تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلی پنجاب نے تقرر و تبادلوں پر پابندی لگا دی-حکومت کا شرعی قوانین کے تحت احتجاجی مظاہروں کیخلاف مسودہ تیار حکومت نے احتجاجی مظاہرے ’’شریعت اور قانون کی نظرمیں“ کے عنوان سے مسودہ تیارکیا ہے، مسودے کو اگلے ایک ... مزید-دھماکے میں پاکستانی قونصل خانے کا تمام عملہ محفوظ رہا، ڈاکٹر فیصل دھماکا آئی ای ڈی نصب کرکے کیا گیا، قونصل خانے کی سکیورٹی بڑھانے کیلئےافغان حکام سے رابطے میں ہیں۔ ترجمان ... مزید-جلال آباد میں پاکستان سفارت خانے کے باہر دھماکا دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار سمیت 3 افراد زخمی ہوگئے، دھماکا پاکستانی سفارتخانے کی چیک پوسٹ کے 200 میٹر فاصلے پر ہوا۔ ... مزید-گلوکارہ ماہم سہیل کے گانے سجن یار کی پری سکریننگ کی تقریب کا انعقاد-پاک ہیروز ہاکی کلب کی 55 ویں سالگرہ پر ٹورنامنٹ کا انعقاد-صفائی مہم کے دوران 47 ہزار ٹن کچرا نالوں سے نکالا گیا ہے‘ وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی-مودی کے دورہ فرانس پر”انڈیا دہشتگرد“ کے نعرے لگ گئے جب کوئی دورہ فرانس پرتھا، ترجمان پاک فوج کا دلچسپ ٹویٹ، سینکڑوں کشمیری، پاکستانی اورسکھ کیمونٹی کے لوگوں کا ایفل ... مزید-حالیہ پولیو کیسز رپورٹ ہونے کے بعد بلوچستان میں خصوصی پولیو مہم شروع کی جا رہی ہے، راشد رزاق-آئی جی پولیس نے راولپنڈی میں شہری سے فراڈ کے واقعہ کا نو ٹس لے لیا

GB News

ٹرمپ کے معاشی مشیر لیری کڈلو کی مودی کی جانب سے صدر سے کشمیر معاملے میں ثالث کا کردار ادا کرنے کی درخواست کی تصدیق

Share Button

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر کے معاشی مشیر لیری کڈلو نے ڈونلڈ ٹرمپ کے کشمیر ثالثی بیان پر چیختے چلاتے بھارت پر واضح کر دیا ہے کہ وہ خود سے کوئی باتیں نہیں گھڑتے، انہوں نے جو کہنا تھا کہہ دیا۔تفصیلات کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کے معاشی مشیر لیری کڈلو نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے کشمیر معاملے میں ثالث کا کردار ادا کرنے کی درخواست کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر نہ تو بلاوجہ کوئی بات کرتے ہیں اور نہ ہی خود سے گھڑتے ہیں، انہوں نے جو کہنا تھا وہ کہہ دیا ہے۔لیری کڈلو نے یہ بات ایک صحافی کے سوال کے جواب میں کہی۔ صحافی نے ان سے پوچھا کہ صدر ٹرمپ کے مطابق نریندر مودی نے مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی درخواست کی لیکن انڈیا اس بات کی تردید کر رہا ہے، جس پر انہوں نے کہا کہ امریکی صدر کی طرف سے غلط بیانی کہہ کر سوال پوچھنا توہین آمیز ہے، ڈونلڈ ٹرمپ خود سے کوئی بھی بات بیان نہیں کرتے۔یاد رہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کے دوران بتایا تھا کہ دو ہفتے قبل انڈین وزیراعظم نریندر مودی نے ان سے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے ثالث بننے کی درخواست کی اور کہا کہ کیا آپ ثالث بنیں گے، میں نے پوچھا کس چیز پر؟ تو مودی نے کہا کہ آپ مسئلہ کشمیر پر ثالثی کا کردار ادا کریں۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اس بیان پر انڈین میڈیا اور سیاست میں آگ لگی ہوئی ہے۔ اپوزیشن جماعتوں نے پارلیمنٹ اجلاس میں ہنگامہ آرائی کرتے ہوئے وزیراعظم نریندرمودی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ امریکی صدر کے مسئلہ کشمیر سے متعلق بیان پر خود وضاحت پیش کریں۔لیری کڈلو کا کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ چیزوں کو بڑھا چڑھا کر پیش نہیں کرتے، میرے خیال میں یہ بہت نامناسب سوال ہے، میں اس سے دور رہنا چاہتا ہوں، میں اس کا جواب دہ نہیں ہوں، جان بولٹن، پومپیو اور صدر خود اس کے بارے میں بتائیں گے، میں اس پر کوئی بات نہیں کر رہا۔

Facebook Comments
Share Button