تازہ ترین

GB News

ہسپتالوں کی نجکاری نہیں ہورہی، ڈاکٹروں کی کارکردگی کا آڈٹ ہوگا، فردوس عاشق

Share Button

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کوئی ہسپتال پرائیویٹائز نہیں کیا جا رہا، پنجاب کا شعبہ صحت میں اصلاحات کا آرڈیننس لے کر آئے ہیں، حکومت کے صحت کے شعبے میں عام آدمی کو تمام سہولتیں فراہم کرنا ترجیح ہے، پنجاب حکومت کی ایک سالہ کارکردگی عوام تک پہنچائی جائے گی،ہسپتالوں میں مشینوں کی خرابی کی صورت میں متعلقہ بورڈ فوری فیصلہ کرے گا،آج سے پہلے کبھی ہسپتالوں اور ڈاکٹرز کا آڈٹ پرفارمنس نہیں ہوا، اپنی ذمہ داریاں ادا نہ کرنے والوں کے خلاف کاروائی کی جائے گی۔ہفتہ کو صوبائی وزیر صحت یاسمین راشد اور صوبائی وزیر میاں اسلم اقبال کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ملک میں اصلاحات حکومت کے منشور میں شامل ہے، سماجی، معاشی اور تمام شعبوں میں اصلاحات لانا ترجیح ہے، وزیراعظم کے ویژن کے مطابق پنجاب میں بھی مختلف اصلاحات کی گئی ہیں، پنجاب حکومت کی ایک سالہ کارکردگی عوام تک پہنچائی جائے گی، حکومت پنجاب عام آدمی کی بہتر ی کےلئے اقدامات کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کو پہلے سے ترقی دیں گے، اکیڈمکس اور سروسز کو علیحدہ کر دیا ہے، اب ہر شخص اکاﺅنٹ ایبل ہو گا اب ڈاکٹر پابند ہو گا کہ بتائے کتنے مریض اور کس نوعیت کے مریضوں کا علاج کیا ہے اور ہسپتال کی انتظامیہ کے بارے میں بھی مریضوں سے رائے کے مطابق ان کی کارکردگی کی جانچ ہو گی۔ اس موقع پر وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ ایک ہسپتال میں سالانہ ایک بیڈ پر 45 لاکھ خرچ ہوتا ہے لیکن اگر اس کا فائدہ مریض کو نہیں پہنچ رہا ہے تو اس کا مطلب ہے کہ مینجمنٹ خراب ہے، موجودہ ایکٹ کے تحت ہسپتالوں کے نظام کی بہتری کےلئے باقاعدہ ایک کمیٹی بنائی جائے گی۔

Facebook Comments
Share Button