38

بلدیاتی الیکشن کی تیاریاں تیز،ووٹر لسٹوں پر اعتراضات کی سماعت کیلئے اپیلٹ اتھارٹی قائم

چیف الیکشن کمشنر نے ووٹر لسٹوں میں ناموں کے اندراج اور اخراج کے فیصلوں پر اپیل کیلئے تمام اضلاع میںاپیلیٹ اتھارٹی قائم کر دی ہے۔ یہ اتھارٹی رجسٹریشن آفیسرز کی جانب سے ووٹر لسٹوں میں  اندرج اور اخراج کے فیصلوں کیخلاف اپیلوں کی سماعت کریگی۔ نوٹیفکیشن کے مطابق ڈی سی گلگت کو ضلع گلگت کے تینوں حلقوں کیلئے اپیلیٹ اتھارٹی آفیسر مقرر کیا گیا ہے، نگر کے دونوں حلقوں کیلئے ڈی سی نگر، اسی طرح کھرمنگ،شگر،استور،دیامر، گانچھے اور غذر کے ڈپٹی کمشنرز اپنے متعلقہ اضلاع کے انتخابی حلقوں میں اپیلیٹ اتھارٹی آفیسرز ہونگے۔ رجسٹریشن آفیسرز کی جانب سے ووٹر لسٹوں میں ناموں کے اخراج یا اندراج کے حوالے سے کسی کو بھی شکایات ہیں تو اس فیصلے کیخلاف وہ اپنے متعلقہ حلقے کے اپیلیٹ اتھارٹی آفیسر کے سامنے اپیل دائر کرینگے۔ تاکہ ووٹرلسٹوں کے حوالے سے عوام کے تحفظات اور شکایات کا ازالہ ہو سکے۔ دوسری جانب سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ووٹرلسٹوں میں شکایات کے ازالے اورفہرستوں کو شفاف بنانے کیلئے اپیلیٹ اتھارٹی کا قیام بلدیاتی انتخابات کی تیاریوں کا حصہ ہے۔ ووٹرلسٹوں کے حوالے سے کئی سیاسی جماعتوں کو تحفظات ہیں دوسری جانب صوبائی حکومت بلدیاتی انتخابات جلد از جلدکرانے پر غور کررہی ہے ۔ اس حوالے سے الیکشن کمیشن نے بھی تیاریاں شروع کر دی ہیں۔ ذرائع کے مطابق صوبائی وزیر بلدیات نے مارچ اپریل میں بلدیاتی انتخابات کرانے پرزور دیا تھا تاہم الیکشن کیلئے درکار تیاریاں نہ ہونے کی وجہ سے جون یا جولائی تک الیکشن ہو سکتے ہیں۔