ہنزہ،گلیشیر کا پگھلاوتیز، سیلاب کا خدشہ، ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کی تیاریاں شروع

ہنزہ میں گلیشیئر کا پگھلائوتیزہونے سے سیلاب کاخدشہ پیداہوگیا ہے اورہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے تیاریاں شروع کردی گئیں ہیں۔پانی کے اخراج کے باعث شاہراہ قراقرم کے قریب جھیل بن گئی جس سے پل کوخطرہ لاحق ہوگیا۔وزیراعظم کے حکم پرمعاون خصوصی برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم ہنگامی دورے پرہنزہ پہنچ گئے جہاں انہوں نے ماہرین کی ٹیموں کوالرٹ رہنے کی ہدایت کی۔وزیراعظم کے معاون خصوصی امین اسلم نے وزیراعلیٰ خالدخورشید سے ملاقات کی جس میں گلیشیئرصورتحال سے نمٹنے کے لئے وزیراعلیٰ نے فنڈزمختص کرنے کی یقین دہانی کرائی۔امین اسلم نے نگروادی ہوپرمیں سیاحتی ریزورٹ لیوکیمپ کاافتتاح کیا۔انہوں نے کہا کہ سیاحتی مقام سے مقامی افرادکوروزگارملے گا۔تفصیلات کے مطابق  تیزی سے گلیشئرپگھلنے کے عمل نے پاکستان میں سیلاب سے متعلق خطرے کی گھنٹی بجادی،ہنزہ اوراپرہنزہ کے کئی علاقوں میں گلیشئرپگھلنے سے سیلاب اورطغیانی کا خدشہ ہے،گلیشئر پگھلنے کی ممکنہ تباہ کاری سے بچنے کی پیشگی تیاریاں شروع کردی گئیں ، وزیراعظم کی ہدایت پر معاون خصوصی برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین نے اسلم ہنگامی دورے کے دوران  ہنزہ اور اپر ہنزہ میں گلیشئر کا جائزہ لیتے ہوئے ہوپراور نگرمیں بھی ماہرین کی ٹیموں کوالرٹ رہنے کی ہدایت کردی ، علاقے میں ممکنہ طور پر خطرے والے مقامات کی نشاندہی بھی کردی گئی ،  گلیشیئرپگھلنے سے انڈس ریور میں پانی کا بہائوبڑھنے یاسیلاب کازیادہ خطرہ ہے۔بٹورہ گلشر کے پھٹنے سے پانی کا رخ تبدیل ہو گیا  شاہراہ قراقرم کے قریب ایک جھیل بن گئی۔ جہاں سے پانی کا اخراج جاری ہے۔ پانیسے  شاہراہ قراقرم پر ایک پل کو بھی خطرہ ہے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم نے کہا کہ پاکستان میں کلایمٹ چینج ایک حقیقت ہے اور پاکستان میں بھی اس کے اثرات نظر آرہے ہیں جہاں میدانی علاقوں میں سخت گرمی ہے وہیں پر ان پہاڑی علاقوں میں گلیشئرز کے پگھلنے میں تیزی آیی ہے۔ بٹورہ گلیشر کا پھٹنا بھی اس عمل کا حصہ ہے پانی کا رخ بدل جانے سے مقامی آبادی کے ساتھ ساتھ ٹین بلین سونامی پروجیکٹ کے درختوں کے بھی سوکھ جانے کا خطرہ ہے۔ان سب حالات کا جائزہ لیا ہے اور وفاقی اور گلگت بلتستان حکومت کو آگاہ کردیاہے جلد ہی بحالی کے اقدامات شروع کریں گے۔ ملک امین اسلم نے وزیر اعلی جی بی سے ملاقات میں گلیشئر کا معاملہ اٹھادیا اور زیادہ گلیشئر پگھلنے کے نتیجے میں کئی علاقوں کو طغیانی سے بچانے پر بھی مشاورت کی،وزیر اعلی جی بی نے گلیشئرسے بچائوکے لئے فنڈز مختص کرنیکی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا ایم ایل ایزکے فنڈز کا 5فیصددرخت لگانے اور گلیشئر تباہی سے بچانے پر خرچ ہوگا،معاون خصوصی امین اسلم کا کہنا تھا کہ اپرہنزہ کے علاقوں میں زیادہ نقصان کااندیشہ ہے، آبادیوں کو محفوظ بنانے،صورتحال سے نمٹنے کی تیاریاں کررہے ہیں۔دریں اثناء سیاحتی رزورٹ، "لیو کیمپ" کا افتتاح ضلع نگر کے وادی ہوپر میں کیا گیا۔منصوبے کا مقصد برفانی چیتے کے تحفظ اور ماحولیات دوست  سیاحت کو فروغ دینا ہے۔وزیر اعظم کے مشیر برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم نے ضلع نگر میں وادی ہوپر کے علاقے ہونوونو میں "لیو کیمپ" کا افتتاح کیا۔ افتتاحی تقریب میں ڈپٹی کمشنر نگر ذوالقرنین خان ، اسنو لیپارڈ فاؤنڈیشن اور گلاف II کے حکام اور مقامی کمیونٹی کنزرویشن ممبران نے شرکت کی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ملک امین اسلم نے کہا کہ ہم نے  (ایس ایل ایف) کے ذریعے وادی ہوپر میں ماحولیات دوست  رزورٹ ہوپر میں  تیار کیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ برفانی چیتے کے رہائشی علاقوں میں تحفظ سیاحت کی ترقی  اور برفانی چیتے کے تحفظ کو فروغ دینے کا یہ  ایک انوکھا اقدام ہے"۔ ملک امین اسلم نے کہا کہ اس منصوبے سے حاصل ہونے والی آمدنی مقامی آبادی کودی جائے گی تاکہ وہ اس علاقے میں برفانی چیتے سمیت جنگلی حیات  کے تحفظ اور ماحولیات دوست سیاحت کے ترقی کے لئے ہمارے شراکت دار ہوں۔ وزیر اعظم کے مشیر نے کہا کہ اس منصوبے سے ، مقامی افراد کو روزگار ملے گا ، مقامی برادری کی معاش  کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی اور جنگلی حیات کے تحفظ اور ماحولیات کے فروغ میں مدد ملے گی۔گلگت بلتستان کی ایک انتہائی خوبصورت برفانی چیتے والی وادی میں ایک سال کے اندر 'کیمپ لیو' حقیقت بنتا دیکھ کر مجھے بہت خوشی ہوئی ۔ انہوں نے ایس ایل ایف کو وادی میں میں ایسے ماڈل ایکو ٹورزم ریسورٹ تیار کرنے پر مبارکباد پیش کی ملک امین اسلم نے کہا  ماحولیات دوست سیاحت اورجنگلی حیات کے تحفظ کے لئے پورے پاکستان کا ماڈل سیاحتی مقام ہے۔ ملک امین اسلم نے امید ظاہر کی کہ ملک بھر سے لوگ یہاں  دورہ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ یہ انوکھا منصوبہ  پاکستان کا سب سے خوبصورت سیاحتی مقام ہوگا۔ ملک امین اسلم نے علاقے میں سڑک  کے مسائل کو بہتر بنانے میں مدد کا وعدہ کیا۔ ملک امین اسلم نے کہا کہ گلاف منصوبے میں ہوپر کو شامل کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اس علاقے کے  نوجوانوں کو علاقے کی ترقی کے لیے وزیر اعظم کی قرض اسکیم سے فائدہ اٹھانے کے لئے اقدامات اٹھائے جائیں گے۔علاقائی پروگرام منیجر ، حسین چیتے نے  سنو لیپرڈ فاؤنڈیشن گلگت بلتستان کے پروگرام منیجر حسین علی بتایا کہ مقامی کنزرویشن کمیٹی کے توسط سے 10 ملین کی لاگت سے منفرد ریسارٹ لیو کیمپ قائم ہوا۔ لیو کیمپ وپر کے اوپری حصے ہنونو میں 10 کنال کے رقبے پر محیط ہے ، یہ ماحولیاتی نظام کی بنیاد پر تعمیر کیا گیا ہے ، یہ ریزوٹ سیاحوں کی معلومات اور سہولت مرکز ، لکڑی کی جھونپڑیوں ، سیاحوں کے رہنے کے لئے خیمے ، ثقافتی میوزیم ، روایتی باورچی خانے پر مشتمل ہے۔ یہ علاقہ برفانی چیتے کا مسکن بھی ہے ، ہوپر گلیشیئر ، میئر گلیشیر ، الٹر چوٹی ، گولڈن چوٹی ، کیپل چوٹی ، قریبی پہاڑوں کی سیر کرنے کے نظارے پیش کرتا ہے۔ نگر کے ڈپٹی کمشنر ذوالقرنین خان نے کہا کہ ایس ایل ایف کی جانب سے مقامی برادری کے اشتراک سے ایک انوکھا سیاحتی مقام تیار کیا گیا ہے جس میں ایک انوکھا اور جامع سیاحتی مقام تیار کیا گیا ہے جہاں چڑھنے ، رہائش ، ٹریکنگ ، ٹورنگ اور سیاحوں کے مقامات کے نظارے دستیاب ہیں۔ ڈپٹی کمشنر نے تجویز کیا کہ اس ماڈل کو ملک کے دیگر حصوں میں بھی تیار کیا جانا چاہئے۔ ذوالقرنین خان اس منصوبے کا مقصد نہ صرف سیاحت کی ترقی بلکہ مقامی لوگوں کی معاشرتی معاشی حالت کو اپ گریڈ کرنا ہے۔ ملک امین اسلم نئے قائم کردہ لیو کیمپ کی لکڑی کی جھونپڑیوں میں ٹھہرے اور قریبی پہاڑوں کی سیر کی اور مقامی پکوان سے لطف اندوز ہوئے۔ مقامی کمیونٹی کے نمائندوں نے مہمانوں کو روایتی ٹوپی اور تحفہ پیش کیا۔ دریں اثناء آب و ہوا سے متعلق وزیر اعظم کے معاون خصوصی نے ہوپر گلیشیر کے اوپری حصے میں ہوپر ویلی میں صفائی مہم "کلین اینڈ گرین نگر" میں شرکت کی۔ کلین اینڈ گرین نگر پروجیکٹ کا آغاز ضلعی انتظامیہ نے ماحولیاتی ہراس کے خطرات اور کچرے کے انتظام کی ضرورت کے بارے میں مقامی لوگوں میں شعور بیدار کرنے کے لئے شروع کیا ہے۔