تازہ ترین

GB News

عالمی منڈی میں تیل 112 فیصد مہنگا ہوا،ہم نے صرف 25 فیصد قیمت بڑھائی، عوام کوپٹرولیم مصنوعات میں ریلیف دیا، عمر ایوب

Share Button

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر پٹرولیم عمر ایوب نے کہا ہے کہ عالمی منڈی میں تیل 112 فیصد مہنگا ہوا، ہم نے صرف 25 فیصد قیمت بڑھائی۔ ہم نے عوام کوپٹرولیم مصنوعات میں ریلیف دیا۔وزیراعظم کی ہدایت کے بعد وفاقی دارالحکومت میں معاون خصوصی برائے پٹرولیم ندیم بابر کیساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر پٹرولیم عمر ایوب کا کہنا تھا کہ پاکستان میں نرخ ایشیا میں سب سے کم ہیں، تحریک انصاف نے عوام کو تاریخی ریلیف دیا، ن لیگ کے دور میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک ہی ماہ میں 31 فیصد اضافہ ہوا۔وزیر پٹرولیم کا کہنا تھا کہ پاکستان میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں ابھی بھی کم ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمارا مقابلہ مافیاز، ذخیرہ اندوزوں کے ساتھ ہے،معاون خصوصی پٹرولیم ندیم بابر کا اس موقع پر کہنا تھا کہ 28فروری کوکرونا سے پہلے پٹرول کی قیمت116. روپے 60پیسے تھی۔ مئی میں پی ایس اونے 21 ڈالر فی بیرل کے حساب سے پٹرول خریدا، 31مئی اورجون میں یہ قیمت بڑھ کر 44 ڈالر ہو گئی۔ان کا کہنا تھا کہ ان 35دنوں میں آئل مارکیٹنگ کمپنیزکوکم سے کم نقصان کا سامنا کرنا پڑے گا، عالمی مارکیٹ میں پٹرول کی قیمتیں بڑھ کردوگنا ہوچکی ہیں۔مشیر پٹرولیم کا کہنا تھا کہ بھارت میں اس وقت فی لٹر پٹرول کی قیمت 180، چین میں 137، بنگلہ دیش میں174، انڈونیشیا میں108 ، جاپان میں 196 روپے ہے۔اس سے قبل اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب خان نے کہا ہے کہ عالمی مارکیٹ کے حساب سے پاکستان میں پٹرول اب بھی سستا ہے، جنوری کے مقابلے میں اس وقت بھی پیٹرول 17 روپے فی لیٹر کم اور ڈیزل 26 روپے فی لٹر کم ہے،ہم نے پٹرولیم مصنوعات پر کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا ،ہماری حکومت اس بات پر یقین رکھتی ہے اتار چڑھاؤ کے ساتھ چلا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ2014 میں مسلم لیگ (ن)کی حکومت تھی،اس وقت پیٹرول کی قیمت 31 فیصد ایک ماہ میں بڑھی تھی،پیٹرول پر تاریخی ٹیکس لگے ہوئے تھے،یہ مافیا کی بات کرتے ہیں ،مافیا کا تحفظ ان لوگوں نے کیا ،آج عمران خان کہتے ہیں کہ تحقیقات کریں اور لوگوں کو کیفر کردار تک پہنچائو۔

Facebook Comments
Share Button