تازہ ترین

GB News

نیٹکوکی تینوں ورکرزتنظیموں نے ایک ماہ کے اندرمطالبات منظورنہ کرنے کی صورت میں پہیہ جام ہڑتال کرنے کاانتباہ کردیا

Share Button

اسلام آباد(محمداسحاق جلال)ناردرن ایریازٹرانسپورٹ کارپوریشن(نیٹکو)کی تینوں ورکرزتنظیموں نے ایک ماہ کے اندرمطالبات منظورنہ کرنے کی صورت میں پہیہ جام ہڑتال کرنے کاانتباہ کردیا ہے۔نیٹکو وزکرزیونین،نیٹکو ایمپلائزیونین اورنیٹکو ایمپلائزایسوسی ایشن نے ادارے کے قائم مقام ایم ڈی سلیم راجپوت کوچارٹرآف ڈیمانڈپیش کیا ہے جس میں کہاگیا کہ چونکہ نیٹکو گلگت بلتستان کاایک بہت بڑاقومی ادارہ ہے۔اس قومی ادارے کوبحران سے نکالنے کے لئے موثرحکمت عملی بنانے کی ضرورت ہے قانون سازی کے ذریعے نیٹکو اوراس کے تمام ملازمین کوقانونی تحفظ فراہم کرنانہایت ضروری ہے تاکہ اس اہم قومی ادارے کوبعض لوگوں کے ذاتی مفادات کی بھینٹ چڑھنے سے بچایاجاسکے۔ملازمین میں بڑی بے چینی پائی جارہی ہے ان میں ملازمت کے حوالے سے عدم تحفظ کااحساس بڑھتاجارہاہے چارٹرآف ڈیمانڈمیںبتایاگیا ہے کہ15سال سے نیٹکو کے سفری بیڑے میں کوئی نئی بس شامل نہیں کی گئی ہے جوبسیں موجود ہیں وہ کھٹارہ ہوگئی ہیں جلدنئی خریدی کی جائے تاکہ مسافروں کودرپیش مشکلات دورکی جاسکیں۔نئی بسیں خریدی نہ گئیں اورتوجہ نہ دی گئی تونیٹکو کی ساکھ بری طرح سے مجروح ہوگی۔بسیں پرانی ہونے کی وجہ سے مسافرنیٹکو میںسفرسے گریزاں ہیں۔سفری بیڑے میں50نئی بسیں شامل کی جائیں۔2015تک نیٹکو منافع بخش ادارہ تھا اب یہ زبوں حالی کاشکار ہے ۔زبوں حالی کے اسباب تلاش کرنے کے لئے بڑی سطح پرکمیٹی بنانا ہوگی اور ذمہ داروں کاتعین کرکے سخت سے سخت سزادیناہوگی۔ملک بھر کے سرکاری اداروں میںکلریکل سٹاف کی اپ گریڈیشن ہوگئی ہے لیکن نیٹکو کے ملازمین تاحال اس حق سے محروم ہیں لہذانیٹکو کے ملازمین کی اپ گریڈیشن کامسئلہ فوری حل کیاجائے۔چارٹرآف ڈیمانڈمیں بتایاگیا ہے کہ نیٹکو کے بہت سارے ملازمین عارضی بنیادوں پرخدمات انجام دے رہے ہیں عارضی ملازمین فی الفورمستقل کئے جائیں حادثات کے اوقات میں ڈرائیور کوتھانہ کچہری کی جھنجھٹ سے نجات دلائیں اور کمیشن بڑھایاجائے۔نیٹکو کے تمام چھوٹے ملازمین کومیڈیکل الائونس دیئے جائیں۔فوری طورپرمستقل ایم ڈی کی تقرری عمل میں لائی جائے کسی ایمانداردیانتداراوراہل شخص کوایم ڈی تعینات کرکے نیٹکو کوبڑی تباہی سے بچایاجاسکتا ہے۔2005سے2009 تک ملازمین کوخصوصی الائونسزدیئے جائیں الائوئنسزکی مدمیں وفاق نے صوبے کوادائیگی بھی کردی ہے چارٹرآف ڈیمانڈمیں بتایاگیا ہے کہ منظورنظرشخص کوفائدہ پہنچانے کے لئے گاڑیوں کی مینٹیننس کاٹھیکہ غیرقانونی طورپردیاگیا ہے جس سے ادارے کوناقابل تلافی نقصان پہنچا۔مرمت کے نام پر نیٹکو کی آدھی سے زیادہ بسیں کئی ماہ سے ورکشاپ میںکھڑی ہیں۔نیٹکو میں سفرکرنے والے مسافروں سے10روپے انشورنس کی مدمیں وصول کئے جاتے ہیں مگرکسی انشورنس کمپنی سے رجسٹرڈنہیں ہے۔اسٹیٹ لائن پنشن سکیم کے ساتھ رجسٹرڈکیاجائے ملازمین کے لئے حج پالیسی بحال کی جائے اور انہیں ویدرالائونس فراہم کیاجائے۔حکومت ملازمین کی سروس سٹریکچرمیں اضافے کااعلان کیاگیاتھا عملدرآمد نہیں ہوا۔بصورت دیگرملازمین4ہفتے کے بعدپہیہ جام ہڑتال اوراحتجاج کریں گے صورت حال کی ذمہ داری نیٹکو کی انتظامیہ ہوگی۔

Facebook Comments
Share Button