Image

ایران میں مزید 2سائنسدانوں کی پراسرار ہلاکت معمہ بن گئی

ایران میں ایرواسپیس ڈویڑن سے وابستہ مزید دو سائنسدان پر اسرار طور پر ہلاک ہوگئے۔ایرانی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق ایرانی انقلابی گارڈز کور کی ایرو اسپیس ڈویژن کے دو ارکان ڈیوٹی کے دوران دو مختلف واقعات میں ہلاک ہوگئے ہیں۔ایرانی میڈیا کے مطابق ایروو اسپیس ڈویژن سے وابستہ علی کمانی تہران کے قریب ایک پر اسرار کار حادثے میں ہلاک ہوئے جبکہ 33 سالہ محمد عبدس کی ہلاکت جنوبی صوبے سمنان میں ہوئی تاہم انکی موت کی وجوہات سے متعلق کوئی تفصیل سامنے نہیں آئی۔واضح رہے کہ ایران میں گزشتہ چند ہفتوں سے دفاعی پروگرام پر کام کرنے والے سائنسدانوں کی پر اسرار اموات کا سلسلہ جاری ہے، ان ہلاکتوں کے پیچھے مبینہ طور پراسرائیل کا ہاتھ قرار دیا جارہا ہے۔رواں ماہ کے آغاز پر ایرانی فوج کے کرنل علی اسماعیل زادہ کی ایک کار حادثے میں موت ہوئی تھی جبکہ 31 مئی کو ایرواسپیس انجینئر ایوب انتظاری پراسرار طور پر ہلاک ہوگئے تھے، اسرائیلی میڈیا نے دعویٰ کیا تھا کہ ایوب انتظاری ایران کے میزائل اور ڈرون پروگرام پر کام کررہے تھے۔22 مئی کو کرنل حسن سید کو دارالحکومت تہران میں موٹر سائیکل سواروں نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا۔26 مئی کو ایرانی وزارت دفاع نے تصدیق کی تھی کہ تہران کے قریب ایک ملٹری کمپلیکس کے قریب ہونے والے حادثے میں میں انجینئر احسان ہلاک اور انکا ایک ساتھی زخمی ہوا ہے، نیویارک ٹائمز کی خبر کے مطابق انجینئر احسان کی موت ایک مبینہ اسرائیلی ڈرون حملے میں ہوئی تھی۔