تازہ ترین

GB News

پاکستان ،چین افغانستان پانچ نکاتی معاہدے پر متفق

Share Button

پاکستان ، چین اور افغانستان کے درمیان پانچ نکاتی معاہدہ اور آئندہ سہ فریقی مذاکرات بیجنگ میں کرنے پراتفاق ہواہے جبکہ وزیر خارجہ شاہ محمودقریشی نے کہاہے کہ امریکاطالبان مذاکرات کے اگلے مرحلے کا انٹراڈائیلاگ افغانستان میں ہوگا، افغانستان اورپاکستان کو ایک دوسرے کی ضرورت ہے، آنےوالے دنوں میں پاکستان اور افغانستان کے تعلقات مضبوط ہونگے، خطے میں دہشت گردی کا خاتمہ کرنے کے لیے پاکستان نے دہشتگردوں کے خلاف سنجیدہ کارروائی کی اور اس میں کامیابی بھی ہوئی، چینی وزیر خارجہ نے کہاکہ ،چین اور پاکستان افغان طالبان اورافغان حکومت کے درمیان مذاکرات کے خواہاں ہیں ،تینوں ملکوں کے درمیان 5نکاتی معاہدہ پر اتفاق رائے ہو ا ہے ،امن اورمفاہمت کاواحدذریعہ افغانستان میں افغانوں کی قیادت میں افغان حکومت کاقیام ہے ۔ ہفتے کو سہ فریقی مذاکرات کے بعد پاکستان،چین اور افغانستان کے وزرائے خارجہ نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کیا وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خطے میں استحکام کے لیے افغان امن عمل ناگزیر ہے۔افغان صدراشرف غنی سے اوآئی سی سربراہ اجلاس کی سائیڈ لائن میں مفیدبات چیت ہوئی تھی ،ہم طورخم بارڈرر کی 24گھنٹے سروس کی افتتاحی تقریب میں اشرف غنی کوشرکت کی دعوت دیتے ہیں۔اس موقع پر چینی وزیر خارجہ وانگ ژی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چین کے دوست ملک پاکستان کی میزبانی میں سہ فریقی مذاکرات ہوئے اجلاس کے انعقاد اور بہترین میزبانی پر پاکستان کے شکرگزار ہیں،چین اورپاکستان پڑوسی ملک افغانستان میں امن مذاکرات کیلئے پرامید ہیں ، پاکستان اورافغانستان کے درمیان تعلقات امن و استحکام کے لیے اہم ہیں، افغانستان میں صورتحال اس وقت نازک دور میں ہے ،چین،پاکستان افغان طالبان اورافغان حکومت کے درمیان مذاکرات کے خواہاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ،تینوں ملکوں کے درمیان 5نکاتی معاہد ہ پر اتفاق رائے ہو ا ہے جس میں ثقافتی وفود تبادلوں،سفارتی تربیت، انسداد دہشتگردی اورسیکیورٹی تعاون،اینٹی نارکوٹس سمیت دیگر شعبوں میں تعاون پراتفاق ہوا، امن و امان کے لیے علاقائی رابطوں کا ہونا ضروری ہے، ہم نے انسداد دہشت گردی کے لیے تعاون کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔چینی وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکا طالبان کے درمیان مذاکرات میں مثبت پیش رفت ہورہی ہے۔افغان وزیر خارجہ نے کہا کہ امن کے لئے پاکستان،چین کے وزرائے خارجہ کی کوششوں کاخیرمقدم کرتے ہیں، امید کرتے ہیں امن واستحکام کے لئے سہ فریقی مذاکرات جاری رہیں گے،امیدہے پاکستان کے ٹھوس اقدامات سے افغانستان میں پرتشددواقعات میں کمی ہوگی،طالبان کو بھی امن مذاکرات میں خلوص کا مظاہرہ کرنا ہوگا ۔قبل ازیں پاکستان اور افغانستان نے سیکورٹی،انسداد دہشت گردی سمیت باہمی دلچسپی کے شعبوں میں مشترکہ کاوشیں جاری رکھنے پر اتفاق کیا،وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان کے مابین دیرینہ مذہبی، سیاسی ، ثقافتی تعلقات ہیں ،خطے میں امن و استحکام کے لیے پر امن افغانستان ناگزیر ہے۔ وزیر اعظم عمران خان خطے کے تمام ہمسایہ ممالک بشمول افغانستان کے ساتھ گہرے تعلقات استوار کرنے کے خواہاں ہیں۔شاہ محمودسے چینی ہم منصب نے بھی ملاقات کی اورخطے میںقیام امن کے لئے مل کرکام کرنے اورروابط کوفروغ دینے پراتفاق کیا۔

Facebook Comments
Share Button