گلگت بلتستان،یوم القدس پر ریلیاں، فلسطینیوں، کشمیریوں سے یکجہتی، غاصبوں کے خلاف ڈٹ جانے کا عزم

یوم القدس پرگلگت بلتستان میں جگہ جگہ ریلیوں،مظاہروں،جلوسوں اور اجتماعات کاانعقاد کیاگیا جن میں فلسطینیوں اورکشمیریوں سے بھرپراظہاریکجہتی اورغاصبوں کے خلاف ڈٹ جانے کے عزم کااظہار کیا گیا۔ شرکاء نے امریکہ،اسرائیل،بھارت کے خلاف شدید نعرے بازی کی اوراقوام متحدہ سے فلسطین، مقبوضہ کشمیر میں قتل عام بندکرانے کامطالبہ کیا۔اس موقع پر آغاراحت،اختررضوی،ہدایت علی،اورنگزیب قریشی، آغاباقرالحسینی،علی رضوی،شیخ ذوالفقار،شبیرحافظی،شیخ موسیٰ الکریمی،مقبول حسین،اعجازعلی،عاشق حسین الحسینی،شیخ حفاظت،شمس لون اوردیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دشمن طاقتوں کے خلاف اتحاد امت ناگزیر ہے۔مظلوموں کے ساتھ کھڑے رہیں گے۔تفصیلات کے مطابق جمعہ کو پورے ملک کی طرح گلگت بلتستان بھر میں فلسطینی مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے یوم القدس بھرپور جوش و خروش سے منایا گیا۔اس سلسلے میں بعد از نماز جمعہ گلگت، سکردو، ہنزہ، نگر، استور،دنیور، اوشکھنداس، جلال آباد، جوتل، چھلت، اسکندر آباد، بارگو شروٹ سمیت متعدد مقامات پر القدس ریلیاں نکالی گئیں اور احتجاجی مظاہرے کیے گئے ۔ شرکا نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر فلسطینی عوام پر ڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف اسرائیل اور امریکہ کے خلاف نعرے درج تھے ۔شرکاء نے امریکہ اور اسرائیل کے پرچم  نذر آتش کیے اور نعرے بازی کی۔ یوم القدس کی مرکزی ریلی مرکزی امامیہ کونسل گلگت بلتستان کے زیر اہتمام  بعد از نماز جمعہ مرکزی امامیہ جامع مسجد گلگت سے نکالی گ?ی ریلی کی قیادت امام جمعہ والجماعت گلگت آغا راحت نے کی ریلی میں ہزاروں کی تعداد میں عوام نے شرکت کی ریلی کے مرکزی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے آغا سید راحت حسین الحسینی نے کہا یوم القدس مسلمانوں کے اتحاد کا دن ہے،امت مسلمہ اتحاد و وحدت کا مظاہرہ کرتی تو اسرائیل کا ناپاک وجود آج کہیں نظر نہ آتا، ہم مطالبہ کرتے ہیں القدس کی آزادی کیلئے کوئی دوسرا اسلامی ملک خاص طور پر اسلامی جمہوریہ پاکستان سامنے آئے تو ملت تشیع کو صف اول ہی پائینگے۔ بقول امام خمینی رضوان اللہ اگر تمام مسلمان متحد ہوکر  ایک ایک بالٹی پانی اسرائیل پر انڈیل دیں تو اس کا خاتمہ ہو جائے۔ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے مولانا سید اختر حسین رضوی نے کہا فلسطینی بھائیوں سے یکجہتی کے لئے یوم القدس منانا امام خمینی (رہ) کا دور اندیش  اقدام تھا جو ہماری دینی ملی اور اخلاقی غیرت کا تقاضا بھی ہے، امت مسلمہ جسد واحد کی مصداق ہے، لہٰذا فلسطین کے مظلوم مسلمان بھائیوں کا دکھ درد بھی ہمارا ہے۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے سینئر نائب صدر مرکزی امامیہ کونسل گلگت بلتستان ڈاکٹر ہدایت علی نے کہا ہم سب مسلمان ہیں پاکستان میں سنی شیعہ کوئی مسئلہ نہیں چند شرپسند گروہ استعماری قوتوں کے اشاروں پر فرقہ واریت پھیلا رہے ہیں۔ تحریک منہاج القران گلگت بلتستان کے کوآرڈینیٹر ایڈوکیٹ اورنگزیب قریشی نے کہا القدس کا مسئلہ کسی ایک مسلک کا مسئلہ نہیں بلکہ عالم اسلام کا مسئلہ ہے اور ہمیں ایک قدم بھی اس سے پیچھے نہیں ہٹنا چاہیئے۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے آئی ایس او گلگت ڈویڑن کے صدر معین عباس نے کہا غاصب صیہونی ریاست جس کی بنیاد ظلم پر ہے اور مظلوم فلسطینی مسلمانوں پر ظلم و بربریت کی انتہا کی ہے مظلوم کی حمایت اور ظالم کے خلاف صدائے احتجاج بلند کرنا ہر مسلمان کا فرض ہے۔خپلومیں بھی یوم القدس کی ریلی نکالی گئی۔ سکردو میں نماز جمعہ کے بعد جامع مسجد سے بڑی القدس ریلی نکالی گئی جس میں ہزاروں لوگ شریک ہوئے ۔ریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے انجمن امامیہ بلتستان کے صدر آغا سید باقر الحسینی آغا سید علی رضوی شیخ ذولفقار علی شبیر حافظی ودیگر نے کہاکہ دنیا بھر میں مسلمانوں پر مظالم ڈھائے جارہے ہیں اسلام دشمن طاقتیں مسلمانوں کے خلاف برسرپیکار ہیں مگر ہم آپس میں بٹے ہوئے ہیں جب تک ہم اتحاد ویکجہتی کا عملی مظاہرہ نہیں کریں گے تب تک مسلم امہ کو مسائل سے چھٹکارہ نہیں مل سکتا ہماری چپقلش سے دشمن فائدہ اٹھارہے ہیں انہوں نے کہاکہ امریکہ اور اسرائیل مسلم امہ کے خلاف نت نئی سازشیں کررہاہے ہمیں ان ظالم اور جابر قوتوں کے خلاف سیسہ پلائی ہوئی دیوار ثابت ہونا ہوگا دریں اثناء گمبہ میں بھی نماز جمعہ کے بعد بڑی ریلی نکالی گئی جو سی ایم ایچ چوک پرجلسے میں بدل گئی جامع مسجد گیول سے بھی نماز جمعہ کے بعد القدس ریلی نکالی گئی القدس ریلی یادگار چوک پہنچ کر انجمن امامیہ کے زیراہتمام نکالی گئی مرکزی ریلی میں شامل ہوگئی جامع مسجد گیول سے نکالی گئی ریلی کی قیادت حجتہ الاسلام شیخ محمد علی شریعتی اور نذیر آنصاری نے کی ریلی میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ ضلع شگر میں یوم القدس کی مناسبت سے تمام جامع مساجد میں مظلوموں کے حق میں اور ظالموں کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی جامع مسجد شگر خاص میں سید طحہ الحسینی جامع مسجد چھورکاہ میں سید طلحہ الموسوی جامع مسجد چھوترون میں سید عباس الموسوی جامع مسجد تسر میں شیخ علی نادم کی قیادت میں امریکہ مردہ بار ریلی نکالی گئی ریلی کے شرکا نے مظلوم فلسطینیوں اور کشمیروں کی حق میں اور ان کے خلاف برسر پیکار امریکہ اسرائیل اور بھارت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی اس موقع پر احتجاجی ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے علمائے کرام نے کہا یوم القدس یوم عہد و تجدید کا دن ہے کہ دنیا میں بسنے والے ہر مسلمان اپنے مظلوموں کے بھائیوں۔کے حق میں اواز بلند کرے۔ہنزہ میں بھی یوم القدس کے موقع پر احتجاجی جلوس،اجتماع کاانعقادکیاگیا۔اس موقع پرشیخ موسیٰ الکریمی حجت الاسلام و خطیب جامعہ مسجد علی نے کہا کہ اسرائیل کا وجود دنیا سے مٹ جائے گا اور اسلام کا پرچم مسجد اقصیٰ پر لہرایا جائے گا۔ہنزہ میں بجلی پانی اور صحت عامہ جیسے بنیادی مسائل کا سامنا ہے خاص کر سول ہسپتال علی آباد سے تنخواہ لینے والے ڈاکٹرز دیگر مقامات پر کام کرتے ہیں اور یہاں سے تنخواہ لیتے ہیں۔اس لئے یہاں پر ڈاکٹروں کی تعیناتی کو یقینی بنایا جائے۔اس موقع پر شیخ مقبول حسین نے اپنے خطاب میں کہا یروشلم کی مقدس سرزمیں انبیاء  اکرام کی سر زمین ہے حضرت سلیمان نے اس کی بنیاد رکھی تھی ۔اعجاز علی نے کہا کہ ہنزہ کے کونے کونے سے آج کے اس دن جمعہ الوداع کے موقع پر اسرائیل کے خلاف صدا بلند کر نے کے لئے یہاں جمع ہوئے ہیں جو کہ قابل تعریف ہے۔ ہمارا یہ عقیدہ ہے کہ ایک دن اسرائیل نابود ہو جائے گی اور اس سر زمین پر اسلام کا پرچم سر بلند ہو جائے گی۔اس جلوس کا اہتمام تحریک جعفریہ و امامیہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن نے کیا تھا۔ جلوس جامعہ مسجد علی علی آبادسے برآمد ہو کر پرانی تحصیل کے سامنے اختتام پذیر ہوئی۔یہ دن ہمسایہ ضلع نگر میں بھی جوش و خروش کے ساتھ منایا گیا اور اسرائیل کے خلاف نارے لگایا گیا۔ مقرررین کے اس موقع پر کہا کہ اسرئیل اسلام کا دشمن ہے اور سب مسلمان ملکر اس کے عزائم خاک میں ملا دیں گے۔ضلع استور میں بھی یوم القدس منایاگیا۔قائد ملت جعفریہ سید عاشق حسین الحسینی نے یوم القدس کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے فرمایا۔یوم القدس یوم اسلام ہے یہ دن نہ صرف مظلومین فلسطین کے لیے ہے بلکہ پوری دنیا کے مستضعفین کے لیے یہ پیغام ہے کہ ہم دنیا کے ہر مظلوم کے ساتھ ہیں اور ہر ظالم کے خلاف برسر پیکار ہیں۔فلسطین کے باسی اہلسنت ہونے کے باوجود امام خمینی رح نے فرمایا ہمارا خدا ایک ہمارا رسول ص ایک ہمارا قبلہ ایک جب یہ ساری مشترکات ہیں تو پھر افتراق کس بات کی لہذا مسئلہ فلسطین صرف فلسطینیوں کا نہیں بلکہ پوری عالم اسلام کا مسئلہ ہے۔قائد استور نے فرمایا آج کی سب سے بڑی ضرورت اتحاد بین المسلمین کی ہے اگر عالم اسلام متحد ہو جائیں تو دشمن کو خود بخود شکست ہوگی حال ہی میں سعودی عرب کے ولی عہد نے ایران کے ساتھ دوستی کا جو اعلان کیا ہے نہایت خوش آیند ہے اگر ایران اور سعودی عرب متحد ہو جائیں تو اسرائیل اور اسلام دشمن طاقتیں خود بخود سر نگوں ہو جائینگے مگر دشمن ابھی سے ہی کوشش میں لگا ہے کہیں ایران اور سعودی عرب کی دوستی نہ ہوجائے۔آج افسوس سے کہنا پڑتا ہے پوری دنیا میں اسرائیل کے غاصبانہ تسلط کے خلاف ریلیاں نکلتی ہیں مگر عرب ممالک ٹس سے مس نہیں بلکہ کچھ عرب ممالک جیسے عمارات وغیرہ نے تو اسرائیل کو تسلیم بھی کر لیا جو بے غیرتی کی انتہا ہے۔اس کے علاؤہ قائد استور نے فرمایا ہمارے وزیر اعظم نے پیامبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے خلاف بننے والے توہین آمیز خاکوں کی نہ صرف مذمت کی بلکہ پورے اسلامی ممالک کو خط لکھا اور اقوام متحدہ میں یہ آواز بلند کی کہ ڈیڑھ ارب مسلمانوں کے دلوں کو مجروح کیا ہے لہذا ان کو چاہیے کہ مسلمانوں سے مافی مانگیں۔اس کے علاؤہ شیخ حفاظت نے بھی اپنے خطاب میں فرمایا کہ بقول امام خمینی اگر سارے مسلمان مل کر ایک ایک بالٹی پانی انڈیل دیں تو اسرائیل بہہ جائے گا اور فرمایا کہ اس وقت مسلمانوں کو ایک ہوکر دشمن کا مقابلہ کرنا چاہیے۔اور منسٹر فوڈ شمس الحق لون نے بھی خطاب کیا اور فرمایا کہ آج اگر اس اسٹیج میں اہل سنت والجماعت کے علماء بھی ہوتے تو کیا ہی اچھا ہوتا کیونکہ یہ دن کسی سے مخصوص نہیں بلکہ سب کے لیے برابر کی اہمیت کا حامل ہے اور منسٹر فوڈ نے امن اور اتحاد پر زور دیتے ہوے کہا کہ سید عاشق حسین صرف استور کے امن کا سفیر نہیں بلکہ پوری جی بی اور پاکستان کے لیے امن کے سفیر ہیں  ہم اس وقت تک ترقی نیں کرسکتے ہیں جب تک اپس میں امن امان بھائی چارگی کی فضاء کو قائم نیں کرینگے ایک دوسروں کو برداشت نیں کرینگے  میں تمام عوام سے اپیل کرونگا کہ خدا کے لیے ایک قوم بن کر خطہ کی تعمیر اور ترقی کے لیے کام کرنا ہے۔کھرمنگ بھر میں رمضان المبارک کے آخری جمعہ کو یوم القدس کے طور پر منایا گیا اس سلسلے میں جگہ جگہ بعد از نماز جمعہ القدس ریلیاں نکالی گئیں مہدی آباد گوہری کمنگو پاری غندوس طولتی ترکتی اور الڈینگ میں بھی ریلی نکالی گئی جس میں ہزاروں کی تعداد میں لوگ شریک ہوئے کھرمنگ کی سب بڑی القدس ریلی مہدی آباد میں نکلی جس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی اور امریکہ مردہ باد اسرائیل مردہ باد کے نعرے لگ رہے تھے ریلی جامع مسجد مہدی آباد سے نکلی اور بازار میں اختتام پذیر ہوئے القدس کی ریلی سے خطاب میں علمائے کرام نے کہا کہ فلسطین کا مسئلہ انسانیت سے مربوط ہے اور یہ مسئلہ کرہ ارض کا قدیم مسئلہ یے اسرائیل دنیا کے نقشے پر ایک ناجائز اور غیر قانونی ریاست ہے لہذا اد کا وجود دنیا پر ظلم اور بربریت کی علامت ہے فلسطین کے عوام مظلوم ہیں لہٰذا اقوام متحدہ فلسطین کے مظلوم عوام کی داد رسی کریں علمائے کرام نے تمام انسانی حقوق کی تنظیموں سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ فلسطینی عوام پر اسرائیل کی ظلم و بربریت کا نوٹس لیںالقدس ریلی میں مغربی ممالک کی طرف سے توہین رسالت اور توہین اسلام کی بھرپور مذمت بھی کی گئی۔