تازہ ترین

GB News

پی ایم ایل (ن) گلگت بلتستان کی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس،الیکشن کمشنر کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن پر بحث

Share Button

گلگت(خصوصی رپورٹ)پاکستان مسلم لیگ (ن) گلگت بلتستان کی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس وزیراعلیٰ حافظ حفیظ الرحمن کی زیرصدارت ہوا جس میں 18اسمبلی ممبران نے شرکت کی، سینئر وزیر حاجی اکبر تابان نے بذریعہ ٹیلی فون اجلاس میں شرکت کی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں حالیہ الیکشن کمشنر کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن پر بحث کی گئی، پارلیمانی کمیٹی کے اراکین نے چیف الیکشن کمشنر کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کے چند نکات پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے استعفی وزیراعلیٰ کے پاس جمع کرا دیا اراکین نے استعفیٰ پر فیصلے کا اختیار وزیراعلیٰ کو دیا ہے جس کے مطابق وزیراعلیٰ تحفظات دور نہ ہونے کی صورت میں اسمبلی توڑنے سمیت دیگر آپشنز پر فیصلے کریں گے ، ذرائع کے مطابق اجلاس میں کہا گیا ہے کہ صاف شفاف انتخابات کیلئے ہم بھی چند چیزیں ضروری سمجھتے ہیں جس کے مطابق کوئی نئی سکیم نہ دی جائے اور تقرری اور تبادلے بھی روک دیئے جائیں گے جس سے صاف شفاف انتخابات کا انعقاد ممکن ہو جائے گا لیکن چیف الیکشن کمشنر کی جانب سے جو نوٹیفکیشن جاری ہوا اس کے چند نکات کی وضاحت ضروری ہے جس کیلئے تحریری طور پر درخواست بھی دی جا چکی ہے اور اس میں ان نکات کی واضح طور پر نشاندہی کی گئی ہے ، اجلاس میں کہا گیا ہے کہ چیف الیکشن کمشنر کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات سے بجٹ سمیت دیگر اہم امور پر مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں کہا گیا چیف الیکشن کمشنر کی جانب سے حکومت کی مدت ختم ہونے تک کیلئے کوئی گائیڈ لائن نہیں دی گئی ہے جس کے باعث کنفیوژن پیدا ہو گئی ہے ، اجلاس میں کہا گیا ہے کہ ہم نے تحریری طور پر چند نکات پر وضاحت اور حکومتی معاملات کے حوالے سے گائیڈ لائن مانگی ہے ، ذرائع کے مطابق اجلاس میں کہا گیا ہے کہ اگر چیف الیکشن کمیشن کی گائیڈ لائن پر مطمئن نہ ہوا تو اسمبلی توڑنے سمیت تمام اقدامات پر غور کیا جائے گا۔

Facebook Comments
Share Button