Image

کسی کو امن سے کھیلنے نہیں دیں گے، گورنر

گورنر گلگت بلتستان سید امجد زیدی نے کہاہے کہ نواسہ رسول حضرت امام حسین علیہ السلام کی ذات نکتہ اتحاد ہے امام حسین نے دین محمدی کی اصلاح اور اسلام کی سربلندی کیلئے عظیم قربانی پیش کی ان کی یاد میں نکلنے والے ماتمی جلوسوں کو فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے گی جلوسوں کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کی ہرگز کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی صوبائی حکومت ماتمی جلوسوں کے پرامن انعقاد کیلئے تمام تر انتظامات کررہی ہے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ گلگت بلتستان کے عوام یوم عاشور پر اتحاد ویکجہتی کا عملی مظاہرہ کریں اور اسلام دشمن قوتوں کے عزائم خاک میں ملائیں اسلام دہشت گردی اور انتہا پسندی کی اجازت نہیں دیتا ہمارا دین امن رواداری بھائی چارگی آخوت کا درس دیتا ہے جو بدامنی کی باتیں کررہے ہیں وہ اسلام کی حقیقی تعلیمات سے نابلد ہیں ایسے عناصر کے ساتھ آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا صوبائی حکومت اس بارے میں پوری طرح سے تیار ہے کسی کو علاقے کا امن خراب کرنے نہیں دیں گے گلگت بلتستان کی اہمیت پہلے سے زیادہ کئی گنا بڑھ چکی ہے اس حساس اور اہم علاقے پر تمام ممالک کی نظر ہے اس کے امن کو برقرار رکھنے کیلئے کوئی بھی دقیقہ فروگزاشت نہیں کریں گے علمائے کرام عمائدین علاقہ اور میڈیا سے وابستہ افراد امن کی مجموعی صورت حال کو برقرار رکھنے کیلئے کردار ادا کریں اور امن دشمنوں کی سازشوں کو ناکام بنائیں انہوں نے کہاکہ بعض قوتیں نہیں چاہتی ہیں کہ ہمارے خطے میں ترقی ہو خوشحالی آئے دشمن بدامنی پیدا کرنے کے درپے ہیں ہمیں اپنی صفوں میں اتحاد و یگانگت پیدا کرنا ہوگا وزیراعلی خالد خورشید کی سربراہی میں صوبائی حکومت یوم عاشور کے پرامن انعقاد کیلئے دن رات ایک کرکے کام کررہی ہے عوام الناس افواہوں پر کان نہ دھریں یوم عاشور کے پرامن انعقاد کیلئے پولیس فرنٹ پر رہے گی جی بی سکاؤٹس کے اہلکار بھی ساتھ ساتھ ہونگے ضرورت پڑنے پر فوج بھی طلب کی جائے گی عوام الناس کی جان ومال کا تحفظ ہماری اولین ذمہ داری ہے محرم الحرام ایثار قربانی کا عظیم درس دیتا ہے فتنہ فساد کی باتیں کرنے والے کسی مسلک کے خیرخواہ نہیں ہوسکتے انہوں نے کہاکہ غواڑی میں یوم عاشور کے جلوس کے روٹ پر پیدا ہونے والے تنازعے کے حل کیلئے صوبائی حکومت اور امن کمیٹی کام کررہی ہے جلد بریک تھرو ہوگا علمائے کرام امن کی بات کررہے ہیں فریقین میں سنجیدہ لوگ بھی ہیں جو امن کو کسی صورت میں خراب کرنے کے حق میں نظر نہیں آتے ہیں یہ لوگ امن کے خواہاں نظر آتے ہیں مگر بعض لوگ ضد بازی سے کام لے رہے ہیں ایسے لوگوں کو سمجھایا جارہاہے کہ امن و امان پر حکومت کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی