97

جنوبی افریقا میں پالتو بلیوں اور کتوں کی کورونا ٹیسٹنگ کا فیصلہ

جنوبی افریقا میں پالتو بلیوں اور کتوں کی کورونا ٹیسٹنگ کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق جنوبی افریقا میں چند ہفتے قبل ایک پالتو بلی میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی جس کے بعد اب حکام نے پالتو بلیوں اور کتوں کی کورونا ٹیسٹنگ کا فیصلہ کیا ہے۔

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہےکہ انسانوں کے ساتھ نظر آنے والے صرف ایسے پالتو جانور جن میں بخار اور سانس لینے میں دشواری کی علامات پائی جائیں گی ان کی فوری کورونا ٹیسٹنگ کی جائے گی جب کہ پالتو جانور میں کورونا مثبت آنے کی صورت میں انہیں لازمی طور پر گھر میں قرنطینہ کیا جائے گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آنے پر پالتو جانوروں کو لازمی طور پر آئسولیشن سینٹرز نہیں بھیجا جائے گا کیونکہ اب تک جانوروں سے انسانوں میں کورونا وائرس کی منتقلی کے کوئی شواہد سامنے نہیں آئے ہیں۔

جنوبی افریقی حکام کا پریس بریفنگ میں کہنا تھا کہ اگر کورونا سے متاثرہ پالتو جانور کا مالک بھی کورونا میں مبتلا ہے اور شدید بیمار یا زائد العمر ہے تو پھر جانوروں کو قرنطینہ سینٹر بھجوایا جائے گا۔

حکام نے کہا کہ شہریوں کو ایک بار پھر تاکید کی ہےکہ وہ اپنے پالتو جانوروں کو خود سے 2 میٹر کے فاصلے پر رکھیں اور ان کے ساتھ واک کے دوران بھی یہی اصول اپنائیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق جنوبی افریقا میں رواں ماہ ایک بلی میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی اور محکمہ صحت کے حکام کو شبہ ہےکہ کورونا میں مبتلا ماں اور بیٹی سے اس بلی میں وائرس منتقل ہوا۔

چین میں موجود عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی ٹیم نے کہا ہے کہ ابھی کورونا وائرس کے کسی جانور سے پھیلنے کے شواہد ابھی تک نہیں ملے۔

عالمی ادارہ صحت کی ٹیم کورونا وائرس کی ابتداء کی تحقیق کیلئے چین کے شہر ووہان میں موجود ہے جہاں اس نے جانوروں کے گوشت کی خرید و فروخت والی مارکیٹ اور دیگر مقامات کا جائزہ لیا۔

اب عالمی ادارہ صحت کی ٹیم نے ووہان میں پریس کانفرنس کی ہے۔