Image

ایف سی پی ایس کی ٹریننگ شروع کرنے کی باقاعدہ منظوری


گلگت:وزیراعلی گلگت بلتستان خالد خورشید کے گلگت بلتستان میں صحت عامہ کے روایتی نظام کو بدلنے کیلئے خصوصی اقدامات کے تحت پہلی بار پراونشل ہیڈ کوارٹر ہسپتال گلگت میں ایف سی پی ایس کی ٹریننگ شروع کرنے کی باقاعدہ منظوری مل گئی ہے۔ کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز پاکستان (CPSP ) نے PHQ ہسپتال گلگت کو میڈیکل، ریڈیالوجی اور پیڈز میڈیسن کے شعبے میں FCPS ٹریننگ کے لیے باقاعدہ طور پر این او سی جاری کر دی ہے اور جلد ہی گلگت بلتستان کے سب سے بڑے ہسپتال میں صحت عامہ کے مذکورہ شعبوں میں FCPS تربیت کا آغاز کیا جائیگا۔  واضح رہے کہ وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید کی خصوصی کاوش پر گلگت بلتستان  میں پہلی بار پوسٹ گریجویٹ ٹریننگ، ہاؤس جاب اور نرسنگ کلاسز کے باقاعدہ آغاز کیلئے انتظامات اور سہولیات کا جائزہ لینے کیلئے کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز پاکستان(CPSP) کے صدر کی زیر قیادت 18 رکنی ٹیم نے حالیہ دنوں میں گلگت، سکردو اور چلاس کے ہسپتالوں کا دورہ کیا تھا۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید نے گلگت پراونشل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں ایف سی پی ایس کی ٹریننگ کیلئے منظوری کو تاریخ ساز لمحہ قرار دیتے کہا ہے کہ صحت عامہ کی سہولتوں کو بہتر بنانا حکومت کی اولین  ترجیح ہے اورصحت کے شعبے میں اصلاحات کا مقصد عوام کو گھر کی دہلیز پرمعیاری، بہتر اور جدید طبی سہولتوں کی فراہمی ہے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ گلگت بلتستان کے شہریوں کو صحت کی بنیادی سہولیات فراہم کرنا سابق حکومتوں کی ترجیحات میں شامل نہیں تھا اور تحریک انصاف کی حکومت نے قلیل مدت میں صحت کے شعبے میں اہم منصوبوں کو پایہ تکمیل تک پہنچایا ہے اور گلگت پراونشل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں ایف پی ایس سی کی ٹریننگ شروع ہونے سے نہ صرف عوام کو علاج معالجہ کی بہترین سہولیات یقینی بنائی جائیگی  بلکہ گلگت بلتستان کے ڈاکٹروں کیلئے بھی طبی استعداد بڑھانے کے مواقع بھی دستیاب ہونگے۔