تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعظم اور عمران خان سے متعلق دیا گیا بیان 2 برس پرانا ہے: شاہد آفریدی کی وضاحت-کیا باقاعدہ منصوبہ بندی سے پھنسایا گیا؟ غریدہ فاروقی نے وضاحت کر دی-مسلم لیگ ن میں بغاوت عروج پر متحدہ مسلم لیگ بنانے کی تیاریاں آخری مراحل میں، 3 درجن اراکین اسمبلی کے تحریک انصاف سے بھی رابطے-وزیرداخلہ کی پریس کانفرنس ملتوی ہونےکا ڈراپ سین-ایک طرف وزیراعظم کے استعفے کی بات دوسری طرف نیب قانون ختم کیاجارہاہے ،محمد زبیر نیب نہیں ہوگاتوکرپشن کی روک تھام کیسے ہوگی ،وفاق اورصوبے کے درمیان کشمکش نہیں ہونی چاہئے ... مزید-وزیراعلیٰ شہباز شریف کو وزارت عظمیٰ کی پیشکش کی تھی، خواجہ آصف کو وزیراعظم بنانا پاکستان کے ساتھ مذاق ہوگا، وہ فوج میں بہت غیر مقبول ہیں، چوہدری نثار واحد وزیر ہیں جن ... مزید-عوام کو سازشوں کے ذریعے ورغلایا نہیں جاسکتا،عوام ہی بہترجج ہیں اورصحیح فیصلہ کرنے کااختیار رکھتے ہیں،وزیر اعلیٰ بلوچستان وزیراعظم محمدنوازشریف نے ہمیشہ اداروں کااحترام ... مزید-خدانے دوبارہ پاکستان میں حکومت کاموقع دیاتولال مسجداوراکبربگٹی جیسے آپریشن پھرکروں گا،مجھے ان پر کوئی ندامت نہیں ، پرویز مشرف جوبھی کیاہے سوفیصدملک وقوم کیلئے کیا،پانامہ ... مزید-ذوالقعدہ کا چاند نظر آگیا،یکم ذوالقعدہ منگ کل ہوگی، مفتی منیب الرحمن-دہشت گردی ملک بھر میں سر اٹھارہی ہے اور سیاسی رہنماء کرسی کی جنگ میں مصروف ہیں،سینیٹر شاہی سید ریاست بچانا کرسی بچانے سے زیادہ اہم ہے ،اب بھی وقت ہے ملک کی سلامتی اور ... مزید

GB News

حکومت اور عسکری قوت کیسے ہم پلہ ہو سکتے ہیں ،چیئرمین سینیٹ

چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے قائد ایوان سینیٹر راجہ ظفر الحق اور اپوزیشن لیڈر چوہدری اعتزاز احسن سے رہنمائی مانگ لی کہ انہیں یہ بات سمجھ نہیں آرہی ہے کہ حکومت اور عسکری قوت کیسے ہم پلہ ہو سکتے ہیں ، آئین ،قوانین اور ضابطہ کار کے تحت مسلح افواج کا مکمل اختیار وفاقی حکومت کے پاس ہے اور فوج وزارت دفاع کے تحت اپنے فرائض انجام دیتی ہے ۔ اس امر کا اظہار انہوں نے جمعرات کی شام ایوان بالامیں نیوز لیکس کے معاملے پر بحث کے موقع پر کیا ۔ چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ حکومت اور عسکری قوت کو ہم پلہ رکھا جا رہا ہے مجھے سمجھ نہیں آرہی ہے ایسا کیوں ہے ، قائدایوان اور اپوزیشن لیڈر میری رہنمائی کریں کیونکہ آئین اور قانون کے تحت مسلح افواج کا مکمل اختیار وفاقی حکومت کے پاس ہے اور متعلقہ آئینی شق میں وفاقی حکومت کی تشریح کردی گئی ہے ۔ انہوں نے ایوان میں رولز آف بزنس پڑھتے ہوئے کہا کہ فوج وزارت دفاع کے ماتحت ہے اوراس حوالے سے 1973کے رولز آف بزنس واضح ہیں اس حوالے سے میری رہنمائی کی جائے ۔ چیئرمین سینیٹ کی جانب سے اس رہنمائی کیلئے رجوع کرنے پر اپوزیشن لیڈر چوہدری اعتزاز احسن نے ابتدائی طور پر بیان دیا کہ جب آرمی چیف آگے آگے اور وزیردفاع پیچھے پیچھے چلتا ہے تو رولز کے حوالے نہیں چلتے۔

Share Button