تازہ ترین

GB News

اسلامی نظریاتی کونسل نے پلی بارگین، وعدہ معاف گواہی، ملزم کی تشہیر سمیت تین نیب دفعات غیرشرعی قرار دے دیں

Share Button

اسلامی نظریاتی کونسل نے نیب آرڈیننس کی کچھ دفعات کو غیر شرعی اورغیر اسلامی قرار د یتے ہوئے کہا ہے کہ مذہب کی جبری تبدیلی اسلام کے خلاف ہے، پرویز مشرف کو ڈی چوک میں لانا عدالتی فیصلہ نہیں ہے جبکہ لاش کو گھسیٹ کر لانے کے حوالے سے ریسرچ ونگ جائزہ لے رہا ہے لاش گھسیٹنے کے حوالے سے بات جج کی رائے ہے،اسلامی نظریاتی کونسل ججز کی آراءکا جائزہ نہیں لے سکتی کیونکہ وہ فیصلوں کا حصہ نہیں ہے۔اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل قبلہ ایازنے کہا کہ نیب کے قانون میں سقم ہیں، نیب قوانین کواسلامی قوانین سے ہم آہنگ قرارنہیں دیا جاسکتا، نیب کے احتساب کاعمومی تصوراسلامی تصوراحتساب کے ساتھ مطابقت نہیں رکھتا۔ نیب آرڈیننس کی متعدد دفعات شریعت سے متصادم ہیں۔قبلہ ایاز نے کہا کہ نیب آرڈیننس کی دفعات 14 ڈی،15 اے اور26 غیراسلامی ہیں،ملزمان کوہتھکڑی لگانا، اس کی میڈیا پر تشہیر حراست میں رکھنا غیر شرعی ہے، اس کے علاوہ بے گناہ کوملزم ثابت کرنا، وعدہ معاف گواہ بننا اور پلی بارگین کی دفعات غیر اسلامی ہیں۔نیب قانون کی دفعہ نمبر 14 ڈی کے تحت کسی بھی ملزم پر کسی بھی قسم کی رشوت خوری کا الزام ثابت ہونے سے پہلے ہی اسے مجرم گمان کیا جائے گا اور انکوائری کے مکمل ہونے تک قید میں رکھا جائے گا۔اِس بارے میں قبلہ ایاز نے کہا کہ ’ہم نے دیکھا ہے کہ کیسے کسی پروفیسر کو ہتھکڑی لگا کر عدالت میں پیش کیا جاتا ہے۔اس ساری بے عزتی کی کیا ضرورت ہے؟ اسلامی قوانین کے تحت جب تک کسی پر الزام ثابت نہیں ہو جاتا تب تک ا±ن کو عزت دی جائے گی اور بے گناہ تصور کیا جائے گا .نیب قانون کی دفعہ 15 اے کے تحت الزام لگنے کی صورت میں ملزم کو اپنی بےگناہی کا ثبوت پیش کرنا ہوتا ہے۔اس پر قبلہ ایاز نے کہا کہ ’یہ تو الزام لگانے والا بتائے کہ ا±س کے پاس کیا ثبوت ہے کہ کوئی ملزم کیوں ہے؟ جس کے بعد ملزم یہ ثابت کر سکے کہ آیا ا±س نے کوئی جرم کیا بھی ہے یا نہیں۔‘نیب قانون کی دفعہ 26 کے تحت اگر کوئی ملزم اپنے اوپر لگے الزامات قبول کر کے ریاست کے لیے گواہ بننا چاہے تو اس پر لگے الزامات ختم کر دیے جائیں گے۔اس دفعہ کے حوالے سے قبلہ ایاز سوال اٹھاتے ہیں کہ ’یعنی اگر کوئی ملزم گناہ ثابت ہونے کے بعد یہ وعدہ کر لے کہ وہ قصور وار ہے اور آپ کی مدد کرے تو آپ ا±س کے سارے گناہ معاف کر دیں گے یا پھر ا±س کے حصّے کی جو سزا ہے اسے وہ دیں گے؟اسلامی نظریاتی کونسل کا کہنا ہے کہ نیب کے قانون میں جو حالیہ ترامیم کی گئی ہیں اس سے یہ قانون مزید امتیازی ہو گیا ہے اور اس میں ایسے سقم موجود ہیں کہ اسے اسلام میں جرم و سزا کے قانون سے ہم آہنگ قرار نہیں دیا جا سکتا۔چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل کا کہنا تھا کہ ہم ایک نئے دورجنسیات میں داخل ہو رہے ہیں، پرائمری اسکول سے ہی بچوں کے لیے ماہر نفسیات کی ضرورت ہے، قبلہ ایاز نے کہا کہ مذہب کی جبری تبدیلی اسلام کے خلاف ہے، اس سلسلے میں اقلیتی مذہبی رہنماوں کی آرا حاصل کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ کونسل نے سوشل میڈیا پر توہین کے خلاف قومی اسمبلی کی قرارداد کی تائید کی ہے ۔ سوشل میڈیا پر توہین آمیز مواد اپ لوڈ کرنے پر پابندی لگائی جائے۔ڈاکٹر قبلہ ایاز نے کہا کہ اسلامی نظریاتی کونسل نے بچوں سے جنسی تشدد کی روک تھام کےلئے تجاویز دے دی ہیں اور اسلامی نظریاتی کونسل نے بچوں سے جنسی تشدد کےلئے خصوصی عدالتیں بنانے کی سفارش کر دی ہے۔ ڈاکٹر قبلہ ایاز نے کہا کہ سابق آرمی چیف جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کی لاش کو ڈی چوک پر لانا عدالتی فیصلہ نہیں ہے اور لاش گھسیٹ کر ڈی چوک لانے کے معاملے کا ریسرچ ونگ جائزہ لے رہا ہے جبکہ ججز کی آراءفیصلے کا حصہ نہیں اس لئے اس کا اجلاس میں جائزہ نہیں لیا گیا ہے۔

Facebook Comments
Share Button