تازہ ترین

GB News

پاکستان اور بھارت کو مسئلہ کشمیر مل کر حل کرنا ہوگا،ٹرمپ

Share Button

پیرس(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان کی پیٹھ میں چھراگھونپتے ہوئے ثالثی پیشکش پر یوٹر ن لے لیا ہے اور مودی کے ساتھ ملاقات کے بعد کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کو مسئلہ کشمیر مل کر حل کرنا ہوگا تاہم اگر مدد کی ضروت ہو تو ہم موجود ہیں، تفصیلات کے مطابق فرانس کے شہر بیارٹز میں جاری جی سیون ممالک کے اجلاس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کیساتھ اہم ملاقات ہوئی جس میں انہوں نے مسئلہ کشمیر پر بات کی۔ملاقات کے بعد گفتگو کرتے ہوئے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ انڈین وزیراعظم مودی سے کشمیر کے معاملے پر بات چیت ہوئی ہے۔ بھارتی وزیراعظم نے کہا وہ پاکستانی ہم منصب سے کشمیر پر بات کریں گے اور دونوں بہتر نتیجے پر پہنچیں گے، کیونکہ دونوں ممالک اپنے طور پر مسئلہ حل کرسکتے ہیں۔صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ اگر معاملہ باہمی ہے تو پہلے سے حل ہو جانا چاہیے تھا۔ پاکستان اور بھارت کو مسئلہ کشمیر مل کر حل کرنا ہوگا۔امریکی صدر نے اپنی ملاقات کے بارے میں بتایا کہ بھارتی وزیر اعظم نے ان سے کہا ہے کہ کشمیر میں صورتحال ہمارے کنٹرول میں ہے،اس موقع پر نریندر مودی نے صحافیوں سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم دونوں کو بات کرنے دیجئے، جب آپ لوگوں کی ضرورت پڑے گی تو آپ کو ضرور بتائیں گے۔گجرات کے قصائی مودی نے ڈھٹائی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہا کہ بھارت اور پاکستان کے تمام مسائل دو طرفہ ہیں۔ ہم دنیا کے کسی بھی ملک کو اس لئے زحمت نہیں دیتے۔انڈین وزیراعظم نے کشمیر میں جاری مظالم کے خاتمے پر کوئی بات نہیں کی لیکن جھوٹ کا سہارا لیتے ہوئے راگ الاپنا شروع کر دیا کہ انہوں نے امریکی صدر سے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت نے غربت اور بیماری کیخلاف لڑنا ہے۔ انہوں نے پاکستان کے وزیراعظم کو بھی یہ پیغام دیا ہے کہ دونوں ممالک غربت کیخلاف لڑیں اور عوام کی فلاح کیلئے کام کریں۔انہوں نے مزید کہا کہ بھارت اور پاکستان 1947 سے قبل ایک ساتھ تھے، تاہم امید ہے کہ ہم ساتھ بیٹھ کر اپنے تمام مسائل حل کرسکتے ہیں۔ملاقات کے بعد سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ترجمان وائٹ ہائوس نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ سے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے ملاقات کی ہے جس میں امریکی صدر نے دونوں ملکوں کے درمیان کشیدگی میں مذاکرات کی ضرورت پر زوردیاہے ،ٹویٹ میں اس بات کا کوئی ذکر نہیں کہ ٹرمپ نے ثالثی کے حوالے سے مودی کے ساتھ کوئی بات کی ہو۔

Facebook Comments
Share Button