گلگت، لوڈشیڈنگ کے خلاف کشروٹ،ذوالفقار آباد اور جوٹیال کے عوام سڑکوں پر آگئے

بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ کے خلاف بچے بوڑھے جوان اور خواتین سڑکوں پر نکل آئے کشروٹ، ذوالفقار آباد اور جوٹیال کے مختلف مقامات پر خواتین سمیت مکینوں نے سڑک کو ہر قسم کی ٹریفک کے لئے بند کرکے محکمہ برقیات و حکومت کے خلاف احتجاج دھرنا دیا اور کہا کہ ایک طرف سے سمارٹ  میٹر کی تنصیب کے ذریعے مخصوص ٹھیکیداروں کو نوازا جارہا ہے تو دوسری جانب لوڈشیڈنگ کے خاتمے کے لئے کوئی اقدام نہیں اٹھایا گیا ہے ابھی تک ایک انچ سڑک حکومت کی جانب سے تعمیر نہیں ہوئی ہے بجلی کا ایک میگاواٹ کا ابھی تک اضافہ نہیں ہوا ہے اور لوڈشیڈنگ کی وجہ سے گھریلو کام، بچوں کے امتحانات کی تیاری نہیں ہورہی ہے دفاتر کے امور ٹھپ ہوگئے ہیں صاحب حیثیت افراد کے پاس سپیشل لائن ہے اور عام عوام کے پاس بجلی بھی نہیں ہے حکومت بجلی کے اس غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کو ختم کرنے میں کامیاب نہیں ہوئی تو سمارٹ میٹرز اکھاڑ کر ان کو جلایا جائے گا اور حکومتی ایوان کا گھیراؤ کیا جائے گا۔