تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلی پنجاب نے تقرر و تبادلوں پر پابندی لگا دی-حکومت کا شرعی قوانین کے تحت احتجاجی مظاہروں کیخلاف مسودہ تیار حکومت نے احتجاجی مظاہرے ’’شریعت اور قانون کی نظرمیں“ کے عنوان سے مسودہ تیارکیا ہے، مسودے کو اگلے ایک ... مزید-دھماکے میں پاکستانی قونصل خانے کا تمام عملہ محفوظ رہا، ڈاکٹر فیصل دھماکا آئی ای ڈی نصب کرکے کیا گیا، قونصل خانے کی سکیورٹی بڑھانے کیلئےافغان حکام سے رابطے میں ہیں۔ ترجمان ... مزید-جلال آباد میں پاکستان سفارت خانے کے باہر دھماکا دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار سمیت 3 افراد زخمی ہوگئے، دھماکا پاکستانی سفارتخانے کی چیک پوسٹ کے 200 میٹر فاصلے پر ہوا۔ ... مزید-گلوکارہ ماہم سہیل کے گانے سجن یار کی پری سکریننگ کی تقریب کا انعقاد-پاک ہیروز ہاکی کلب کی 55 ویں سالگرہ پر ٹورنامنٹ کا انعقاد-صفائی مہم کے دوران 47 ہزار ٹن کچرا نالوں سے نکالا گیا ہے‘ وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی-مودی کے دورہ فرانس پر”انڈیا دہشتگرد“ کے نعرے لگ گئے جب کوئی دورہ فرانس پرتھا، ترجمان پاک فوج کا دلچسپ ٹویٹ، سینکڑوں کشمیری، پاکستانی اورسکھ کیمونٹی کے لوگوں کا ایفل ... مزید-حالیہ پولیو کیسز رپورٹ ہونے کے بعد بلوچستان میں خصوصی پولیو مہم شروع کی جا رہی ہے، راشد رزاق-آئی جی پولیس نے راولپنڈی میں شہری سے فراڈ کے واقعہ کا نو ٹس لے لیا

GB News

اعلیٰ حکام فوری طورپر محکمہ ٹورزم گلگت کو دی جانے والی رقم کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کریں، وزیر اخلاق حسین

Share Button

سکردو (بیورو چیف سے) سیاحت کے حکام جان بوجھ کر بلتستان ریجن کو نظر انداز کر رہے ہیں اور محکمہ ٹورزم کے 80فیصد بجٹ گلگت میں خرچ ہو رہا ہے بلتستان ریجن کے چاروں اضلاع کو مسلسل نظر انداز کرنے سے علاقے کے عوام میں سخت تشویش پائی جارہی ہے اعلیٰ حکام فوری طورپر محکمہ ٹورزم گلگت کو دی جانے والی رقم کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کریں یہ بات رکن کونسل وزیر اخلاق حسین نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ بلتستان ریجن کے چاروں اضلاع سیاحت کے حوالے سے انتہائی اہمیت کا حامل ہیں ان چاروں اضلاع کے سیاحتی مقامات تک جانے کےلئے روڈ کی حالت خراب ہے اور محکمہ سیاحت مسلسل بلتستان ریجن کے چاروں اضلاع کو نظر انداز کر رہا ہے ایسی طرح کھیلوں کے فروغ کےلئے بھی محکمہ ٹورزم کے پاس کافی بجٹ موجود ہے لیکن وہ اس فنڈز کو بھی مخصوص علاقے اور ڈسٹرکٹ تک محدود رکھا ہوا ہے کئی سالوں سے محکمہ ٹورزم کی جانب سے مناسب کھیلوں کےلئے فنڈز ریلیز نہ کرنے کی وجہ سے بلتستان ریجن کے کھیلوں سے وابستہ افراد میں سخت تشویش پائی جارہی ہے اور بلتستان ریجن کے اندر کھیل کا شعبہ زوال پزیر کا شکار ہے اس وقت فٹ بال ، ہاکی ، والی بال اور کرکٹ کےلئے فنڈز نہ ہونے کی وجہ سے ہمارے نوجوان نسل ان کھیلوں کے ٹورنامنٹ کرنے سے بھی قاصر ہے انہوں نے ایک بار پھر اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوری طورپر بلتستان ریجن کے اندر کھیلوں کے فروغ کےلئے فوری اقدامات کریں ٹورزم ادارے کو جاری کئے جانے والے فنڈز برابری کی بنیاد پر تقسم کیا جائے۔

Facebook Comments
Share Button