تازہ ترین

GB News

کرونا وائرس دنیا کے 183 ممالک میں پھیل گیا ،ہلاکتوں کی تعداد 10 ہزار 32 تک پہنچ گئی

Share Button

روم ، بیجنگ، دہلی، واشنگٹن ، سیول، ٹوکیو (مانیٹرنگ ڈیسک+ آئی این پی)کرونا وائرس دنیا کے 183 ممالک میں پھیل گیا ہے جس کے بعد ہلاکتوں کی تعداد 10 ہزار 32 تک پہنچ چکی ہے جبکہ متاثرین کی تعداد 2 لاکھ 44 ہزار 602 سے تجاوز کرچکی ہے۔وائرس کے خوف سے دنیا بھر میں کئی شہروں کو لاک ڈاؤن بھی کردیا گیا ہے۔جہاں کرونا وائرس سے بڑی تعداد میں لوگ متاثر ہوئے ہیں وہیں اب تک 86 ہزار 33 افراد صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔چین سے پھیلنے والے کرونا وائرس نے جہاں دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے وہیں چین میں اس پر کافی حد تک قابو پالیا گیا ہے اور مسلسل دو روز سے وائرس کے مرکز چین کے شہر ووہان سے ایک بھی مقامی کیس کا نہ آنا اس بات ثبوت ہے تاہم دوسری جانب اب چین کو بیرون ملک سے آنے والے وائرس کے کیسز میں ریکارڈ اضافے کا سامنا ہے۔چینی ہیلتھ کمیشن کا کہنا تھا کہ ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 228 نئے کیسز سامنے آئے جن میں سے تمام بیرون ملک سے آنے والے افراد شامل ہیں۔چین کے بعد اٹلی وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک ہے ، جمعہ کو اٹلی میں 627 افراد ہلاک ہو گئے جن میں ایک پاکستانی بھی شامل ہے مرنے والے پاکستانی کی عمر 66سال اور تعلق کھاریاں سے تھا ، اٹلی میں اموات 4032ہو چکی ہیں اور 4702 افراد متاثر ہیں۔اٹلی کے بعد کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک میں تیسرا نمبر ایران کا ہے ۔ایران میں عالمی وبا سے 18 ہزار 77 افراد متاثر ہوئے ہیں جن میں ایک ہزار 284 افراد موت کے منہ میں جا چکے ہیں جبکہ 5 ہزار 979 صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔جرمن چانسلر اینجیلا مارکل نے جرمنی میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے خدشے کے سبب لاک ڈاؤن کا عندیہ دے دیا ہے۔واضح رہے کہ دنیا بھر میں پھیلی وبا سے متاثر ہونے والے ممالک میں جرمنی کا نمبر پانچواں ہے جہاں اب تک 16 ہزار 290 افراد متاثر اور 44 ہلاک اور 115 صحت یاب ہوچکے ہیں۔امریکہ میں کرونا وائرس سے اب تک 205 افراد ہلاک اور 14 ہزار 250 افراد متاثر ہوچکے ہیں۔امریکی ریاست کیلی فورنیا کے گورنر گیون نیوسم کا کہنا ہے کہ کیلی فورنیا کی 56 فیصد آبادی کے کرونا وائرس سے متاثر ہونے کا خدشہ ہے جبکہ اس ریاست کے شہر لاس اینجلس میں شاپنگ مراکز، انڈور مالز اور غیر ضروری ریٹیل تجارتی سینٹر بند کر دیے گئے ہیں۔دوسری جانب ارجنٹائن نے لاک ڈاؤن کا اعلان کردیا ہے جس کے بعد وہ جنوبی امریکا کا پہلا ملک ہے جو لاک ڈاؤن میں چلا گیا ہے۔فرانس کے جنوب مشرقی شہر نائس کے میئر کا کہنا ہے کہ وہ وہاں کے معروف پرومینیڈ دس اینگلیس کو بند کریں گے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق میئر کرسچن ایستروسی کا کہنا تھا کہ ‘میں آج سے ہی کرفیو لگانے کے فیصلے پر غور کر رہا ہوں’۔خیال رہے کہ اس شہر کے میئر میں خود بھی کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔واضح رہے کہ فرانس میں اب تک 10 ہزار 891 کرونا وائرس کے کیسز سامنے آ چکے ہیں جن میں سے 371 افراد ہلاک اور 12 صحت یاب ہوچکے ہیں۔بھارت میں کرونا وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 4 ہو گئی ہے جبکہ 194افراد متاثر ہیں۔جمہوریہ کوریا میں جمعہ کے روز کرونا وائرس کے 87 مزید کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس سے کل مریضوں کی تعداد بڑھ کر 8ہزار 652 ہوگئی ہے ۔نائیجیریا نے 3 بین الاقوامی ہوائی اڈے بند کرنے کا اعلان کردیا،میکسیکو میں کرونا وائرس سے پہلی موت کی تصدیق کردی گئی ہے۔نیوزی لینڈ میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا وائرس کے مزید 11 نئے کیسز کی تصدیق ہوئی ہے جس سے کل مریضوں کی تعداد بڑھ کر 39 ہوگئی۔

Facebook Comments
Share Button