تازہ ترین

Marquee xml rss feed

من� کی بجائے ناکمیں دانت نکل آیا ی� انوکھا واقع� چین میں پیش آیا ج�اں آپریشن کرکے ناک سے دانت کو نکال دیاگیا-سپیشل ایجنٹ بلی جو ساتھیوں کو �رار کروانے میں ما�ر �ے 6سال� بلی راستے میں آنے والی �ر رکاوٹ کو آسانی سے پار کر جاتی-آپ کے �نگر پرنٹ اب منشیات سے متعلق بھی بتائیں گے منشیات کی روک تھام کے لیے سائنسدانوں نے نیا �ارمولا ایجاد کرلیا-پیٹرول کی قیمت میں اضا�ے کے خلا� احتجاج میں40 لوگ جاں بحق ایران میں احتجاج کی صورت حال دن ب� دن بگڑتی جا ر�ی �ے-ٹک ٹاک نے امریک� کو چاروں شانے چت کر ڈالا تحقیقاتی کمپنی نے ٹک ٹاک پر امریک� کے الزامات کو بے بنیاد قرار دے دیا-ب�ادر شخص نے مگرمچھ کو اندھا کر کے خود کو موت کے من� سے نکال لیا آخری لمحے تک مگرمچھ کامقابل� کر کے زندگی جیتنے والے شخص نے ب�ادری کی مثال قائم کر دی-موٹروے پر بس حادثے کا شکار �و گئی 3 خواتین جاں بحق ،10ا�راد زخمی

GB News

حکومت کا نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا اصولی فیصلہ

Share Button

لاہور(آئی این پی ،مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت نے نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا اصولی فیصلہ کر لیا۔ 48گھنٹے میں نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکال دیا جائے گا،سابق وزیراعظم کی لندن روانگی آئندہ ہفتے متوقع ہے۔شہبازشریف اور مریم نواز بھی نوازشریف کے ہمراہ لندن جائیں گے،لندن میں اسحٰق ڈار نے نوازشریف کے علاج کے لئے انتظامات کرلئے ہیں ،مریم نواز نے بھی نوازشریف کے بیرون ملک جانے کے حوالے سے دوٹوک الفاظ میں کہہ دیا ہے کہ علاج کے لئے میاں صاحب کو فوراً بیرون ملک بھیجنا چاہئے،نوازشریف بیرون ملک جائیں اور میں نہ جائوں بہت مشکل ہے، انہیں ملازمین اور نرسوں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتی،ڈیل کی باتیں کرنے والوں کو شرم آنی چاہئے، 24 گھنٹے ان کے ساتھ ہوتی ہوں،تفصیلات کے مطابق جمعہ کو سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے لیے وزارت داخلہ میں درخواست جمع کرادی گئی ، درخواست بیماری اور ملک سے باہرعلاج کرانے کی بنیاد پر دی گئی ۔ درخواست شہبازشریف کی جانب سے جمع کرائی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف علاج کے لیے ملک سے باہر جانا چاہتے ہیں۔ شہباز شریف کی جانب سے جمع کرائی گئی درخواست سیکرٹری داخلہ کو موصول ہونے کے بعد وزارت داخلہ کے حکام نے درخواست کا قانونی پہلوؤں سے جائزہ لیا ، نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ وزارت داخلہ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے لیے نیب سے رابطہ کیا ہے، اس حوالے سے نیب اور محکمہ داخلہ میں طبی بنیادوں پر ای سی ایل سے نکالنے کے لیے مشاورت جاری ہے او رحکومت نے فیصلہ کرلیا ہے کہ نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکال دیا جائے 48گھنٹے میں اس حوالے سے ٹھوس پیشرفت سامنے آنے کا امکان ہے ،نجی ٹی وی کا کہنا ہے کہ نوازشریف کے ساتھ ، شہباز شریف اورمریم نوازکے لندن جانے کا امکان ہے نوازشریف کے علاج کے لئے اسحاق ڈار نے لندن میں انتظامات مکمل کرلئے ہیں۔نوازشریف کو علاج کے لئے بیرون ملک بھیجنے کا فیصلہ شریف خاندان اور(ن) لیگی رہنماؤںکے اہم اجلاس میں ہوا جس میں فیصلہ کیا گیا بیرون ملک علاج کے لئے پنجاب حکومت کو بھی آگاہ کیا جائے گا۔رپورٹ کے مطابق مریم نوازکا بھی نوازشریف کے ہمراہ بیرون ملک روانہ ہونے کا امکان ہے۔ مریم نوازکے پاسپورٹ کی واپسی کے لئے درخواست عدالت کے روبرو جمع کروائی جائے گی۔ وہ اپنے والد کی دیکھ بھال کے لئے بیرون ملک ہی قیام کریں گی۔نجی ٹی وی کا کہنا ہے کہ نواز شریف کے معالج ڈاکٹرعدنان نے بھی بیرون ملک علاج کے لئے جانے کا مشورہ دیا اور شریف خاندان کوبریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ نوازشریف کی طبیعت سے متعلق رپورٹس ٹھیک نہیں۔جس پر والدہ شمیم اختر نے نوازشریف سے کہا کہ بیرون ملک علاج کروایا جائے جب کہ شہبازشریف نے کہا کہ آپ کی صحت کے حوالے سے بہت فکر مند ہیں، علاج کروانا بہت ضروری ہے جس کے بعد نوازشریف نے بیرون ملک علاج کرانے پر آمادگی کا اظہار کیا جس کے بعد شہبازشریف نے نام ای سی ایل سے نکالنے کے لئے درخواست جمع کرائی،واضح رہے کہ نیب کی درخواست پر نوازشریف کا نام ای سی ایل میں ڈالا گیا تھا اس لئے حکومت نام ای سی ایل سے نکالنے کے لئے نیب سے مشاورت کررہی ہے تاہم حکومت سطح پر فیصلہ کرلیا گیا ہے کہ سابق وزیراعظم کو علاج کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت دیدی جائے گی دوسری جانب لاہو رمیں احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف کی طبیعت بہت زیادہ خراب ہے، انہیں علاج کے لیے فورا باہر بھیجنا چاہیے،شہباز شریف نواز شریف کے علاج کے لیے تمام تیاریاں کر رہے ہیں، صحت پہلے اور سیاست بعد میں ہے۔ نواز شریف کا علاج دنیا میں جہاں سے ممکن ہے وہاں جانا چاہیے، میاں صاحب علاج کیلئے رضامند ہوئے یا نہیں یہ علیحدہ بحث ہے، ان کی طبیعت بہت زیادہ خراب ہے، انہیں علاج کے لیے فورا باہر بھیجنا چاہیے۔ انہوں نے کہا ان کے پلیٹ لیٹس ادویات سے بھی بہتر نہیں ہو رہے، نواز شریف کے پلیٹ لیٹس گزشتہ روز بھی گر گئے، ان کی بیماری کی تشخیص نہیں ہو رہی، سیاست چلتی رہے گی، والدین دوبارہ نہیں ملتے، بڑی مشکل سے آج عدالت پیش ہوئی۔ انہوں نے کہا شہباز شریف نواز شریف کے علاج کے لیے تمام تیاریاں کر رہے ہیں، صحت پہلے اور سیاست بعد میں ہے،ان کا کہنا تھا کہ مجھے نواز شریف کی صحت سے متعلق بڑی فکر رہتی ہے، انہیں ملازمین اور نرسوں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتی، 24 گھنٹے ان کے ساتھ ہوتی ہوں اور ان کے معاملات کو خود دیکھ رہی ہوں۔ مریم نواز کا کہنا تھا کہ یہ بڑا مشکل ہے کہ نواز شریف علاج کے لیے باہر جائیں اور میں ان کے ساتھ نہ جاؤں۔ڈیل سے متعلق سوال پر ن لیگ کی نائب صدر نے کہا کہ ڈیل کی باتیں کرنے والوں کو شرم آنی چاہیے، حکومت کی جانب سے بنائے گئے میڈیکل بورڈ نے خود کہا کہ میاں صاحب کو علاج کے لیے باہر جانے کی ضرورت ہے۔حکومت کی جانب سے مزید ریلیف ملنے سے متعلق سوال پر مریم نواز نے کہا کہ ان شاء اللہ سچ غالب آ کر رہے گا۔

Facebook Comments
Share Button