تازہ ترین

GB News

سی پیک کووسعت دینے کیلئے پاکستان کیساتھ مسلسل کام کرینگے،چین

Share Button

چین نے کہا ہے کہ وہ پاکستان کے لوگوں کی سماجی واقتصادی ترقی اوران کو سی پیک کا زیادہ سے زیادہ پہنچانے کیلئے چین پاکستان اقتصادی راہداری کے دائرہ اور فریم ورک کو مزید افزودہ اور وسیع کرنے اور اس سلسلے میں عزم مصمم سے پاکستان کے ساتھ مسلسل مل کرکام کرے گا، چین اور پاکستان سدا بہار سٹریٹجک شراکت دار ہیں او ر سی پیک دونوں ممالک کے درمیان حقیقت پسندانہ تعاون کا نمایاں منصوبہ ہے ، خلیج میں امن اور استحکام مشرق وسطیٰ سمیت پوری دنیا کے امن وسلامتی کیلئے انتہائی اہم ہے ، اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ خلیج میں تعیناتی سلامتی کے مقصد کے حصول کیلئے خطے کے ممالک کو اچھے پڑوس اور باہمی احترام اور کسی کے اندرونی معاملات میں عدم مداخلت کی بنیاد پر مبنی دوستانہ تعلقات رکھیں۔یہ بات جمعرات کو چین کی وزارت خارجہ کی خاتون ترجمان ہواچھون اینگ نے باقاعدہ پریس بریفنگ کے دوران پشاور کراچی ایکسپریس وے کے سکھر ملتان سیکشن کی تکمیل پر ریمارکس دیتے ہوئے کہی ۔چینی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا کہ چین پاکستانی عوام کے فائدے کیلئے سی پیک کی تعمیر کو فروغ دینے کیلئے انتہائی پرعزم ہے ۔انہوں نے کہا کہ سکھر ملتان سیکشن کی لمبائی 392کلومیٹر ہے اور یہ سی پیک اور اس کے ابتدائی منصوبوں کا سب سے بڑا ٹرانسپورٹیشن انفراسٹرکچر ہے ۔ترجمان کے مطابق منصوبے کا آغاز اگست2016میں ہوا اور اسے رواں سال کی مقرر شدہ 23جولائی کی تاریخ سے قبل ہی مکمل کر لیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ تعمیراتی عمل کے دوران اس منصوبے سے مقامی آبادی کیلئے بڑی تعداد میں روزگار کے مواقع پیدا ہوئے ،منصوبے سے 29ہزار ملازمتیں ملیں جبکہ بڑی تعداد میں ٹیکنیشنز کو تربیت ملی ۔انہوں نے کہا کہ چین اس بات پر یقین رکھتا ہے کہ منصوبہ کی تکمیل دونوں ممالک خصوصاً پاکستان کی سماجی واقتصادی ترقی کے فروغ میں اہم کردار ادا کرے گا ۔انہوں نے کہا کہ چین اور پاکستان سدا بہار سٹریٹجک شراکت دار ہیں اور چین پاکستان اقتصادی راہداری دونوں ممالک کے درمیان حقیقت پسندانہ تعاون کا نمایاں منصوبہ ہے ۔

Facebook Comments
Share Button