تازہ ترین

GB News

وزیر اعظم کا معاون خصوصی دوہری شہریت پر نااہل نہیں ہوسکتا،اسلام آباد ہائی کورٹ

Share Button

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)اسلام آباد ہائی کورٹ نے ریمارکس دیے ہیں کہ وزیراعظم کو کسی کو معاون رکھنے کا بھی اختیار نہ دیں تو نظام کیسے چلے گا۔اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے وزیراعظم کے دہری شہریت والے معاونین خصوصی کو عہدوں سے ہٹانے کی درخواست کی سماعت کی۔جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ بتائیں آئین میں کہاں لکھا ہے کہ وزیراعظم کے معاونین دہری شہریت نہیں رکھ سکتے؟، وزیراعظم کو جب عوام منتخب کرتے ہیں تو ان پر بھاری ذمہ داریاں عائد ہو جاتی ہیں، وہ اگر اپنی ذمہ داریاں نبھانے کے لئے کسی کی مدد لے تو اس میں کیا حرج ہے؟ اگر انہیں اتنا اختیار بھی نہ دیں کہ وہ کسی کو معاون رکھے تو کیسے نظام چلے گا؟۔عدالت نے معاونین خصوصی کو عہدے سے ہٹانے سے متعلق درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کردی۔ عدالت نے فیصلہ دیا کہ دوہری شہریت رکھنے والے بھی پاکستانی ہیں، جن کی پاکستان سے حب الوطنی پر شک نہیں کیا جا سکتا، معاون خصوصی کا تقرر وزیراعظم کا اختیار ہے جن کی تعداد پر بھی کوئی پابندی نہیں، وزیر اعظم کا معاون خصوصی دوہری شہریت پر نااہل بھی نہیں ہوسکتا۔

Facebook Comments
Share Button