21

فارن فنڈنگ معاملہ خوش آئند، تحریک انصاف کو مافیا نے سپانسر نہیںکیا، عمران خان

 وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مجھے فخر ہے کہ ہماری جماعت پاکستان تحریک انصاف کو کسی مافیا نے سپانسر نہیں کیا، مافیا نے پیسہ لگایا ہوتا تو ہم ان کے سامنے جھک جاتے۔نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے زیر صدارت حکومتی رہنماں کا اجلاس ہوا جس میں معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے براڈ شیٹ کیس پر بریفنگ دی۔وزیراعظم نے اجلاس کے شرکا کو ہدایت کی کہ براڈ شیٹ کے معاملے کو تفصیلی طور پر عوام کے سامنے رکھیں اور اس میں موجود حقائق کو منظر عام پر لایا جائے۔ براڈ شیٹ کمپنی تو 20 سال پہلے کے اثاثوں کی تحقیقات کر رہی تھی، گزشتہ دس سال دور کا حساب تو ابھی ہونا ہے۔ انہوں نے ایک بار پھر اپنا عزم دہرایا کہ ملکی دولت لوٹ کر باہر لے جانے والے احتساب سے نہیں بچ سکتے۔ نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم نے براڈ شیٹ معاملے پر چار رکنی کمیٹی قائم کر دی ہے۔ کمیٹی میں فواد چوہدری ، شیری مزاری، بابر اعوان اور شہزاد اکبر شامل ہیں،شبلی فراز کمیٹی کے کنوینر ہوں گے۔اجلاس میں پی ڈی ایم جلسے پر وزیر داخلہ شیخ رشید نے بھی بریفنگ دی اور کہا کہ آئین اور قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے اپوزیشن کو احتجاج کی اجازت دی ہے۔اس موقع پر بات کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے فارن فنڈنگ کا معاملہ اٹھایا جانا خوش آئند ہے۔ پی ٹی آئی واحد جماعت ہے جو عوام کی فنڈنگ سے وجود میں آئی۔قبل ازیں پیر کو  سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں وزیراعظم نے کہا کہ بھارتی میڈیا نے مودی حکومت کی اصلیت واضح کر دی، مودی حکومت نے بالا کوٹ بحران کو انتخابات کیلئے استعمال کیا،بھارتی میڈیا کا گٹھ جوڑ خطرناک فوجی مہم جوئی کا باعث بنا، 2019 میں اقوام متحدہ میں تقریر کے  دوران بھارتی سفاکی کو عیاں کیا، پاکستان بھارتی مذموم عزائم کو بے نقاب کرتا رہے گا، عالمی برادری بھارت کے ناپاک عزائم کو روکنے کیلئے اقدامات کرے۔ سال 2019 میں انہوں نے اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اس حوالے سے بات کی تھی کہ بھارت کی فاشسٹ مودی حکومت نے بالا کوٹ حملے کو کس طرح کو مقامی انتخابات میں فائدے کے لیے استعمال کیا۔  انہوں نے کہا بعدازاں اپنے جنگی جنون کے لیے معروف ایک بھارتی صحافی کے رابطوں سے مودی حکومت اور بھارتی میڈیا کے درمیان ناپاک گٹھ جوڑ کا انکشاف سامنے آیا جو پورے خطے کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کے نتائج کو مکمل طور پر نظر انداز کرتے ہوئے انتخابات جیتنے کے لیے ایک خطرناک فوجی مہم جوئی کا باعث بنا۔  وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان نے بالاکوٹ (حملے) کا ذمہ دارانہ، نپا تلا جواب دے کر بڑے بحران کو ٹالا اس کے باوجود مودی سرکار بھارت کو بدمعاش ریاست میں تبدیل کرنے کا کام جاری رکھے ہوئے ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ان کی حکومت مودی حکومت کے فاشزم اور پاکستان کی جانب بھارت کے متنازع ڈیزائنز کو بے نقاب کرتی رہے گی۔ وزیراعظم عمران خان نے ایک مرتبہ پھر کہا کہ بھارت کی جانب سے پاکستان میں دہشت گردی کی اسپانسر شپ، مقبوضہ کمشیر میں اس کی بدسلوکیاں اور ہمارے خلاف 15 سال سے جاری بھارت کی عالمی ڈِس انفارمیشن مہم آشکار ہوچکی ہے۔ انہوں نے عالمی برادری پر زور دیا کہ بین الاقوامی برادری بھارت کو اس کے جارحانہ اور عسکری ایجنڈے سے روکے قبل از کے کہ مودی حکومت خطے کو ایسے تنازع میں دھکیل دے جسے قابو نہ کیا جاسکے۔