تازہ ترین

GB News

الیکشن میں کسی قسم کی تاخیر خطے کے ہرگز مفاد میں نہیں، پاکستان تحریک انصاف

Share Button

سکردو(محمد اسحاق جلال) پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کے رہنماوں حاجی فدا محمد ناشاد وزیر ولایت علی ایڈووکیٹ سید امجد زیدی وزیر حسن محمد تقی آخونزادہ راجہ ذکریا خان مقپون یوسف نمبردار اور دیگر نے کہاہے کہ پی ٹی آئی بروقت انتخابات چاہتی ہے الیکشن میں کسی قسم کی تاخیر خطے کے ہرگز مفاد میں نہیں ہے نگراں صوبائی وزرا کے پاس کوئی اختیار نہیں کہ وہ الیکشن کے بارے میں کوئی بات کریں زیدی ہاوس سکردو میں ٹکٹوں کی تقسیم کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ الیکشن کرانا الیکشن کمیشن کا کام ہے جوشیڈول جاری کیا گیا ہے اس کے مطابق انتخابات کرانا ہونگے الیکشن میں جتنی تاخیر ہوگی اتنا ہی نقصان علاقے کا ہوگا ترقیاتی امور جمود کا شکار ہونگے پندرہ نومبر کو انتخابات اگر ممکن نہیں ہیں تو پھر ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ ملک کے عام انتخابات کے ساتھ یہاں بھی انتخابات کروائے جائیں آئندہ سال انتخابات ہوئے تو صوبائی حکومت کو وفاقی حکومت کے ساتھ صرف دو سے ڈھائی سال کام کرنے کا موقع ملے گا یوں علاقے کی ترقی وخوشحالی کا سفر ادھورا رہ جائے گا ترقیاتی امور جمود کا شکار رہیں گے اس لئے رواں سال پندرہ نومبر کو انتخابات کرانا بہت ہی لازمی ہے پی ٹی آئی سمیت کسی بھی جماعت کی ہرگز یہ خواہش نہیں ہے کہ الیکشن میں کسی قسم کی کوئی تاخیر ہو تمام سیاسی ومذہبی جماعتیں چاہتی ہیں کہ انتخابات وقت پرہی کرائے جائیں انہوں نے کہاکہ پارٹی امیدواروں سے اسلام آباد میں دوران انٹرویو انتخابات کی تاریخ کے بارے میں پوچھا گیاتو سب نے اکتوبر یا نومبر میں الیکشن کرانے کا مطالبہ کیا تھا ہونا تو یہ چاہیئے تھاکہ اکتوبر میں ہی الیکشن کروائے جاتے مگر اب جب پندرہ نومبر کی تاریخ دی ہے تو اسی تاریخ کو ہی صوبائی اسمبلی کے انتخابات ہونے چاہیں ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ کورونا کا کوئی ایشو نہیں ہے الیکشن شیڈول جاری ہوگیا ہے نگراں حکومت کو الیکشن کمیشن کی معاونت کرنا ہوگی وزرا کی ذمہ داری ہے کہ وہ ایس او پی تیار کریں اور الیکشن کی تیاری کریں پندرہ نومبر کو الیکشن سنگین غلطی قرار دینا وزرا کا ذاتی موقف ہے تمام جماعتیں الیکشن بروقت چاہتی ہیں تو کوئی مسئلہ ہی نہیں ہوگا

Facebook Comments
Share Button