تازہ ترین

GB News

سابق گورنر گلگت بلتستان پیرسید کرم علی شاہ رضائے الٰہی سے انتقال کر گئے

Share Button

غذر(بیورو رپورٹ)سابق گورنر گلگت بلتستان و قدآور سیاسی و مذہبی رہنما پیرسید کرم علی شاہ 86 برس کی عمر میں رضائے الٰہی سے انتقال کر گئے۔خاندانی ذرائع کے مطابق مرحوم کو کچھ روز قبل دل کا دورہ پڑا تھا جس باعث انہیں تشویش ناک حالت میں اسلام آباد کے ایک نجی ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا تاہم منگل کی صبح وہ خالق حقیقی سے جاملے۔مرحوم کے جسد خاکی کو اسلام آباد سے روانہ کردیا گیا ہے اور آج بدھ 12 بجے آبائی گاؤں چٹورکھنڈ غذر میں سپردِ خاک کیا جائے گا ،پیر کرم علی شاہ کا گلگت بلتستان کی سیاست میں گزشتہ پانچ دھائیوں کے دوران بھرپور کرداررہا 1970 کی مشاورتی کونسل کے چناؤ سے لے کر 2009 کے قانون ساز اسمبلی کے انتخابات تک پیر کرم علی شاہ نے ہر الیکشن میں حصہ لیا اور ناقابلِ شکست رہے انہیں پیپلز پارٹی کے 1994 کے دور حکومت میں قانون ساز کونسل کاپہلا ڈپٹی چیف ایگزیکٹیو بننے کا بھی اعزاز حاصل ہواپیر کرم علی شاہ نے 2011 میں گورنر گلگت بلتستان بننے کے بعد اسمبلی نشست سے استعفیٰ دیا تھا جبکہ گزشتہ انتخابات میں خرابی صحت کے باعث انتخابات میں حصہ نہیں لیا مرحوم نے آنے والے انتخابات میں پیپلزپارٹی کے ٹکٹ سے اپنے فرزند کو سیاسی جانشین کے طور پر میدان میں اتارنے کا اعلان کیا تھا اور اپنے فرزند کی کپمین میں مصروف تھے پیر سید کرم علی شاہ نہ صرف ایک کامیاب اور زیرگ سیاستدان تھے بلکہ ایک بہترین مذہبی لیڈر بھی تھے وہ کئی مرتبہ اسماعیلیہ کونسل کے صدر اور مختلف آنریری عہدوں پر بھی فائز رہے مرحوم ضلع غذر کے تمام مکاتب فکر کے لئے قابل قبول شخصیت تھے،مرحوم انتہائی خوش اخلاق،معاملہ فہم،شفقیق اور سادہ طبیعت کے مالک انسان تھے۔مرحوم نے پسماندگان میں دو بیٹے،چار بیٹیاں اور دو بیوائیں چھوڑی ہیں مرحوم کی رحلت کے بعد ضلع غذر کی سیاست کا ایک سنہرا دور بند ہوگیا ہے جبکہ ضلع بھر میں سوگ کا سماں ہے۔

Facebook Comments
Share Button