تازہ ترین

GB News

مسلم لیگ ن ہی حقیقی تر قی کی ضامن جما عت ہے،شمس میر

Share Button

گلگت(پ ر)مشیر اطلاعات گلگت  بلتستان شمس میر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ حکو مت آزاد کشمیرکی جانب سے آزاد کشمیر کے میڈیکل کا لجوں میں انجینئر نگ کا لجز پرو فیشنل، ایگر یکلچر جنر ل کا لجز اور یونیورسٹیز میں گلگت  بلتستان کیلئے کوٹہ نشستوں کا دوگنا کر دینا قابل تحسین ہے۔ گلگت بلتستان کے عوام اور صوبا ئی حکو مت وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور ریاستی حکومت کے شکر گزار ہیں۔ شمس میر نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی وفاقی حکومت نے گلگت  بلتستان کیلئے بلتستان یونیورسٹی، کیڈٹ کالج، میڈیکل، انجینئرنگ اور ٹیکنیکل کا لج دیئے۔ سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہبا ز شریف نے گلگت  بلتستان کیلئے پنجاب میں میڈیکل اور انجینئر نگ یو نیورسٹیز میں کوٹہ نشستوں کو دوگنا کیاتھا۔ گلگت  بلتستان کے کا لجو  ں کیلئے بسیں فراہم کیں اور پنجاب کے ٹیکنکل کا لجز سمیت تمام جا معات میں کوٹہ نشستوں کو ڈبل کرکے ثابت کر دیا کہ مسلم لیگ ن ہی حقیقی تر قی کی ضامن جما عت ہے۔ گلگت  بلتستان میں تعلیم کی تر قی کے حوالے سے نواز شریف، شہبا ز شریف، راجہ فارو ق حیدر اور وزیراعلیٰ حافظ حفیظ الر حمن جدید اوراعلیٰ تعلیم یافتہ گلگت  بلتستان کے بانی ہیں جنکی تعلیم کیلئے خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جا ئے گا۔مشیر اطلاعات نے کہا کہ 2020،پی ٹی آئی کی وفا قی حکو مت اور عمران خان سے نجات کا سال ہے۔ عمران خان کی ڈیڑھ سالہ حکو مت نے پا کستان میں بدترین کارکر دگی، مہنگائی، بے روزگاری اور یو ٹر ن کا عالمی ریکارڈ قائم کر دیا ہے۔ آج ملک کے عوام پی ٹی آئی اور عمران خان سے بیزار ہو چکے ہیں اور عوامی دبا ؤ عمران خان کا دھڑن تختہ کر دے گا۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان میں پی ٹی آئی کے شیخ چلی ہوا میں ڈینگیں مار رہے ہیں جبکہ ملک میں پی ٹی آئی کی کار کر دگی زیرو بٹا زیرو ہے۔ پی ٹی آئی ملک میں بے نقاب ہوچکی ہے۔ گلگت بلتستان میں اس جماعت کی وفا قی حکو مت نے میڈیکل کا لج کا منصوبہ، گیس پا ئپ لائن اور وومن یونیورسٹی کاہمارامنصوبہ ختم کر دیا ہے جبکہ ہینزل پاور پراجیکٹ اورشغرتھنگ منصوبے روک دیئے ہیں۔ گلگت  بلتستان میں PSDPاور سالانہ ADPکے منصوبوں کے فنڈز 40فیصد کاٹ دیئے ہیں اورکئی منصوبے ختم کر دیئے ہیں۔ قراقرم یونیورسٹی میں فری گریجو یٹ پروگراموں کی فیسوں کا منصوبہ ختم کر کے یہاں کے نوجوانوں کو مایوس کیا ہے اور قراقرم یونیورسٹی کومالی بحران سے دوچار کر دیاہے۔گلگت  بلتستان کی 11ہزار سرکاری اسامیوں کو ختم کر دیا ہے۔ گندم سبسڈی کم کر دی ہے۔ یہ سب کر نے کے بعد پی ٹی آئی والوں کی ڈ ینگیں سینس تو ایسا لگتاہے کہ نا اہلی، نا لائقی اور گلگت  بلتستان کو نقصان پہنچانے کو یہ اپنی کارکر دگی سمجھتے ہیں۔ مشیر اطلاعات نے کہا کہ پی ٹی آئی کی ٹیم روزانہ جھوٹ، سبز باغ اور شیخ چلی کے گولوں کی سلامی عوام کو دیتی ہے۔ گلگت  بلتستان کے عوام پی ٹی آئی کو سنجیدہ نہ لیں ورنہ جو حشر انہوں نے ملک کا کیا ہے وہی گلگت  بلتستان کا کریں گے۔ شمس میر نے کہا ہے امجد ایڈووکیٹ اور انکی پیپلزپارٹی ابھی تک سابق حکو مت کی کر پشن، اداروں کی تبا ہی، نو کریوں کی فروخت اور بدامنی کا تابوت اٹھا ئے پھر رہے ہیں بلا ول کا وہ وعدہ آ ج تک وفا نہیں ہو سکا جس میں انہو ں نے سند ھ کی یونیورسٹیوں میں گلگت  بلتستان کا کوٹہ ڈبل کر نے کا وعدہ کیا تھا۔ لیکن مسلم لیگ ن آزاد کشمیر کے شیر راجہ فاروق حیدر نے آزاد کشمیر میں گلگت  بلتستان کیلئے کوٹہ ڈبل کر کے پی ٹی آئی کی وفا قی حکو مت اور پی پی پی کی سندھ حکو مت کے منہ پر طمانچہ رسید کیا ہے اور ثابت کر دیا کہ مسلم لیگ ن تعمیر و تر قی کا دوسرانام ہے۔

Facebook Comments
Share Button