معدنیات کے شعبے میں سرمایہ کاری کو آسان بنارہے ہیں، راجہ ناصر

صوبائی وزیر سیاحت راجہ ناصر علی خان نے کہاہے کہ گلگت بلتستان کے پہاڑ وںمیں موجود معدنی ذخائر سے فائدہ اٹھانے کے لئے صوبائی حکومت  بڑے سرمایہ کاروں کو سرمایہ کاری کے آسان مواقع فراہم کرنے کے لئے ٹھوس بنیادوں پر اقدامات کے لئے دن رات کوشاں ہے تاکہ یہاں کے مقامی افراد کو رائیلٹی اور روزگار کی مد میں مواقع ملیں۔وزیر اعلیٰ محکمہ معدنیات کے ادارے کو مزید وسعت دینے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لارہے ہیں تاکہ اس خطے میں موجود قدرتی معدنی ذخائر سے فائدہ اٹھایا جاسکے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گلگت بلتستان میں مائننگ اینڈ منرلز کو وسعت دینے کے عنوان سے منعقدہ ورکشاپ سے بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا ان کا مزید کہنا تھاکہ حکومت مائننگ کے شعبے میںکام کرنے والے غریب افراد کی مشکلات کے پیش نظر  ان تمام افراد کے لئے انشورنس پالیسی متعارف کروا رہی ہے تاکہ ان غریب افراد کی مشکلات کوکم کیا جا سکے ماضی میں اس اہم شعبے اور اس میں کام کرنے والے لوگوں کو یکسر نظر انداز کیا گیا جس کی وجہ سے خطے میں غربت رہی مگر موجودہ حکومت ان پہاڑوں میں چھپے ذخائر سے فائدہ اٹھا کر علاقے سے غربت کا خاتمہ کرے گی۔ سیکرٹری منرلز ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ 80کی دھائی کے بعد گلگت بلتستان میں کوئی جیالوجیکل سروے نہیں ہوا جس کے باعث یہاں پر موجود قدرتی ذخائر کے بارے میں صیح اندازہ نہیں حکومت مائننگ کے شعبے سے وابستہ کمپنیوں اور لیبر کو سہولیات فراہم کرنے کے لئے دن رات کوشاں ہے ورکشاپ میں شریک مائننگ سے وابستہ مختلف اداروں کے ذمہ داروں اور لیبر یونین کے افراد نے شرکت کی جبکہ مائننگ اور منرلز کے شعبے کے ماہر ڈاکٹر مرتضیٰ نے مائننگ کے دوران حفاظتی اقدامات اور گلگت بلتستان میں موجودہ قدرتی ذخائر کے حوالے سے  شرکاء کو بریف کیا اور اس شعبے کے حوالے سے تیار کردہ ڈاکومنٹری بھی دیکھی گئی اور کورس میں  شریک افراد کوسرٹیفکیٹ دیے گئے۔