غیر فعال سکولوں کوفعال بنایا جائے گا، آئی ٹی، آبپاشی کے محکمے بنائیں گے، خالد خورشید

وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالدخورشید نے کہا ہے کہ شعبہ انفارمیشن ٹیکنالوجی اورآبی نظام کی بہتری کیلئے آئی جی اورآبپاشی کے محکمے بنائیں گے۔غیرفعال سکولوں کوفعال،تمام اضلاع، دیہات اوریونین کونسلزکی ٹائون پلاننگ کرائی جائے گی۔سالانہ ترقیاتی پروگرام عوام کے معیارزندگی کی بہتری کومدنظررکھتے ہوئے تیارکیاجائے گا۔زراعت ،لائیوسٹاک پرخصوصی توجہ دیں گے جبکہ ترقیاتی منصوبوں کے ریویجن کی حوصلہ شکنی کی جائے گی۔گلگت اورسکردوکی مین شاہراہوں کوپیورمشین کے ذریعے میٹل کیاجائے گا۔یہ باتیںانہوں نے سالانہ ترقیاتی پروگرام کی تیاری اور ترقیاتی بجٹ کے معاشی اصولوں کے مطابق استعمال کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس میں کہیں۔انہوںنے متعلقہ حکام کوہدایت کی کہ مفادعامہ کے ٹارگٹڈمنصوبوں کومقررہ مدت میں مکمل کیاجائے۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے سالانہ ترقیاتی پروگرام (ADP) کی تیاری کے حوالے سے منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پسماندہ علاقوں کی تعمیر و ترقی اور عوام کی خوشحالی پر خصوصی توجہ دے گی۔ سالانہ ترقیاتی پروگرام (ADP) عوام کی معیار زندگی بہتر بنانے اور بنیادی ضروریات کو مدنظررکھتے ہوئے تیار کیا جائے گا۔ وزیر اعظم پاکستا ن عمران خان کے ویژن اور ہدایات کو مدنظر رکھتے ہوئے پورے گلگت  بلتستان کے تمام اضلاع، گائوں او ریونین کونسلز کی ٹائون پلاننگ کرائی جائے گی۔ جامع منصوبہ بندی کے تحت تعمیر و ترقی کو آگے بڑھایا جائے گا۔ سوشو اکنامک ڈویلپمنٹ کے(Socio economic development) منصوبے آئندہ مالی سال کے ترقیاتی پروگرام میں شامل کئے جائیں گے۔ غیر فعال سکولوں کو فعال کرنے پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے کہاکہ تھرو فارورڈ کو کم کیا جائے گا تاکہ ترقیاتی منصوبے مقررہ مدت میں مکمل ہوسکیں۔ ترقیاتی منصوبوں کے ریویجن کی حوصلہ شکنی کی جائے گی۔ انفارمیشن ٹیکنالوجی اور آبی نظام کو بہتر بنانے کیلئے آئی ٹی اور ایریگیشن کے محکمے قائم جائیں گے ۔ منصوبوں کے معیار اوررفتار کویقینی بنانے کیلئے مانیٹرنگ اور ایولیویشن کے نظام کوبہتر بنایا جائے گا۔ گلگت  بلتستان میں بیشتر آبادی کا انحصار زراعت اور لائیو سٹاک پر ہے جس کو مدنظر رکھتے ہوئے زراعت اور لائیو سٹاک پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ گڈ گورننس کو یقینی بناتے ہوئے گلگت  بلتستان کو ایک ماڈل صوببہ بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں گے۔ وزیر اعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے ترقیاتی بجٹ کے معاشی اصولوں کے مطابق استعمال کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پبلک سروس ڈیلوری کو بہتر بنایا جائے۔ تمام محکمے معاشی اصولوں کے عین مطابق ترقیاتی بجٹ کے استعمال کو یقینی بنائیں۔ مفاد عامہ کے ٹارگٹڈ سکیموں پر خصوصی توجہ دی جائے اور مقررہ مدت میں ان منصوبوں کو مکمل کیا جائے۔ وزیر اعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے اس موقع پر کہا کہ گلگت اور سکردو کے مین شاہراہوں کو پیور مشین کے ذریعے میٹل کیا جائے گا۔ گلگت ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور سکردو ڈویلپمنٹ اتھارٹی ان شاہراہوں کی تزئین و آرائش اور سٹریٹ لائٹس کی تنصیب کو یقینی بنائیں۔ ترقیاتی بجٹ کے استعمال میں کسی قسم کی بھی بے ضابطگی سے اجتناب کیا جائے۔ محکموں کی استعداد کار میں اضافے اور کارکردگی کو بہتر بنانے پر خصوصی توجہ دی جائے۔ پبلک سروس ڈیلوری سے متعلقہ محکمے ریسرچ سنٹرز قائم کرے تاکہ عوام کو زیادہ فائد پہنچ سکے۔