی-حکومت کا شرعی قوانین کے تحت احتجاجی مظاہروں کیخلاف مسودہ تیار حکومت نے احتجاجی مظاہرے ’’شریعت اور قانون کی نظرمیں“ کے عنوان سے مسودہ تیارکیا ہے، مسودے کو اگلے ایک ... مزید-دھماکے میں پاکستانی قونصل خانے کا تمام عملہ محفوظ رہا، ڈاکٹر فیصل دھماکا آئی ای ڈی نصب کرکے کیا گیا، قونصل خانے کی سکیورٹی بڑھانے کیلئےافغان حکام سے رابطے میں ہیں۔ ترجمان ... مزید-جلال آباد میں پاکستان سفارت خانے کے باہر دھماکا دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار سمیت 3 افراد زخمی ہوگئے، دھماکا پاکستانی سفارتخانے کی چیک پوسٹ کے 200 میٹر فاصلے پر ہوا۔ ... مزید-گلوکارہ ماہم سہیل کے گانے سجن یار کی پری سکریننگ کی تقریب کا انعقاد-پاک ہیروز ہاکی کلب کی 55 ویں سالگرہ پر ٹورنامنٹ کا انعقاد-صفائی مہم کے دوران 47 ہزار ٹن کچرا نالوں سے نکالا گیا ہے‘ وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی-مودی کے دورہ فرانس پر”انڈیا دہشتگرد“ کے نعرے لگ گئے جب کوئی دورہ فرانس پرتھا، ترجمان پاک فوج کا دلچسپ ٹویٹ، سینکڑوں کشمیری، پاکستانی اورسکھ کیمونٹی کے لوگوں کا ایفل ... مزید-حالیہ پولیو کیسز رپورٹ ہونے کے بعد بلوچستان میں خصوصی پولیو مہم شروع کی جا رہی ہے، راشد رزاق-آئی جی پولیس نے راولپنڈی میں شہری سے فراڈ کے واقعہ کا نو ٹس لے لیا

GB News

چار نئے اضلاع کے لئے 64پوسٹوں کی تخلیق کامعاملہ لٹک گیا

Share Button

گلگت(جنرل رپورٹر)چار نئے اضلاع کے لئے 64پوسٹوں کی تخلیق کامعاملہ لٹک گیا ہے ذرائع کے مطابق محکمہ سروسز نے گلگت بلتستان کے 4نئے اضلاع گوپس یاسین،داریل ،تانگیر اور روندو کیلئے 64پوسٹوں کی تخلیق کے لئے فیصلہ کیا تھا کہ مختلف محکموں میں موجود خالی اسامیاں نئے اضلاع منتقل کردی جائیں ، اس حوالے سے محکمہ سروسز نے مطالبات اعلیٰ حکام کو بھجوائے تو اعتراض کیاگیا کہ تمام محکموں کے سیکرٹریز سے تحریری اجازت نامہ لیا جائے جس کے بعد محکمہ تعلیم،صحت ،ہوم ڈیپارٹمنٹ سمیت دیگرمحکموں کو خط لکھا گیا جس کا کوئی جواب ابھی تک نہیں آیادوسری جانب ذرائع نے یہ بھی انکشاف کیا ہے کہ دو سے تین محکموں نے اپنی اسامیوں کو نئے اضلاع کو دینے سے انکار کردیا ہے جبکہ دیگر محکموں نے ابھی تک کوئی جواب نہیں دیا ہے محکموں کے اعتراض کے بعد نئے اضلاع کیلئے 64پوسٹوں کی تخلیق کا معاملہ لٹک گیا ہے اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ اسامیاں عارضی طور پر نئے اضلاع منتقل کی جانی ہیں اور بعدمیں نئے اضلاع کے لئے باقاعدہ اسامیوں کی تخلیق پر ان اسامیوں کو متعلقہ محکموں کوواپس کردیا جانا ہے۔محکموں کی جانب سے اعتراض کے بعد حکام نے متبادل آپشنز کی تلاش شروع کردی ہے۔

Facebook Comments
Share Button