135

عارضی ملازمین کی مستقلی کامعاملہ صوبائی کابینہ میں بھجوانے کا فیصلہ

گلگت( جنرل رپورٹر) عارضی ملازمین کی مستقلی کے معاملے کو اسمبلی کی بجائے صوبائی کابینہ بھجوانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ محکمہ قانون نے کنٹریکٹ ملازمین کی مستقلی کے بل میں موجود سقم کو دور کر دیا ہے اور بہت جلد کابینہ کو بھجوایا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق کنٹریکٹ ملازمین کے بل کو دوبارہ اسمبلی میں پیش کرنے پر غور کیا گیا تھا تاہم اب فیصلہ کیا گیا ہے کہ اسمبلی کی بجائے صوبائی کابینہ میں ہی پیش کیا جائے گا اور کابینہ بل کی  دوبارہ منظوری دیگی۔اس معاملے کو صوبائی کابینہ کے آئندہ ہونے والے اجلاس کے ایجنڈے میں شامل کیا جائے  گا، اب یہ کابینہ پر منحصر ہے کہ وہ اس بل کی منظوری کن شرائط کی بنیاد پر دیتی ہے۔ کابینہ فیصلہ کریگی کہ پورے چھ ہزار ملازمین کو مستقل کرنا ہے یا مخصوص ملازمین کو۔ یاد رہے کہ سابق نون لیگ کی حکومت کے آخری ایام میں جی بی کے تمام کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کا بل اسمبلی میں منظور کیا گیا تھا۔  تاہم گورنر نے بل پر اعتراض لگاتے ہوئے نظر ثانی کیلئے دوبارہ اسمبلی کو بھجوادیا۔ اسمبلی  میں بل کو پرائیوٹ بل کے طور پر پیش کرتے ہوئے بغیر کسی بحث کے دوبارہ منظوری دیدی گئی تھی۔اس کے بعد گورنر نے بل پر دستخط بھی کر دیئے اور پھر گزٹ آف پاکستان میں شائع بھی ہوگیا۔ بل کی منظوری کے بائوجود کنٹریکٹ ملازمین کی مستقلی کا معاملہ بدستور لٹکا رہا۔ اسی دوران ایک انکشاف یہ بھی ہوا تھا کہ بل میں ڈیپوٹیشن پر آنے والے ملازمین کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ حالانکہ بل کے اصل مسودہ میں ڈیپوٹیشن والے ملازمین کا کوئی ذکر نہیں تھا۔ ذرائع کے مطابق وزارت قانون اور سروسز ڈیپارٹمنٹ نے بل میں کئی غلطیوں اور شقوں پر سوال اٹھایا گیا۔ اب زرائع کا کہنا ہے کہ وزارت قانون نے بل میں موجود سقم کو دور کر دیا ہے۔