Image

الظواہری پر حملے میں پاکستانی سرزمین استعمال نہیں ہوئی، دفتر خارجہ

ترجمان دفتر خارجہ عاصم افتخار احمد نے کہا ہے کہ(آج) 5 اگست کو بھارت کے مقبوضہ جموں کشمیر میں بھارتی یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کو تین سال مکمل ہو جائیں گے۔ تفصیلات کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ عاصم افتخار احمد نے صحافیوں کو ہفتہ وار میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ(آج) 5 اگست کو بھارت کے مقبوضہ جموں کشمیر میں بھارتی یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کو تین سال مکمل ہو جائیں گے، بھارت مسلسل اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی قراردادوں اور انسانی حقوق قوانین کی خلاف ورزی کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ جموں کشمیر میں 9 لاکھ سے زائد بھارتی افواج قابض ہیں، مقبوضہ جموں کشمیر میں لاک ڈان، انٹرنیٹ کی بندش اور کشمیریوں کے ماورائے عدالت قتل کیے جا رہے ہیں، کشمیری لیڈر شپ کو حق خودارادیت کے لیے آواز اٹھانے پر قید میں رکھا ہوا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارت کے غیر قانونی اقدامات کے خلاف یومِ استحصال منایا جائے گا، وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری کمبوڈیا کے دورے پر ہیں، وزیر خارجہ کمبوڈیا میں 29 ویں آسیان ریجنل فورم میں شرکت کریں گے۔ عاصم افتخار احمد نے کہا کہ پاکستان چین کی علاقائی حدود کا احترام کرتا ہے، ایمن الظواہری کارروائی میں پاکستان کی فضائی حدود استعمال ہونے کے کوئی ثبوت نہیں ملے، امریکی سفیر کی جانب سے پاک افغان باڈر دورے کی تفصیلات نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان آسیان کا سیکٹورل ڈائیلاگ پارٹنر ہے، آسیان علاقائی اجلاس کی سائیڈ لاینز پر دیگر رکن ممالک کے وزرائے خارجہ سے ملاقاتیں ہوں گی، وزیر خارجہ باہمی ملاقاتوں میں مسئلہ کشمیر کو اجاگر کریں گے، آسیان کی صدارت کمبوڈیا کے پاس ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان ون چائنا پالیسی کی حمایت کرتا ہے، کشمیریوں کے یوم استحصال پر 5 اگست 2019 کے حوالے سے متعدد سرگرمیوں کا انعقاد کیا جائے گا، یہ سرگرمیاں وفاقی و صوبائی دارالحکومتوں میں منعقد کی جائیں گی۔