81

غریب اور مستحق افراد کی مدد کرنے کیلئے جامعہ پالیسی بنائی جائے ، وزیراعلیٰ

گلگت (پ ر) وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے کہا ہے کہ انسانی ترقی  اور خواتین کو معاشی حوالے سے بااختیار بنانا تحریک انصاف کی صوبائی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ غریب اور مستحق افراد کی مدد کرنے کیلئے جامعہ پالیسی بنائی جائے گی۔ وفاقی حکومت بھی احساس پروگرام کے تحت مستحقین کو مالی معاونت فراہم کررہی ہے تاکہ غریب اور مستحق افراد کی مدد کی جاسکے۔ گلگت  بلتستان پہلا صوبہ ہے جہاں تحصیل سطح پر نشونما سنٹرز بنائے جارہے ہیں۔ پاپولیشن ویلفیئر سنٹرز کو تمام اضلاع تک وسعت دی جائے گی۔ ا ن خیالات کا اظہار وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے محکمہ سوشل ویلفیئر اور پاپولیشن ویلفیئر کی جانب سے دی جانے والی بریفنگ کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے سیکریٹری سوشل ویلفیئر کو ہدایت کی کہ سوشل ویلفیئر ڈائریکٹریٹ کے قیام کیلئے اقدامات کئے جائیں اور تمام اضلاع میں سوشل ویلفیئر کو وسعت دی جائے۔ گلگت  بلتستان میں سکل ڈویلپمنٹ کیلئے وفاقی حکومت 2000افراد کی تربیت جدید اداروں سے کروائے گی جس میں محکمہ سوشل ویلفیئر ایسے افراد کی نشاندہی کرے جو مختلف شعبوں میں ٹیکنیکل تربیت حاصل کرنا چاہتے ہیں ۔ وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے کہا کہ خصوصی افراد کی فلاح و بہبود پر توجہ دی جائے گی۔ معاشرے کے خصوصی افراد ہمارے زیادہ توجہ کے مستحق ہیں۔ وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے صوبائی سیکریٹری صحت کو ہدایت کی ہے کہ خصوصی افراد کیلئے ان کے متعلقہ اضلاع میں سرٹیفکیٹ کے حصول کو ممکن بنایا جائے جس کیلئے اسسمنٹ بورڈ ماہانہ بنیادوں پر مختلف اضلاع کا دورہ کرے۔ وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے کہا کہ خواتین کو بااختیار بنانے کیلئے اصلاحات کی جائیں گی۔ دیہاتوں کی سطح پر ووکیشنل سنٹرز اور ثقافتی دستکاری کے سنٹرز قائم کئے جائیں گے ان سنٹرز میں تیار ہونے والے اشیاء کی مارکیٹ تک رسائی کو ممکن بنایا جائے گا۔ محکمہ سوشل ویلفیئر کی جانب سے ووکیشنل سنٹرز اور ثقافتی دستکاری سنٹرز کے قیام کیلئے کاغذی کارروائی 10فروری تک مکمل کی جائے۔معیار زندگی کو بہتر بنانے کیلئے ترقیاتی منصوبوں کو دیہی سطح پر مرکوز کیا جائے۔ خواتین کو حقیقی معنوں میں معاشی حوالے سے بااختیار بنانے کیلئے منصوبہ بندی کی جائے گی۔ یوتھ افیئرز (امور نوجوانان) کو نظرانداز نہیں کیا جائے گا۔ یوتھ افیئرز کا الگ بورڈ بنانے پر غور کیا جائے گا۔نوجوانوں کی فلاح و بہبود پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے سیکریٹری سوشل ویلفیئر کو ہدایت کی ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے شروع کئے جانے والے کامیاب نوجوانون پروگرام میں گلگت  بلتستان کے یوتھ کو زیادہ سے زیادہ راغب کرنے اور استفادہ حاصل کرنے میں اپنا کردار اد اکریں اور اس حوالے سے محکمے میں الگ ڈیسک کا قیام عمل میں لایا جائے۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید کو سیکرٹری سوشل ویلفیئر کی جانب سے ادارے کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ ادھر سی ایم آئی ٹی کی جانب سے بریفنگ کے موقع پر وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے کہا ہے کہ چیف منسٹر انسپکشن ٹیم کی تنظیم نو(Restucturing) کی جائے گی اور فعال ادارہ بنایا جائے گا۔ سی ایم آئی ٹی کی ری سٹرکچرنگ اور ملازمین کی سروس سٹرکچر کیلئے صوبائی سیکریٹری قانون ، صوبائی سیکریٹری سروسز اور ڈی جی سی ایم آئی ٹی پر مشتمل کمیٹی اپنی سفارشات تیار کرکے کابینہ اجلاس میں منظوری کیلئے پیش کرے۔ اس ادارے کی افادیت اور اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے دیگر صوبوں کے طرز پر فعال اور مضبوط ادارہ بنایا جائے گا۔