تازہ ترین

GB News

قومی ہم آہنگی کے ساتھ پہلی مرتبہ گلگت بلتستان میں اپنی مدت پوری کی:حفیظ الرحمان

Share Button

سکردو (سید عباس) سابق وزیراعلی حافظ حفیظ الرحمان نے کہاہے کہ اگر باکردار اور عوام کے درد والا وزیر اعلیٰ ہو تو کوئی فرق نہیں پڑتا کہ وفاق میں کس کی حکومت ہے ہم نے آخری دن تک حکومت کی اور عوام کی خدمت کی علاقے سے بدامنی کا خاتمہ کردیاتمام مکاتب فکر اور تمام علاقائی عوام نے بھرپور حمایت کے ساتھ اپنے پانچ سال پورے کئے ہم بھرپور طریقے سے قومی ہم آہنگی کے ساتھ پہلی مرتبہ گلگت بلتستان میں اپنی مدت پوری کی سکردو میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہم سے پہلے کی حکومتوں کو بھی عوام نے دیکھا ہے سابق ادوار میں 350 سے زیادہ افراد قتل کئے گئے متعدد بیگناہ لوگ جیلوں میں قید ہوئے ہم نے سارے مسائل پر قابو پالیا اللہ کالاکھ لاکھ شکر ہے کہ آج گلگت بلتستان امن کاعظیم گہوارہ اور خوشحال بن گیامیری نیت صاف تھی ہمارا مقصد لوگوں کی خدمت کرنا تھا انہوں نے کہاکہ گلگت بلتستان کا سب بڑا پروجیک سیف سٹی پروجیکٹ نواز شریف کا تحفہ ہے اور بہت سے میگا پراجیکٹس عوام کے سامنے ہیں گلگت سکردو روڈ بلتستان یونیورسٹی اضلاع اور دوسرے بہت سارے منصوبے ہماری حکومت کے تحفے ہیں اب حکومت ختم ہونے کے باوجود ہم سینہ تان کے عوام میں جارہے ہیں ہمارے جتنے بھی پیسے جو جون میں خرچ نہیں ہوتے تھے واپس جاتے تھے اسکے لئے ہم بہت محنت کرکے کنسولیڈیڈ اکاونٹ بنوایاہے جس کی وجہ سے اب جتنے بھی پیسے جو جون تک خرچ نہیں ہوسکے تھے اب جون کے بعد بھی خرچ کرسکیں گیاب تک مختلف مدمیں جوپیسے لوگوں کی جیب میں جاتے تھے ہم نے ڈیڑھ ارب روپے سرکاری خزانے میں جمع کرادئیے پہلے وزیر اعلیٰ تیس کروڑ سے زیادہ کی سکیمیں منظور نہیں کرواسکتے تھے اب ہم ایک ارب تک کی سکیمیں خود پاس کرتے ہیں انہوں نے کہاکہ ہم نے تمام اخراجات میں کمی کی اور پیسے بچاکر خزانے میں جمع کردئیے۔مختلف امراض کے لئے مرکز سے فنڈ لئیے جس میں کینسر ہارٹ اور دیگر امراض شامل ہیں انکے لئے فری میں علاج کرائے سپیشل بورڈ بنایا اور اب پاکستان کے مختلف بڑے ہسپتالوں میں ہمارے پیسے موجود ہیں مستحق لوگوں کے علاج کرائے جارہے ہیں ہم نے نیب کا ادارہ بنایاجو روزانہ کی بنیاد پر اپنا کام کررہاہے۔ٹورسٹ کے لئے بہت کام کیا اگر اس سال کرونا نہ ہوتا تو پچیس لاکھ ٹورسٹ کو خوش آمدید کہتے انہوں نے کہاکہ ہم نے پہلی مرتبہ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی بنائی اور اس وقت صاف ستھرا گلگت بلتستان ہمارے سامنے ہے ملازمین کی اپگریڈیشن کا مسلہ حل کرلیااور بیس ہزار ملازمین کو ریگولر کیا گیا گلگت بلتستان کے لئے فوک لفٹر دئیے وزرا اور وزیر اعلیٰ کے لیے ویدر الاونس ختم کرکے غریب ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیاگیا انہوں نے کہاکہ زمینوں کے معاملے پر لوگوں کو اکسانے والے سن لیں کہ ان سے کچھ نہیں ہونا ہے امجد حسین ایڈووکیٹ نے رکن کونسل بن کر کیا تیر مارا ہے جو اب جمعہ اسمبلی بن کر ماریں گے سابق وزیراعلی سید مہدی شاہ نے اسلام گلگت اور سکردو میں مکانات کرائے پر لیئے اور کرڑوں روپے کرایے کی مدمیں سرکاری خزانے سے ادا کئے ہم نے جی بی ہاوس میں دوکمرے لیکر سرکاری امور نمٹائے انہوں نیکہاکہ عارضی ملازمین کی مستقلی کے بل پر گورنر نے فوری دستخط نہ کرکے بدنیتی کا مظاہرہ کیا ان میں تھوڑی سی عقل ہوتی تو عارضی ملازمین کے بل پر دستخط کرلیتے انہوں نے دعویٰ کیا کہ کورونا سے متاثرہ افراد کو قرنطینہ سینٹرز میں بڑی عزت دی اور انہیں ادویات خوراک فراہم کی گئیں انہوں نے کہاہے کہ گلگت بلتستان کے چپے چپے میں مسلم لیگ ن زندہ ہے ہم ایک دفعہ پھر اپنی کارکردگی کی بنیاد پر الیکشن میں جارہے ہیں۔

Facebook Comments
Share Button