تازہ ترین

GB News

پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کو تمام شعبوں میں فروغ دیاجائے گا،ی آئی جی (ر) میر افضل

Share Button

گلگت ( پ ر ) نگران وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان ڈی آئی جی (ر) میر افضل نے کہا ہے کہ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کو تمام شعبوں میں فروغ دیاجائے گا۔ وفاقی وزیرپانی و بجلی نے یقین دہانی کرائی ہے کہ گلگت بلتستان میں توانائی کے منصوبوں کے حوالے سے صوبائی حکومت کی ہر ممکن مدد کی جائے گی۔ وزیر اعظم پاکستان سے بھی گلگت بلتستان میں ریجنل گرڈ کے قیام اور نیشنل گرڈ سے گلگت بلتستان کو منسلک کرنے پر بات ہوئی ہے۔ دیامر بھاشا ڈیم جیسے بڑے منصوبے تعمیر ہورہے ہیں۔ گلگت بلتستان میں ریجنل گرڈ کے قیا م اور نیشنل گرڈ سے منسلک ہونے سے صوبے میں سستی بجلی پیدا کرنے کے وسیع مواقعوں سے استعفادہ حاصل کیا جاسکے گا۔ ان خیالات کا اظہار نگران وزیر اعلیٰ میر افضل نے گلگت بلتستان پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ بورڈ کے پہلے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت سنٹرل ہنزہ میں AKFED کے اشتراک سے 2.8 میگاواٹ پاور پروجیکٹ کی تعمیر کی اصولی منظوری دی گئی اور صوبائی سیکرٹری پلاننگ کی سربراہی میں خصوصی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جو کازیشن ایگریمنٹ(Causation Agreement) پر غور و خوص کرکے قابل عمل بنانے کیلئے اپنی سفارشات متعلقہ فورم میں پیش کرے گی۔ نگران وزیر اعلیٰ نے کہا کہ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت تمام شعبوں میں منصوبوں کی تعمیر کیلئے اقدامات وقت کی اہم ضرورت ہے۔ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت تعمیر کئے جانے والے منصوبے کامیاب رہتے ہیں۔ سنٹرل ہنزہ میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت 2.8 میگاواٹ پاور پروجیکٹ کی تعمیر پہلا پائلٹ پروجیکٹ ہے۔ اس منصوبے کی تعمیر سے سنٹرل ہنزہ میں بجلی بحران پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔

Facebook Comments
Share Button