تازہ ترین

Marquee xml rss feed

چونیاں واقعہ:وزیراعلیٰ کا ملزمان کی نشاندہی کرنیوالےکونقد انعام دینےکا اعلان جوبھی ملزمان کی نشاندہی کرے گا اس کو 50 لاکھ روپے انعام دیا جائے گا، معطل افسران کی پوسٹنگ ... مزید-تبدیلی کے نام نہاد دعویداروں نے کینسر کے مریضوں کی دوائیاںبند کردی‘پرویز ملک کینسر کی دوائی نہ ملنے کیوجہ سے مرنیوالے 4 مریضوں کے قتل کا مقدمہ وزیر صحت کیخلاف درج کیا ... مزید-آئی جی پنجاب سے کینیڈین ہائی کمیشن کے تین رکنی وفد کی سنٹرل پولیس آفس میں ملاقات دوران ملاقات منشیات فروشوں کے نیٹ ورک کے خلاف آپریشنز کیلئے انفارمیشن شیئرنگ کو مزید ... مزید-آئی جی سندھ سے چین کے قونصل جنرل کی ملاقات ، سیکیورٹی اقدامات سمیت باہمی دلچسپی کے امورپرتفصیلی تبادلہ خیال-اثاثہ جات کیس، خورشید شاہ کو پولی کلینک ہسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا-مہنگائی کی صورتحال آئندہ دو سال تک ایسی ہی رہے گی، ڈپٹی گور نر اسٹیٹ بینک-وزیراعلی سندھ کا پوری صفائی کا کام دستاویزی طریقے سے کرنے کا حکم ہر ضلع صاف کرکے ڈی ایم سی کے حوالے کرنا ہے ، ڈیم ایم سی کو چاہیے پھر صفائی کو برقرار رکھیں،مراد علی شاہ ... مزید-Careem اور MicroEnsure کے باہمی اشتراک سے انشورنس ایپ متعارف کروا دی گئی کریم اور MicroEnsure کے اشتراک سے کریم ایپ کے تمام صارفین (بشمول کریم کپتان اور مسافر) کے لیے ایسی سہولیات متعارف ... مزید-سوشل میڈیا پر اپنے خاوند کے خلاف شکایت کرنے والی فیشن بلاگر آمنہ عتیق اگلے ہی روز مردہ حالت میں پائی گئی آمنہ عتیق نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بُک پر اپنے شوہر کے ناروا ... مزید-حکومت اورعوام کو تیل اورگیس کے ذخائرکی بڑی خوشخبرمل گئی گولارچی میں خام تیل اورگیس کے 2 بڑے ذخائردریافت، تیل اورگیس کے ذخائرکی تعداد 8 ہوگئی، علاقے میں تیل اور گیس کے ... مزید

GB News

گلگت بلتستان میں عاشورہ محرم انتہائی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا

Share Button

گلگت، سکردو،استور، گانچھے، غذر ، ہنزہ ، کھرمنگ، شگر(نمائندگان)دنیا بھر کی طرح گلگت بلتستان کے تمام اضلاع میں عاشورہ محرم انتہائی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا، گلگت میں مرکزی جلوس امامیہ جامع مسجد سے برآمد ہوا، مرکزی جلوس میں علم، ذوالجناح کے26 ماتمی دستے شامل تھے، ہزاروں عزاداروں نے مومن بازار میں نماز ظہرین ادا کی جس کے بعد جلوس ہسپتال چوک، سول سیکرٹریٹ اور خزانہ روڈ سے ہوتا ہوا نماز مغربین کے وقت واپس جامع مسجد پہنچ کر اختتام پذیر ہوا۔ عاشورا کے مرکزی جلوس کی سکیورٹی کیلئے پولیس، رینجرز اور جی بی سکائوٹس کے 15سو سے زائد اہلکار تعینات رہے۔ جلوس کے مرکزی گزرگاہوں پر واک تھرو گیٹ کے ذریعے گزارا گیا۔ مختلف سیاسی و مذہبی جماعتوںکی جانب سے دودھ، شربت اور پانی کی سبیلیں لگائی گئیں، جلوس عزاء میں اہل سنت اور اسماعیلی برادری کے عمائدین اور دیگر لوگوں کی کثیر تعداد نے بھی شرکت کی۔ پاک فوج کی جانب سے ہیلی کاپٹر کے ذریعے سکیورٹی کی نگرانی کی جاتی رہی۔ بلتستان بھر میں 300 سے زائد علم تعزیے شبیہ اور ذوالجناح کے چھوٹے بڑے ماتمی جلوس نکالے گئے جن میں لاکھوں عزاداران امام مظلوم نے شرکت کی اور شہدائے کربلا کی لازوال قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کیا کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کیلئے سکیورٹی کے غیر معمولی انتظامات کئے گئے تھے جلوسوں کی گذرگاہوں کو ہر طرف سے سیل کیا گیا تھا صرف عزاداروں کو ہی جلوسوں کے روٹس پر جانیکی اجازت دی گئی سکردو میں مرکزی جلوس جامع مسجد امامیہ سکردو سے برآمد ہوا دوسرے ماتمی جلوس بھی اس شریک ہوتے رہے ہزاروں عزاداروں نے حسینی چوک پر زنجیر زنی کی اور حضرت زہرا کو ان کے لال کا پرسہ دیا سکردو کے مختلف مقامات سے برآمد ہونے والے تمام ماتمی جلوس اپنے روایتی راستوں سے ہوتے ہوئے قتلگاہ شریف پہنچے اور زیارت شہدائے کی زیارات کے بعد واپس اپنی اپنی امام بارگاہوں میں پہنچ کر شام غریباں کی مجالس برپا کیں اور گریہ کیا مجالس شام غریباں کے بعد تمام ماتمی جلوس پرامن طورپر اختتام پذیر ہوئے ضلع گانچھے میں بھی عاشورہ کے موقع پر درجنوں ماتمی جلوس برآمد ہوئے خپلو میں مرکزی جلوس امام بارگاہ فاطمہ الزہرا چقچن سے برآمد ہوا اور روایتی راستوں سے ہوتے ہوئے ملدومر مسجد پر اختتام پذیر ہوا۔اس موقع پر سیکورٹی کے غیر معمولی اقدامات کئے گئے تھے ۔ ہنزہ میں یوم عاشور کی مرکزی جلوس امامیہ کمپلیکس گنش ہنزہ سے برآمد ہو کر مسجد علی علی آباد میں اختتام پزیر ہوگیا جبکہ دوسری جا نب مرکزی جلوس امام بارگاہ مرتضیٰ آباد سے برآمد ہو کر فرمان آباد چوک پر اختتام ہوگیا۔ غذر میں بھی ماتمی جلوس اپنے مقررہ راستوں سے ہوتے ہوئے اپنی منزل پر پہنچ کر اختتام پذیر ہوئے عقیدت مندوں نے رسول ۖ کے نواسے حضرت امام حسین کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کیا اور علمائے کرام نے امام عالی مقام کی زندگی پر روشنی ڈالی۔ ضلع استور میں تیس چھوٹے بڑے مقامات سے ماتمی جلوس برآمد ہوئے جو کہ اپنے مقررہ روایتی راستوں سے ہوتے ہوئے مرکزی امامیہ مسجد پہنچے جہاں پرامام جمعہ وجماعت سید عاشق حسین الحسینی نے اعزادوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا آج کا دن ہمیں واقعہ کربلا کی یاد دلاتا ہے حضرات امام حسین نے دین اسلام کی سر بلندی اور دین اسلام کی بقاء کے لیے اپنا سب کچھ قربان کیا یہاں تک کہ اپنے چھے ماہ کے بچے کو بھی قربان کیا دین اسلام کو موجود دور میں اندورنی اور بیرونی خطرات لاحق ہیں ہمیں دین اسلام کی بقاء کے لیے ایک ہونا ہوگا۔

Facebook Comments
Share Button