تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعظم اور عمران خان سے متعلق دیا گیا بیان 2 برس پرانا ہے: شاہد آفریدی کی وضاحت-کیا باقاعدہ منصوبہ بندی سے پھنسایا گیا؟ غریدہ فاروقی نے وضاحت کر دی-مسلم لیگ ن میں بغاوت عروج پر متحدہ مسلم لیگ بنانے کی تیاریاں آخری مراحل میں، 3 درجن اراکین اسمبلی کے تحریک انصاف سے بھی رابطے-وزیرداخلہ کی پریس کانفرنس ملتوی ہونےکا ڈراپ سین-ایک طرف وزیراعظم کے استعفے کی بات دوسری طرف نیب قانون ختم کیاجارہاہے ،محمد زبیر نیب نہیں ہوگاتوکرپشن کی روک تھام کیسے ہوگی ،وفاق اورصوبے کے درمیان کشمکش نہیں ہونی چاہئے ... مزید-وزیراعلیٰ شہباز شریف کو وزارت عظمیٰ کی پیشکش کی تھی، خواجہ آصف کو وزیراعظم بنانا پاکستان کے ساتھ مذاق ہوگا، وہ فوج میں بہت غیر مقبول ہیں، چوہدری نثار واحد وزیر ہیں جن ... مزید-عوام کو سازشوں کے ذریعے ورغلایا نہیں جاسکتا،عوام ہی بہترجج ہیں اورصحیح فیصلہ کرنے کااختیار رکھتے ہیں،وزیر اعلیٰ بلوچستان وزیراعظم محمدنوازشریف نے ہمیشہ اداروں کااحترام ... مزید-خدانے دوبارہ پاکستان میں حکومت کاموقع دیاتولال مسجداوراکبربگٹی جیسے آپریشن پھرکروں گا،مجھے ان پر کوئی ندامت نہیں ، پرویز مشرف جوبھی کیاہے سوفیصدملک وقوم کیلئے کیا،پانامہ ... مزید-ذوالقعدہ کا چاند نظر آگیا،یکم ذوالقعدہ منگ کل ہوگی، مفتی منیب الرحمن-دہشت گردی ملک بھر میں سر اٹھارہی ہے اور سیاسی رہنماء کرسی کی جنگ میں مصروف ہیں،سینیٹر شاہی سید ریاست بچانا کرسی بچانے سے زیادہ اہم ہے ،اب بھی وقت ہے ملک کی سلامتی اور ... مزید

GB News

امریکی سینیٹربھی ٹر مپ روس قریبی تعلقات کے مخالف نکلے

امریکی یپبلکن پارٹی کے سینیٹر لنڈسے گراہم نے کہا ہے کہ ٹرمپ روس سے قریبی تعلقات کے خواہاں ہیں لیکن سینیٹ کے 100 میں سے 99 ممبران نو منتخب امریکی صدر کے روس سے معتلق بیان کے مخالف ہیں، سینیٹر جان مکین کے ہمراہ سینیٹ میں اس معاملے پر بحث کریں گے اور ہ مشترکہ طور پر روسی صدر ولاد میر پیوٹن اور ان کے قریبی ساتھیوں کے خلاف صدارتی انتخابات میں مداخلت کرنے پر پابندیوں کے حوالے سے قرارداد پیش کریں گے۔ امریکی نشریاتی ادارے کو دیئے گئے انٹرویو میں سینیٹر لنڈسے گراہم کا کہنا تھا کہ نو منتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ روس سے قریبی تعلقات کے خواہاں ہیں جب کہ امریکی سینیٹ کے 100 میں سے 99 ممبران نو منتخب امریکی صدر کے روس سے معتلق بیان کے مخالف ہیں سینیٹ کے تمام ممبران ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے صدارتی انتخابات میں روس کی عدم مداخلت کے حوالے سے دیئے جانے والے بیان سے متفق نہیں ہیں۔انہوں نے کہاکہ سینیٹر جان مکین کے ہمراہ سینیٹ میں اس معاملے پر بحث کریں گے اور ہم مشترکہ طور پر روسی صدر ولاد میر پیوٹن اور ان کے قریبی ساتھیوں کے خلاف صدارتی انتخابات میں مداخلت کرنے پر پابندیوں کے حوالے سے قرارداد پیش کریں گے، روسی حکام پر یہ پابندیاں صرف امریکا میں نہیں بلکہ پوری دنیا میں ہوں گی۔واضح رہے کہ امریکی صدر براک اوباما اور ان کی جماعت ڈیموکریٹکس کی امیدوار ہلیری کلنٹن کی جانب سے بارہا الزام عائد کیا جاتا رہا ہے کہ نومبر میں ہونے والے صدارتی انتخابات کے دوران روس نے مداخلت کی جب کہ امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے کی جانب سے بھی ڈونلڈ ٹرمپ کی فتح میں روس کے کردار کا کہا گیا۔ دوسری جانب ڈونلڈ ٹرمپ نے ان تمام الزامات کی سختی سے تردید کر رہے ہیں کہ صدارتی انتخابات کے دوران روس نے مداخلت کی۔

Share Button