اسرائیلی وزیراعظم کیخلاف ہزاروں افراد کا مظاہرہ

تل ابیب میں اسرائیلی حکومت کے خلاف بڑا مظاہرہ کیا گیا جس میں ہزاروں افراد شریک ہوئے اور مظاہرین کی جانب سے جنگ بندی اور نئے انتخابات کا مطالبہ کیا گیا۔ اسرائیلی میڈیا کے مطابق مظاہرین نے بعض مقامات پر آگ لگا کر سڑک بند کر دی جبکہ پولیس نے مظاہرین کے خلاف طاقت کا استعمال کرتے ہوئے متعدد مظاہرین کو گرفتار کر لیا۔ اسرائیلی پولیس کا کہنا ہے کہ مظاہرین نے غیر قانونی طور پر سڑک کوبلاک کیا جس پر ان کے خلاف ایکش لیا گیا۔ دوسری جانب اسرائیل، حماس جنگ کے 9 ماہ مکمل ہونے پر اسرائیل میں اتوار سے سے ایک ہفتے کے لیے حکومت مخالف احتجاج کا آغاز کر دیا گیا ہے، حکومت مخالف رہنما اور جماعتیں ایک ہفتے تک مسلسل چلنے والے ان مظاہروں میں غزہ میں جنگ بندی معاہدے، اسرائیلی مغویوں کی واپسی اور نیتن یاہو حکومت کے استعفے سمیت نئے انتخابات کا مطالبہ کریں گے۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق نیتن یاہو حکومت مخالف قوتوں نے اس احتجاج کو "مزاحمت کا ہفتہ" یعنی مزاحمت کے 7 دن کا نام دیا ہے، ان مظاہروں کے دوران اسرائیل کی بڑی شاہراں کو بند کر دیا جائیگا اور ساتھ ہی تل ابیب میں موجود ملٹری ہیڈکواٹر کے سامنے بھی احتجاج کیا جائے گا۔