تازہ ترین

GB News

لینڈ ریفارم کمیشن تیزی سے اپنا کام کررہاہے ،خطے میں موجود زمینوں کا20 فیصد سرکاری مقاصد کیلئے مختص کردیا جائیگا ، اکبر تابان

Share Button

سکردو(محمد اسحاق جلال) قائم مقام وزیراعلی گلگت بلتستان حاجی محمد اکبر تابان نے کہاہے کہ لینڈ ریفارم کمیشن تیزی سے اپنا کام کررہاہے کمیشن کے ارکان نے تمام اضلاع میں جاکر مختلف وفود سے ملاقاتیں کی ہیں اور وفود کی تجاویز کی روشنی میں رپورٹ سفارشات مرتب کی جارہی ہیں تمام اضلاع کے عوام کے خدشات اور تحفظات دور کردئیے گئے ہیں خطے میں موجود زمینوں کا20 فیصد سرکاری مقاصد کیلئے مختص کردیا جائیگا باقی80 فیصد زمینیں لوگوں میں برابری کی بنیاد پر تقسیم کی جائیں گی پہلے فیصلہ ہوا تھا کہ30 فیصد زمین سرکار اپنے پاس رکھے گی مگر عوامی تحفظات سامنے آنے کے بعد 20 فیصد سرکاری مقاصد کیلئے مختص کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے20 فیصد زمین دینے پر عوام رضامند ہوگئے ہیں سکردو میں پریس بریفنگ دیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہم عوام کے حقوق کا ہر لحاظ سے تحفظ کریں گے انہیں مالکانہ حقوق دئیے جائیں گے لینڈ ریفارم کمیشن سے عوام کو بہت فائدے ہونگے20 فیصد زمینوں پر تعلیمی ادارے صحت کے مراکز قائم کئے جائیں گے جس سے لوگوں کو فائدہ ہوگا زمین نہیں ہوگی تو عوامی فلاح کے منصوبے کہاں تعمیر ہونگے لوگ رضاکارانہ طورپر زمین سرکارکودینے کیلئے تیار ہوگئے ہیں جو ایک خوش آئند بات ہے چھومک تھنگ پربلتستان یونیورسٹی کیلئے1500 کنال زمین الاٹ کردی گئی ہیں اسی طرح دیگر قومی منصوبوں کیلئے بھی زمین دی جائیں گی انہوں نے کہاکہ سرفہ رنگا ڈیزرٹ ریلی بین الاقومی شہرت کی حامل ہوگئی ہے اس نے تین سال میں بین الاقوامی سطح پر پذیرائی حاصل کی ہے ریلی سے علاقے میں معاشی انقلاب برپا ہوگا ریلی سے متعلق عوام کے تحفظات دور کردئیے گئے ہیں سوشل میڈیا کے ذریع ریلی کے خلاف کئے گئے منفی پروپیگنڈے ناکام ہوگئے بلتستان کے عوام ریلی کو کامیاب دیکھنا چاہتے ہیں سرفہ رنگا ریلی کے مختلف حصے ہونگے میفنگ,پولو میچ, کلچرل شو اور دیگر رنگا رنگ پروگرامز بھی ریلی کا حصہ ہیں تیسری دفعہ ہم کامیاب ریلی کا انعقاد کرنے جارہے ہیں جو ہمارے لئے باعث فخر اور اعزاز ہے ہماری حکومت علاقے کی تعمیر وترقی کے لیئے بہت کچھ کرنا چاہتی ہے عوام ہمارا ساتھ دیں گے۔

Facebook Comments
Share Button