تازہ ترین

GB News

افغان حکومت اور طالبان میں مذاکرات شروع ہوگئے

Share Button

افغان حکومت اور طالبان کے درمیان ویڈیو لنک کے ذریعے پہلا رابطہ ہوا ہے جس میں تشدد میں کمی لانے سمیت دیگر امور پر گفتگو ہوئی۔بات چیت ویڈیو کانفرنس کے ذریعے ہوئی اور اس دوران قطری اور امریکی حکام بھی شریک تھے جبکہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو غیر اعلانیہ اور ہنگامی دورے پر افغانستان پہنچ گئے ہیں۔افغان حکومت اور طالبان میں مذاکرات شروع ہوگئے ہیں سفارتی حکام نے کہا کہ دونوں فریقین کے درمیان باضابطہ ملاقات ہونی تھی لیکن کرونا کی وجہ سے ویڈیو کانفرنس کا اہتمام کرنا پڑا۔ذرائع کے مطابق ویڈیو لنک کے ذریعے ہونے والے مذاکرات میں قیدیوں کی رہائی کے لیے ماحول تیار کرنے پر بھی اتفاق ہوا ہے۔یاد رہے کہ ایک ماہ قبل طالبان اور امریکہ کے درمیان امن معاہدہ ہوا تھا جس کی شرائط میں شامل تھا کہ امریکی فوج 14ماہ میں افغانستان سے مکمل انخلا کرے گی اور طالبان افغان حکومت سے مذاکرات کریں گے۔معاہدے کے تحت امریکہ پہلے مرحلے میں ساڑھے چار ہزار فوجی افغانستان سے نکالے گا اور ساڑھے 8ہزار فوجیوں کا انخلا معاہدے پر مرحلہ وار عملدرآمد سے مشروط ہے۔افغان جیلوں سے 5 ہزار طالبان قیدی مرحلہ وار رہا کیے جائیں گے اور طالبان افغان حکومت کےساتھ مذاکرات کے پابند ہوں گے اور دیگر دہشت گردوں سے عملی طور پر لاتعلقی اختیار کریں گے۔دوسری جانب امریکہ کے وزیر خارجہ مائیک پومپیو غیر اعلانیہ اور ہنگامی دورے پر افغانستان پہنچ گئے ہیں۔ پومپیو افغان صدر اشرف غنی اورعبداللہ عبداللہ سے ملاقات کریں گے۔بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے مطابق ان ملاقاتوں میں امن معاہدے پر مزید پیش رفت کے متعلق بات چیت ہوگی۔ بین الاقوامی منظرنامے پر نظر رکھنے تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ایک ایسے وقت میں پومپیو کا ہنگامی دورہ نہایت اہمیت کا حامل ہے جب کروناوائرس کے سبب عالمی رہنما باہمی ملاقاتوں سے گریز کر رہے ہیں۔

Facebook Comments
Share Button