تازہ ترین

GB News

سکردو،خودکشی کے واقعات کی روک تھام کیلئے ہنگامی اقدامات کافیصلہ

Share Button

سکردو( نمائندہ خصوصی) ڈپٹی کمشنر سکردو کی زیر صدارت اہم اجلاس ہوا جس میں شہر میں بڑھتی ہوئی خودکشی کے رجحانات کے تدارک کے لئے ہنگامی اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا۔ ڈی سی سکردو خرم پرویز کی زیر صدارت اہم اجلاس میں ایم ایس ڈی ایچ کیو ہسپتال سکردو، اے ایس پی سکردو، سوشل ویلفیئر آفیسر سکردو اور ماہر نفسیات ڈاکٹر نے شرکت کی۔ اجلاس میں خود کشی کی وجوہات اور اس کے تدارک کے حوالے سے ہر پہلو پر تفصیلی کی گئی اور ماہرین نے اپنی اپنی آراء اور تجاویز پیش کیں۔ اجلاس میں ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ سوشل ویلفیئر آفیسر خودکشی کے تدارک کے لئے سیمینار کا انعقاد کریں اور اس میں ہر طبقہ فکر کے لوگوں کو مدعو کریں اور اس کی روک تھام اور عوام الناس میں آگاہی کے حوالے سے لیکچرز دیں تاکہ یہ غیر شرعی کام کا معاشرے سے خاتمہ کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ اگر کو ذہنی مریض ہو تو ان کے گھر والے اسے ماہر نفسیات ڈاکٹر اور متعلقہ ایس ایچ او کے نوٹس میں لا کے رکھیں تاکہ اس کا زیادہ سے زیادہ خیال رکھا جا سکے۔ ڈپٹی کمشنر نے ایم ایس اور ماہر نفسیات ڈاکٹر کو ہدایت دی کہ آج کے بعد جو بھی نفسیاتی مریض آتے ہیں تو ان کا بائیو ڈیٹا، ان کو دی جانے والی ادویات اور مریض کے موجودہ حالات کے بارے میں رجسٹر میں باقاعدہ نوٹ کریں اور حکام بالا سے شیئر بھی کریں۔ ڈرگ انسپکٹر کے ذریعے تمام میڈیکل سٹورز پر ڈاکٹر کے نسخے کے بغیر حساس ادویات کی فروخت پر پابندی عائد کی جائے گی۔ اس کے علاوہ محکمہ تعلیم کی مدد سے سکولوں میں بچوں کو خودکشی کے تدارک کے حوالے سے مختلف ماہرین سے آگاہی کے لیکچرز دیئے جائیں گے تاکہ گراس روٹ لیول پر اس گھناؤنے کام کا سدباب کیا جا سکے۔ یاد رہے کہ سکردو میں حالیہ دنوں میں خودکشی کے رجحانات زیادہ دیکھنے میں آ رہے ہیں، گزشتہ ایک ماہ کے دوران خودکشی کے تین واقعات رونما ہو چکے ہیں جس کے بعد عوام میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ گلگت بلتستان میں خودکشی کی شرح غذر میں سب سے زیادہ ہے جہاں سینکڑوں کی تعداد میں خودکشی کے واقعات رونما ہو چکے ہیں۔ قانون ساز اسمبلی نے خودکشی کی وجوہات اور تدارک کیلئے وزیر تعمیرات کی سربراہی میں باقاعدہ ایک کمیٹی بھی بنائی تھی تاہم اس کمیٹی کا بھی کوئی فائدہ ابھی تک سامنے نہیں آیا۔

Facebook Comments
Share Button