تازہ ترین

GB News

گلگت بلتستان میں مظلوم کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کے لئے ہزاروں افرادسڑکوں پرنکل آئے

Share Button

گلگت،سکردو،غذر،استور،ہنزہ،گانچھے،کھرمنگ،شگر(نمائندگان)گلگت بلتستان میں مظلوم کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کے لئے ہزاروں افرادسڑکوں پرنکل آئے۔مختلف اضلاع میں مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے پربھارت کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔مظاہرین نے پہلے کارڈاٹھارکھے تھے جن پرکشمیری عوام سے اظہاریکجہتی اور بھارت کے خلاف نعرے درج تھے۔مظلوم کشمیری عوام کے حق میں بڑی بڑی ریلیاں بھی نکالی گئیں۔ جمیعت علماءاسلام کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں مودی کی جانب سے ڈھائے جانے والے مظالم اور کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے حوالے سے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا مظاہرے میں جمیعت علماءاسلام کے صوبائی امیر مولانا عطاءاللہ شہاب، جمیعت علماءاسلام کے جنرل سیکریٹری عبدالکریم، امام جمعہ والجماعت موتی مسجد مولانا خلیل احمد قاسمی سمیت جے یو آئی کے متعدد علمائ کرام اور رہنماوں نے شرکت کی اور بھارت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی گئی۔ اس دوران خطاب کرتے ہوئے جمیعت علماءاسلام کے صوبائی امیر مولانا عطاءاللہ شہاب اور امام جمعہ والجماعت موتی مسجد مولانا خلیل احمد قاسمی نے کہا کہ مودی سرکار نے جس طرح مقبوضہ کشمیر سے آرٹیکل 370 کا خاتمہ کیا ہے اس سے بات واضح ہوتی ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں کے حقوق پر ڈاکہ ڈالا جائے گا اور ہم مودی کے اس اقدام کو مسترد کرتے ہیں اور ہم اقوام عالم سے یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ مظلوم کشمیریوں کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کے ازالے کے اقدامات اٹھائیں۔سکردو مےں مختلف سماجی،سےاسی اور مذہبی تنظےموں کی طرف سے بعد نماز ظہر رےلیاںنکالی گئیں۔رےلےو ںمےں لوگوں نے بھارتی افواج کی طر ف سے کشمےری عوام پر ڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف اور مقبوضہ کشمےری کے مظلوم عوام سے بھرپور اظہار ےکجہتی کرتے ہوئے فلک شگاف نعرے لگائے۔ریلیوں میں لوگوں کی بڑی تعدادنے شرکت کی۔اہلسنت والجماعت کے زیراہتمام بعد نماز جمعہ گاہکوچ مےں احتجاجی رےلی نکالی جس مےں عوام کی اےک کثےر تعداد نے شرکت کی رےلی مےں شامل لوگوں نے پلے کارڈ اور بےنرز اٹھارکھے تھے جن پر بھارتی جارحےت اور کشمےر کی خصوصی حیثےت ختم کےے جانے کے خلاف بھارت مردہ باد کے نعرے درج تھے احتجاجی رےلی گاہکوچ بازار سے ہوتی ہوئی ڈی سی چوک پہنچی۔رےلی سے خطاب کرتے ہوئے خطےب جامع گاہکوچ مولانا زاکرغےاث نے کہا کہ بھارت نے کشمےر کی خصوصی حیثےت کو ختم کرکے کشمےر مےں ہندوستان کی قبر کھودی ہے۔انہوں کشمےری عوام کو پےغام دےا کہ کشمےری عوامی اپنے آپ کو اکےلا نہ سمجھےں پاکستان کے عوام کشمےر کے لئے کسی قربانی سے درےخ نہےں کرےں گے۔ استور کلب علی چوک پر بعد نماز جمعہ کشمیریوں کے حق میں ایک زبردست احتجاجی جلسہ منعقد کیا گیا احتجاجی جلسے میں پاکستان زندہ بادہ ، بھارت مردہ بادہ کے شدید نعرے بازی ہوئی اس موقعے پر جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مولانا آختر نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے اندر جو آج بھارت ظلم وبربریت کررہا ہے وہ صرف کشمیری مسلمانوں پر ظلم نہیں ہے بلکہ پوری دنیا کے اندر بسنے والے مسلمانوں پر ظلم ہے ہمیں آگے بڑھ کر اپنے ان مسلمان بھایوں کی مدد کرنی ہوگی بھارتی ناپاک عزائم کو خاک میں ملانے کے لیے تمام مسلمانوں کو بلخصوص پاکستان کو اگے بڑھنے کی ضرورت ہے ۔جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق رکن گلگت بلتستان اسمبلی و سنیر نائب صدر پی پی استور مظفر علی خان ریلے نے کہا کہ مودی اب وہ دن دور نہیں جب تو پاکستان سے اپنی سلامتی کی بیک مانگے گا۔تحریک انصاف گلگت بلتستان کے سنیر رہنما وزیر سہیل احمد نے خطاب کرتے ہوئے کہا بھارتی سرکار نریندار مودی نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کرکے ایک نئی جنگ کا آغاز کیا ہے اب یہ جنگ کشمیریوں کی آزادی کے ساتھ ہی ختم ہوسکتی ہے ہم اپنے ان کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔ہنزہ میں بھی مظلوم کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کے لئے ریلی نکالی گئی،ریلی کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ کشمیر کی آزادی تک کشمیریوں کی ساتھ یک جہتی جاری رہے گی۔ ہندوستان کبھی بھی پاکستان اور کشمیر کے مسلمانوں کا خیر خواہ نہیں ہو سکتا۔ مسلمان دنیا میں جہاں کہیں بھی بستے ہے ایک جسم کی مانند ہےں آج کشمیر میں ظلم ہورہا ہے کشمیریوں کا ناحق خون بہا یا جارہا ہے ۔ دنیا بھر میں بسنے والے مسلمانو ں سے اپیل ہے کہ کشمیریوں کی حق کے لئے اپنا آواز اٹھائےں۔کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لئے ضلعی انتظامیہ کے زیر اہتمام خپلو میں ریلی اور احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں تمام مسالک کے علمائ ، سیاسی نمائندے اور شہریوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی اس موقع پر احتجاجی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے رکن کونسل سلطان علی خان اور پارلیمانی سیکرٹری میجر ر محمد امین نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ صرف پاکستان کا نہیں بلکہ امت مسلمہ کا مسئلہ ہے مقبوضہ کشمیر کے مخصوص سٹیٹس کو ختم کر کے بھارت نے اپنے ساتھ ملانے کی کوشش کی گئی ہے۔ ہم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لئے کھڑے ہوئے ہیں گلگت بلتستان کے عوام متحد ہے حکومت پاکستان ملک میں استحکام پیدا کریں ملک میں سیاسی عدم استحکام ہو گا تو اس کا نقصان ملک کو نقصان ہو گا ہم افواج کے ساتھ کھڑے ہیں ملکی حفاظت کے لئے ہر قسم کی قربانی دینے کے لئے تیار ہیں اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما آمینہ انصاری نے کہا کہ پاکستان ہمارا آن ہے اسکی حفاظت کے لئے جان دیں گے ہم عوام کی طاقت سے مقبوضہ کشمیر پر بھارتی زبردستی قبصہ چھڑا لیں گے سیاچن کے دامن میں بسنے والے بغیر وردی کے سپاہی ہے اور ہم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں کشمیریوں کی قربانی رائیگاں نہیں جائے گی اگلے سال چودہ اگست ہم کشمیریوں کے ساتھ مل کر منائیں گے۔ضلع کھرمنگ میں بھی مہدی آباد سے سرحدی علاقوں تک ریلیاں نکالی گئیںمظلوم کشمیریوں کے لئے عوام نکلے, علماء, طلبہ, سول سوسائٹی اور انتظامی افسران نے اظہار یکجہتی کیا۔قائمقام ہیڈ کوارٹر طولتی میں بعد از نماز جمعہ ریلی نکالی گئی ۔ریلے کے شرکا نے بھارت کیخلاف شدید نعرے بازی کی۔ ریلی جامع مسجد سے نکالی گئی جو مین بازار میں اختتام پذیر ہوئی۔ مھدی آباد میں بھی ریلی نکالی گئی. باب العلم کمیٹی کے ممبران بھی شریک ہوئے. جامعہ مسجد سے بازار تک ریلی کی قیادت امام جمعہ سید محمد الموسوی اور ڈپٹی کمشنر کھرمنگ عباس علی نے کی۔بارڈر ایریا کے مرکزی موضع اولڈینگ میں بعد نماز جمعہ ریلی نکلی, ریلی کے شرکاء نے کشمیری عوام پر بھارتی مظالم کے خلاف نعرے لگائے, مقبوضہ کشمیر اور کارگل لداخ کی خصوصی آئینی حیثیت کے خاتمے کو شرمناک قرار دیا. غندوس میں بھی کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لئے ریلی نکالی گئی, علماء کی قیادت میں شرکاء جامع مسجد سے بازار پہنچے, ایم ڈبلیو ایم کھرمنگ کے سربراہ شیخ اکبر رجائی نے ریلی سے خطاب میں کہا کہ بھارتی آئین سے دفعہ 35 اے اور 370 کی تنسیخ قابل مذمت ہے. کشمیر بھارت کا حصہ تھا نہ ہو گا. ہم ہر موڑ پر مظلوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں, عالمی برادری بھارتی جارحیت اور کشمیر پر قبضے کے خلاف آواز اٹھائے, خاموش تماشائی نہ بنے۔مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی اور بھارتی جارحیت کےخلاف ضلع شگر میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔مظلوم کشمیریوںسے اظہار یکجہتی اور کشمیری مظالم کیخلاف بعد نماز جمعہ جامع مسجد امامیہ شگر سے احتجاجی ریلی نکالی گئی۔ ریلی کی قیادت امام جمعہ سید طہ موسوی اور سابق ممبر ضلع کونسل حاجی وزیرفدا کررہے تھے۔ ریلی کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے امام جمعہ سید طہٰ الموسوی ،پیر نوربخشیہ سید حسن شاہ ،سابق ضلع کونسل حاجی وزیر فداعلی اور دیگرمقررین نے کہا کہ مودی سرکار کشمیریوں کے خلاف ظلم کا سلسلہ بند کرے۔ ہندوستان کشمیریوں کے خود ارادیت کااحترام کرے۔مقررین نے اسلامی اتحادی افواج اور عالم اسلام کی بے حسی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کہاں ہے وہ اسلامی اتحادی افواج کہاں ہے عالم اسلام ، آج کشمیر جل رہا ہے۔مقررین نے اس عزم کا اظہار کیا کہ اگر ضرورت پڑے تو شگر کے عوام پاک فوج کے شانہ بشانہ بارڈر پر لڑنے کیلئے تیارہیں۔

Facebook Comments
Share Button