تازہ ترین

GB News

کرونا کیسز میں اضافہ:سکردو میں 7اگست سے 20اگست تک مکمل لاک ڈائون کا اعلان

Share Button

سکردر،غذر(چیف رپورٹر،بیورورپورٹ)کرونا کیسز میں اضافے کے باعث سکردو میں 7اگست سے 20اگست تک مکمل لاک ڈائون کا اعلان کردیا گیا ہے جبکہ غذر میں بھی پابندیاں سخت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے دفعہ 144نافذ کرکے سیاحوں کی آمد پر پابندی لگادی گئی ہے ،کے پی این سے بات چیت کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر سکردو ڈاکٹر محمد انس نے کہا کہ کپڑے گارمنٹس اور جوتے کی دکانیں اور مارکیٹس تاحکم ثانی بند رہیں گی سات ‘اگست سے 20اگست تک کرونا کے بڑھتے کیسز کے پیش نظر سکردو میں مکمل لاک ڈاون کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ جمعہ، ہفتہ اور اتوار کو بین الاضلاعی ٹرانسپورٹ کی آمدورفت پر مکمل پابندی عائد ہو گی جتنے بھی فیصلے کئے گئے ہیں محکمہ صحت کی سفارشات کی روشنی میں کئے گئے ہیں خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی سکردو شہر میں کرونا پر قابو پانے کیلئے دفعہ 144نافذ کردی گئی ہے شادی بیاہ کی تقریبات پر بھی مکمل طور پر پابندی عائد کردی گئی عوام الناس بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر انتظامیہ کے ساتھ تعاون کریں جب تک عوام کا تعاون حاصل نہیں ہوگا تب تک کرونا پر قابو نہیں پایا جاسکتا موجودہ صورت حال بہت ہی تکلیف دہ ہے اس لئے سخت فیصلہ کرنا پڑ رہا ہے جو کچھ کیا جارہا ہے عوام کے مفاد میں کیا جارہاہے عوام کرونا کو مذاق نہ سمجھیں اور سنجیدہ لیں ادھر انجمن تاجران نے انتظامیہ کی جانب سے سات اگست سے بیس اگست تک مکمل لاک ڈاون کرنے کے فیصلے پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے اور تجویز دی ہے کہ مکمل لاک ڈاون کے بجائے سمارٹ لاک ڈاون کیا جائے انجمن کے جنرل سیکرٹری احمد چو شگری نے کہاہے کہ مکمل لاک ڈاون سے کرونا نہیں رکے گا کیونکہ جب لاک ڈائون ختم ہوگی تو کرونا پھیلنے کا خطرہ پیدا ہوجائے گا اس لئے پنجاب کی پالیسی کوفالو کیا جائے سمارٹ لاک ڈائون کیا جائے کرونا بالکل ختم ہوجائے گا مکمل لاک ڈاون کا تجربہ ملک بھر میں ناکام رہا ہے باہر سے آنے والوں پر پابندی عائد کردی جائے تو کوئی مسئلہ نہیں ہوگا جس علاقے میں کرونا کیسز زیادہ ہوں اس کو مکمل سیل کیا جائے مکمل لاک ڈاون سے علاقے میں قحط کی صورت حال پیدا ہوگی اور تاجر فٹ پاتھ پر آئیں گے اس سے بہتر ہے کہ ایس او پی کے تحت تاجروں کو کاروبار جاری رکھنے کی اجازت دی جائے۔ادھر اسسٹنٹ کمشنر پونیال اشکومن عنایت اللہ نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کرونا وائرس سے بچنے کے لیے معاشرے کے ہر فرد کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا شادی بیاہ کی تقاریب میں سرکاری ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے پر دلہا اور ان کے قریبی, رشتہ داروں کے خلاف ایف آئی آر درج کی جائے گی اس حوالے سے مجسٹریٹ اور ایس ایچ او زکی سربراہی میں ٹیم تشکیل دی گئی ہیں عوام اس خطرناک وباء کے خلاف جنگ میں انتظامیہ کے ساتھ دیں ڈپٹی کمشنر غذر کی ہدایات کے مطابق شادی کی تقاریب میں کم سے کم لوگوں کو دعوت دی جائے اس کے ساتھ ماسک اور سینیٹائزر کے استعمال کو بھی یقینی بنایا جائے بارات میں انتہائی کم لوگوں کا ہونا بھی ضروری قرار دیا گیا ہے انہوں نے کہا ہے کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے ضلع بھر میں دفعہ 144 نافذ کر دیا گیا ہے جس کے تحت سیاحوں کے داخلے پر مکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے ضلع غذر کے داخلی مقام بیارچی میں چیک پوسٹ کو دوبارہ بحال کر دیا گیا ہے جہاں محکمہ صحت اور پولیس کی ٹیمیں تعینات کر دی گئی ہیں تاکہ آنے والے تمام مسافروں کے کرونا ٹیسٹ اور لاک ڈوان پاس بھی چیک کیا جاسکے اس کے علاوہ محکمہ صحت کا عملہ مسافروں کا ٹمپریچر بھی چیک کر رہا ہے تاکہ کرونا جیسی خطرناک وباء میں مبتلا مریضوں کو غذر میں داخل ہونے سے روکا جائے انہوں نے کہا کہ بیارچی چیک پوسٹ کے علاوہ شیر قلعہ چیک پوسٹ سنگل تھانہ چیک پوسٹ کے ساتھ ساتھ گاہکوچ شہر کے داخلی راستوں پر لیویز چیک پوسٹ پر بھی سخت چیکنگ کا سلسلہ شروع کیا گیا ہے انہوں نے مزید کہا ڈپٹی کمشنر کے حکم کے مطابق ضلع بھر کے تمام بڑے ہوٹلوں کو بند کر دیا گیا ہے خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی تاہم شہر کے اندر تمام ریسٹورنٹ جمعہ اور اتوار کے علاوہ سرکاری ایس او پیز کے ساتھ کھلے رہیں گے کرونا وائرس سے بچنے کے لئے تمام احتیاطی تدابیر پر عمل درآمد کرانے کے لیے روزانہ کی بنیاد پر تمام تجارتی مراکز کا جائزہ لیا جارہا ہے۔

Facebook Comments
Share Button