سکردو،کارگل روڈ کو کھولا جائے، عوامی ایکشن کمیٹی

عوامی ایکشن کمیٹی گلگت بلتستان کے مرکزی قائدین و کابینہ اور بلتستان ریجن کے کو آرڈینیٹرنجف علی اور سیاسی رہنما سید نذر عباس کاظمی نے چیئرمین عوامی ایکشن کمیٹی فداحسین کی قیادت میں سابق نگران وزیراعلیٰ ڈی آئی جی ریٹائرڈ میر افضل سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ ملاقات میں سابق چئیرمین عوامی ایکشن کمیٹی مولانا سلطان رئیس ،جہانزیب انقلابی ،عقیل خان ،افراز گل اور ظہیر قاسمی سمیت کابینہ کے سینئر ارکان شامل تھے۔سابق نگران وزیر اعلیٰ میر افضل نے بلتستان سے آئے ہوئے مہمانوں کو خوش آمدید کہا اور بلتستان کے سینئر سیاسی قائدین کی عوامی ایکشن کمیٹی میں شمولیت کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ بلتستان کی عوام پر امن اور اتحاد و اتفاق کی اعلیٰ مثال ہے گلگت کی عوام کو بھی فروعی اختلافات سے بالاتر ہوکر بلتستان کے عوام کی تقلید کرتے ہوئے اتحاد و بھائی چارے کی فضا قائم رکھنے کی ضرورت ہے گلگت بلتستان  میں عوامی ایکشن کمیٹی کا امن و امان کے حوالے سے کردار قابل تعریف ہے۔چیئرمین عوامی ایکشن کمیٹی فداحسین نے کہا کہ عوامی ایکشن کمیٹی نے گلگت بلتستان بھر سے با کردار افراد کو ایکشن کمیٹی کا حصہ بنایا ہے اور اب عوامی ایکشن کمیٹی ایک بہت بڑی عوامی تحریک بن چکی ہے سابق چئیرمین مولانا سلطان رئیس نے کہا کہ عوام ایکشن کمیٹی کو اپنا مسیحا سمجھتی ہے اور اپنے مسائل کے حل کیلئے عوامی ایکشن کمیٹی سے رابطہ کرتی ہے کو آرڈنیٹر بلتستان ریجن نجف علی نے کہا کہ سکردو کارگل کے منقسم خاندانوں کو ملانے کیلئے حکومت فوری طور پر سکردو کارگل روڈ کھولنے کیلئے اقدامات کرے۔ ہر آنے والی حکومت گلگت بلتستان کی عوام کو گمراہ کر رہی ہے کبھی آئنی صوبہ تو کبھی عبوری صوبہ اگر گلگت بلتستان کو صوبہ نہیں بنایاجا سکتا تو پھر کشمیر طرز کا سیٹ اپ دیا جائے جو کہ ہمارا بنیادی حق ہے ملاقات میں سید نذر عباس کاظمی ،حاجی عقیل خان جہانزیب انقلابی افرازگل اور ظہیر قاسمی نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ آخر میں تمام مہمانوں نے سابق نگران وزیراعلیٰ میر افضل کا دعوت پر شکریہ ادا کیا۔