تازہ ترین

GB News

سکردو میں جدید ہسپتال بنا رہے ہیں، افضل شگری

Share Button

سکردو(چیف رپورٹر)معرفی فائونڈیشن کے لائف ٹرسٹی و سابق انسپکٹر جنرل آف پولیس افضل علی شگری نے کہاہے کہ سکردو میں ایک ارب روپے کی لاگت سے جدید طرز کا ہسپتال بنایا جارہا ہے جس میں صحت کی تمام بنیادی سہولتیں دستیاب ہونگی خواتین اور بچوں کے فوری علاج پر خصوصی توجہ دی جائیگی علاج فری نہیں ہوگا مریضوں سے معقول فیسیں لی جائیں گی البتہ جومریض مستحق اور ضرورت مند ہونگے ان کے علاج کے اخراجات معرفی فائونڈیشن خود برداشت کرے گی بیت المال سے مدد لی جائیگی سکردو میں معرفی فائونڈیشن کے تحت زیر تعمیر100 بیڈ ہسپتال کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہسپتال سے جو آمدنی حاصل ہوگی اس کا ایک فیصد ویلفئر فنڈ میں جمع ہوگا ویلفیئر فنڈ صرف مستحق اور ضرورت مند افراد کیلئے قائم کیاگیا ہے زیادہ ضرورت مند افراد کے علاج ومعالجے کے سارے اخراجات معرفی فاونڈیشن برداشت کریگا سفید پوش قسم کے لوگوں کے علاج ومعالجے کی 50 فیصد فیسیں بھی ہم ہسپتال کو ادا کریں گے کسی صورت میں ہسپتال کے اوپر کوئی بوجھ نہیں ڈالیں گے فیسیں نہ لی گئیں تو ہسپتال نہیں چلے گا ہسپتال بنانا بہت آسان ہے لیکن اس کو چلانا بہت مشکل ہے اس لیئے فیصلہ ہوگیا ہے کہ مریضوں سے معقول فیسیں وصول کی جائیں گی انہوں نے کہاکہ سو بیڈ کا ہسپتال جدید سہولتوں سے مزین ہوگا جدید قسم کی ڈائگنوسٹک لیبارٹری بھی بنائی جارہی ہے اس میں تمام ٹیسٹ بھی ہونگے صحت کی سہولتیں فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے امید ہے کہ وہ اس سلسلے میں ہماری مدد بھی کرے گی خواتین اور بچوں کا علاج بہت بڑا مسئلہ ہے اس لیئے ہماری کوشش ہے کہ خواتین اور بچوں کے علاج ومعالجے پر خصوصی اور ترجیحی بنیادوں پر توجہ دی جائے انہوں نے کہاکہ ہسپتال بننے کے بعد ماہر ڈاکٹرز یہاں آئیں گے اور مقامی لوگوں کو صحت کی سہولتیں فراہم کریں گے ہسپتال میں صحت کی تمام بنیادی سہولتیں دستیاب ہونگی پلاسٹک سرجری پہلے یہاں ممکن نہیں تھی اب اس کو ممکن بنایا جارہا ہے جو ایک بہت بڑی کامیابی ہے مختلف پیچیدہ امراض کی تشخیص نہ ہونے کی وجہ سے مقامی لوگوں کو بڑے مسائل کا سامنا تھا اب انکی دہلیز تمام امراض کی تشخیص ہوگی جس سے یہاں کے مریضوں کو درپیش مشکلات دور ہونگی بریفنگ کے دوران معرفی ہسپتال کے پراجیکٹ ڈائریکٹر ریجنل جنرل منیجر سمیت تمام ذمہ داران بھی موجود تھے جنہوں نے میڈیا کو ہسپتال کے مختلف شعبوں کا دورہ بھی کرایا۔

Facebook Comments
Share Button