آج سے سولہ مئی تک لاک ڈائون، چاند رات تک کاروبار ہوگا، تاجر

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر(این سی او سی)کی فیصلوں کے تحت ملک بھر میں آج سے 16مئی تک لاک ڈائون نافذ کیا جارہا ہے جس کے تحت بازار،شاپنگ مالز اور دیگر تجارتی مراکز بندرہیں گے جبکہ  تاجرپہلے ہی لاک ڈائون کا فیصلہ مسترد کرتے ہوئے چاند رات تک کاروبار جاری رکھنے کا اعلان کرچکے ہیں تاجر رہنمائوں نے کہا ہے کہ اگر حکومت کوئی ریلیف نہیں دے سکتی تو ہمیں کاروبار کرنے دے ،اس سلسلے میں صدر آل پاکستان انجمن تاجران اجمل بلوچ کا کہنا تھا کہ تاجر برادری چاند رات تک کاروبار جاری رکھے گی۔انہوں نے ساتھ ہی مطالبہ کیا کہ سعودی عرب کی طرح ہماری حکومت بھی 24 گھنٹے کاروبار کی اجازت دے۔انہوں نے استفسار کیا کہ فیصلہ ساز بتائیں یومیہ بنیاد پر رزق کمانے والے 9 دن کہاں سے کھائیں گے؟تفصیلات کے مطابق کرونا کے پھیلائو کو روکنے کے لئے ملک بھر میں آج سے لاک ڈائون نافذ کیا جارہا ہے،وزیر اعظم عمران خان کے دفتر کی طرف سے ٹویٹ میں بتایا گیا کہ ملک میں کرونا کے بڑھتے کیسز کے پیش نظر حکومتِ پاکستان نے اس عید پر مکمل لاک ڈائون کا مشکل فیصلہ کیا ہے۔ٹویٹ میں عوام سے اپیل کی گئی کہ وہ کرونا وائرس کے پھیلا ئوکو روکنے کے لیے وضع کردہ ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد کو یقینی بنائیں۔بازار وں کی بندش کے پیش نظر جمعہ کو ملک بھر کی چھوٹی بڑی مارکیٹوں میں ریکارڈ توڑ رش رہا اور لوگ ایس او پیز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مارکیٹوں میں امڈ آئے،خریداروں کے رش کو دیکھتے ہوئے ایسا لگتا تھا کہ شہری چاند رات سے قبل ہی چاند رات منانے کے لئے بازاروں میں امڈ آئے ہیں شہریوں جن میں خواتین کی تعداد زیادہ تھی نے اپنے اور اپنے بچوں کے لیئے کپڑے ،جوتیاں اور چوڑیاں خریدیں اور یہ سلسلہ جمعہ کی شام چھ بجے تک جاری رہا ۔لاک ڈائون کے باوجود عید منانے کے لئے گھروں کو جانے والے افراد کی سہولت کے لئے ہفتہ اور اتوار کو پنجاب اور خیبرپختونخوا نے پبلک ٹرانسپورٹ چلانے کی اجازت دیدی ہے ،گاڑیاں نصف مسافروں کے ساتھ چلائی جاسکیں گی، پیر سے  بین اضلاعی اورصوبائی روٹس بند ہوں گے،تاہم نجی گاڑیاں،رکشہ،ٹیکسی ایس اوپیز کے تحت چل سکے گی، 16، 17 مئی کو انٹرسٹی ٹرانسپورٹ چلانے کی اجازت ہوگی،ادھر سند ھ حکومت نے کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے  16 مئی تک صوبے بھر میں پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی عائد کردی ہے۔صوبائی حکومت کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ 16 مئی تک اندرون شہر، انٹرسٹی اور بین الصوبائی پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی ہوگی۔ٹیکسی، اور رکشہ کو انتہائی ضروری یا طبی ضرورت کے تحت 50 فیصد گنجائش کیساتھ استعمال کیا جاسکے گا۔جبکہ نجی گاڑیوں کو بھی سفر کے دوران 50 فیصد گنجائش کی ایس او پیز پر عمل کرنا ہوگا۔جبکہ گڈز ٹرانسپورٹ کو پابندی سے مکمل استثنیٰ حاصل ہوگا۔کراچی میں سہراب گوٹھ پولیس نے کرونا وائرس ایس او پیز پر عمل درآمد کرتے ہوئے اندورن ملک آنے اور جانے والی بسوں اور کوچز کے سہراب گوٹھ بس ٹرمینل کو سربمہر کردیا۔ پولیس نے کارروائی کے دوران 9 مسافر کوچز کو ضبط کرکے 9 ڈرائیورز سمیت 15 افراد کو گرفتار کرلیا۔ محکمہ داخلہ سندھ نے کرونا ایس او پیز سے متعلق پابندیوں کا نیاحکم نامہ جاری کردیا ہے ۔نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ تمام سیاحتی تفریحی مقامات عید کی تعطیلات میں بند رہیں گے،   شہریوں کی نقل وحرکت محدود رہے گی  اور صوبے میں تمام کاروبار، مارکیٹیں 9 تا 16مئی بند رہیں گی تاہم بنیادی اشیائے ضرورت کی دکانوں پر پابندی کا اطلاق نہیں ہوگا۔نوٹیفکیشن میں مزید کہا گیا ہے، ریسٹورینٹس صبح 5 سے شام 7 بجے تک کھلے رہیں گے، عید بازار، چاند رات پر لگائے جانے والے تمام بازار بند ہوں گے، بیکری،کریانہ اسٹور، دوددھ،گوشت سبزی کی دکانیں صبح 5 سے شام 7 بجے تک کھلی رہیں گی، ریسٹورنٹ کو صرف ہوم ڈلیوری کی اجازت ہوگی،  بنیادی اشیائے ضرورت کی دکانوں پر پابندی کا اطلاق نہیں ہوگا۔نوٹیفکیشن کے مطابق اندرون شہر، انٹر سٹی اور بین الصوبائی پبلک ٹرانسپورٹ 16مئی تک بند رہیں گی۔